پاک فوج کے زیرملکیت تمام کاروبار پر ٹیکس لاگو ہے مفتاح اسماعیل

12/08/2022 7:37:00 PM

پاک فوج کے زیرملکیت تمام کاروبار پر ٹیکس لاگو ہے، مفتاح اسماعیل @MiftahIsmail @GovtofPakistan @pmln_org

مفتاح, اسماعیل

پاک فوج کے زیرملکیت تمام کاروبار پر ٹیکس لاگو ہے، مفتاح اسماعیل MiftahIsmail GovtofPakistan pmln_org

0 اسلام آباد: وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ پاک فوج کے زیرملکیت تمام کاروبار پر ٹیکس لاگو ہے۔ اپنی ٹوئٹ میں انہوں نے کہا کہ عسکری بینک بھی نیشنل بینک

اور ایچ بی ایل کے برابر کا ٹیکس ادا کرتا ہے، اسی طرح فوجی فرٹیلائزر اینگرو اور فاطمہ فرٹیلائزر کے برابر ٹیکس دیتا ہے۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ چھوٹے تاجروں پر عائد ٹیکس ختم ہوجائےگا، ٹیکس اسٹرکچر میں ایک دو غلطیاں ہوئی ہیں،اس لیے اسے تبدیل کرنا پڑا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اب ہم اشیا کی قیمتوں کی بنیاد پر ٹیکس وصول کریں گے شیئر کریں: .11 اگست ، 2022 بدھ کے روز کاروبار کے اختتام پر انٹربینک میں ڈالر 221.عمران خان نے تائید کی ہے۔ وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ باقاعدہ ایک بیانیہ تیار کیا گیا اور اس کی منظوری سیاسی لیڈرشپ سے لی گئی، فکس پروگرام میں طے پایا کہ 15 منٹ میں بات مکمل کرنا ہوگی۔ اُن کا کہنا تھا کہ یہ طے ہوا تھا کہ مداخلت نہیں کرنی، فری ٹائم دینا ہے، بیان ثابت ہوگا تو چینل کے خلاف کارروائی ہوگی۔ پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس میں سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے تحقیقات کے معاملے میں اُن کے 2 نجی بینکوں کے اکاؤنٹس کی تفصیل سامنے آگئی۔ رانا ثناء اللّٰہ نے یہ بھی کہا کہ فوج کی کمانڈ کا حکم نہ ماننے پر اکسانے والے کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے، بیان نشر ہوا، سوشل میڈیا پر چلا تو پھر کارروائی ہوئی، شہباز گل کو قانونی حق دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فوج کی کمانڈ کے خلاف بیان پر کمپرومائز نہیں ہوسکتا، پوچھتا ہوں کیا شہباز گل نے بیان نہیں دیا؟ کیا یہ آواز پی ٹی آئی رہنما کی نہیں تھی؟ وفاقی وزیر نے کہا کہ شہباز گل کے خلاف مقدمہ درج ہوا ہے، انہیں قانون کے مطابق گرفتار کیا گیا، ایک گاڑی سے دوسری گاڑی میں بٹھایا گیا، عدالت میں پیش کیا گیا۔ وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ پائلٹس کے جعلی لائسنس سے متعلق بیان کے بعد ہم پر پابندیاں لگیں۔ اُن کا کہنا تھا کہ آپ نے لوگوں کو گرفتار کرکے ڈیڑھ سال جیل میں رکھا، مجھےگرفتار کیا گیا، کیا مجھے صفائی کا موقع دیا؟ پوچھتا ہوں ویڈیو وائرل ہے، کہاں ڈرائیو پر تشدد کیا گیا؟ رانا ثنا ء اللّٰہ نے کہا کہ 6 لوگوں کی شناخت ہوگئی ہے، 78 لوگوں کا پروسیس ہورہا ہے، جو لوگ شناخت ہوئے ہیں ان کا سب کو پتاہے کہ کون ہیں، اس میں کوئی شک نہیں کہ یہ ٹرینڈ پی ٹی آئی کی طرف سے چلایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کو اپنا کردار اور گفتگو یاد نہیں رہتی، فوج کے بطور ادارہ بات برداشت نہیں ہوتی، پی ٹی آئی سربراہ قوم کو تقسیم کررہا ہے، نوجوان کو گمراہ کررہا ہے۔ وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے سابق وزیراعظم عمران خان کی حکومت پر تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کو ویلکم کہنے کا الزام لگادیا۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ آپ خود نفرت پیدا کررہے ہیں، تفریق پیدا کررہے ہیں، لوگوں کو کہتے ہیں کہ انہیں گالیاں دو، یہ کہتے ہیں دشمنوں، قاتلوں کے ساتھ بیٹھ سکتا ہوں، یہ کہتے ہیں مخالف سیاستدانوں کےساتھ نہیں بیٹھ سکتا۔ اُن کا کہنا تھا کہ توشہ خانہ ریفرنس میں عمران خان مس ڈکلیئریشن میں نااہل ہوں گے، بچ نہیں سکتے، وہ چاہتے ہیں نیوٹرل نیوٹرل نہ رہیں، انہیں 2018 کی طرح بٹھا دیا جائے۔ رانا ثناء اللّٰہ نے کہا کہ یہ ملک بند کرنے کی بالکل صلاحیت نہیں رکھتے، اگر ایسا خیال ذہن میں پالا تو بہت بری شکست اور ناکامی ہوگی، یہ صرف 10، 15 ہزار لوگوں کا جلسہ کرسکتے ہیں۔ قومی خبریں سے مزید.وفاقی بجٹ میں ایکسائز ڈیوٹی میں اضافے کے بعد سگریٹ کتنی مہنگی ہوگی؟ تاہم بعض ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت نے کھاد کے شعبے پر ٹیکس بڑھانے کا خیال ترک کر دیا ہے اس لیے صدارتی آرڈیننس کے ذریعے سگریٹ اور تمباکو کے پتوں کی پروسیسنگ پر ٹیکس کی شرح میں اضافہ کیا جا سکتا ہے۔ مجوزہ آرڈیننس کے ذریعے حکومت دنیا کے مختلف مقامات پر تعینات پاکستانی سفارتکاروں کو حاصل مراعات پر ٹیکس چھوٹ بحال کر سکتی ہے۔ عہدیدار نے کہا کہ اس کے لیے ریونیو کی جانب سے ڈیڑھ ارب روپے کی لاگت درکار ہوگی۔ ایک اعلیٰ عہدیدار نے کہا کہ حکومت نے اصولی طور پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی شرح میں اضافہ کرکے تمباکو کے شعبے سے 12 ارب روپے اور تمباکو کی گرین لیف تھریشنگ پراسیس (جی ایل ٹی پی) پر ود ہولڈنگ ٹیکس کے نفاذ کے ذریعے مزید 6 ارب روپے حاصل کرنے کا اصولی فیصلہ کیا ہے یعنی ایڈجسٹ موڈ میں ود ہولڈنگ ٹیکس میں اضافہ کیا جائے گا۔ حکومت آئی ایم ایف کے رکے ہوئے پروگرام کو بحال کرنے کے لیے منی بجٹ پیش کرنے پر مجبور ہے کیونکہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی قیادت میں حکومت نے ریٹیلرز کے سامنے اپنے فکسڈ ٹیکس کو معاف کرنے پر رضامندی ظاہر کردی ہے جسے بجلی کے بل کے ذریعے وصول کیا جانا تھا۔ اعلیٰ سرکاری ذرائع نے دی نیوز کو تصدیق کی کہ آئی ایم ایف کسی بھی وقت جلد ہی لیٹر آف انٹینٹ (ایل او آئی) بھیجے گا کیونکہ آئی ایم ایف کے مشن چیف کو اپنی ذاتی مصروفیات کی وجہ سے آسٹریلیا جانا پڑ گیا تھا۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ ہمیں اگلے 24 گھنٹوں کے اندر ایل او آئی موصول ہو سکتا ہے اور پھر اس پر وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اور گورنر اسٹیٹ بینک کی جانب سے دستخط کیے جائیں گے۔ مزید خبریں :.

مزید پڑھ:
Waqtnews »

Meray Sawaal with Mansoor Ali Khan | SAMAA TV | 9th December 2022

#samaatv #imrankhan #mansooralikhan ➽ Subscribe to Samaa News ➽ https://bit.ly/2Wh8Sp8➽ Watch Samaa News Live ➽ https://bit.ly/3oUSwAPStay up-to-date on the ... مزید پڑھ >>

ڈالر مزید سستا، انٹربینک میں 218.88 روپے پر بندڈالر مزید سستا، انٹربینک میں 218.88 روپے پر بند مزید پڑھیے: GeoNews Dollar

عمران خان نے شہباز گل کے بیانیے کی تائید کردی، رانا ثناء اللّٰہ فوج کی کمانڈ کے خلاف بیان پر کمپرومائز نہیں ہوسکتا، پوچھتا ہوں کیا شہباز گل نے بیان نہیں دیا؟ کیا یہ آواز پی ٹی آئی رہنما کی نہیں تھی؟ تفصیلات جانیے: RanaSanaullah imrankhanPTI shahbazgill

منی بجٹ کا امکان، سگریٹ اور تمباکو کی پتی مہنگی ہو جائیگیآئی ایم ایف کو مطمئن کرنے کے لیے مختلف شعبوں میں اضافی ٹیکس لانے پر غور کیا جا رہا ہے: ذرائع آج کل یوتھیوں کا دروازہ ان کا باپ بھی کھٹکھٹائے تو اندر سے آوازیں آنا شروع ہو جاتی ہیں۔ ۔ پاک فوج زندہ باد ۔۔ اور جب باہر آکر باپ کو دیکھتے ہیں تو کہتے ہیں ہم کوئی غلام ہیں 🤣🤓😜 ڈوڈو کی شوہر مزے میں حل_الیکشن 1000 Ka aik packet Kar do 😜

آئی ایم ایف کی پیشگی شرائط پوری کرنے کی تیاریاں، منی بجٹ کا امکانآئی ایم ایف کو مطمئن کرنے کے لیے مختلف شعبوں میں اضافی ٹیکس لانے پر غور کیا جا رہا ہے: ذرائع مزید پڑھیں: GeoNews IMF Then Allah جل جلاله gave us cars and we moved faster, at one point that man gather many more people and then the whole world saw our efforts. MuhammadQasimDreams Laanat imported government. Apny aqao ko Khush karny KY Liye ,kitny behis ho gye hain neutrals

کیا پیٹرول کی قیمتیں ہفتہ وار تبدیل کی جائیں گی؟اسلام آباد :وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی زیرصدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں تیل کی قیمتیں ہفتہ وار طے کرنے کے لیے سمری زیرغور آئے گی۔ Please arrange to broadcast ARY news in our area asap. Sector 5 /I, North Karachi

کراچی کے شہریوں کو اگست، ستمبر کے بل کتنے بھاری پڑیں گے؟کراچی کے شہریوں پر بجلی بم گرادیا گیا ہے، شہر قائد کراچی کے باسیوں پر اگست اور ستمبر کے بجلی بل بھاری پڑیں گے۔

اور ایچ بی ایل کے برابر کا ٹیکس ادا کرتا ہے، اسی طرح فوجی فرٹیلائزر اینگرو اور فاطمہ فرٹیلائزر کے برابر ٹیکس دیتا ہے۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ چھوٹے تاجروں پر عائد ٹیکس ختم ہوجائےگا، ٹیکس اسٹرکچر میں ایک دو غلطیاں ہوئی ہیں،اس لیے اسے تبدیل کرنا پڑا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اب ہم اشیا کی قیمتوں کی بنیاد پر ٹیکس وصول کریں گے شیئر کریں: .11 اگست ، 2022 بدھ کے روز کاروبار کے اختتام پر انٹربینک میں ڈالر 221.عمران خان نے تائید کی ہے۔ وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ باقاعدہ ایک بیانیہ تیار کیا گیا اور اس کی منظوری سیاسی لیڈرشپ سے لی گئی، فکس پروگرام میں طے پایا کہ 15 منٹ میں بات مکمل کرنا ہوگی۔ اُن کا کہنا تھا کہ یہ طے ہوا تھا کہ مداخلت نہیں کرنی، فری ٹائم دینا ہے، بیان ثابت ہوگا تو چینل کے خلاف کارروائی ہوگی۔ پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس میں سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے تحقیقات کے معاملے میں اُن کے 2 نجی بینکوں کے اکاؤنٹس کی تفصیل سامنے آگئی۔ رانا ثناء اللّٰہ نے یہ بھی کہا کہ فوج کی کمانڈ کا حکم نہ ماننے پر اکسانے والے کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے، بیان نشر ہوا، سوشل میڈیا پر چلا تو پھر کارروائی ہوئی، شہباز گل کو قانونی حق دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فوج کی کمانڈ کے خلاف بیان پر کمپرومائز نہیں ہوسکتا، پوچھتا ہوں کیا شہباز گل نے بیان نہیں دیا؟ کیا یہ آواز پی ٹی آئی رہنما کی نہیں تھی؟ وفاقی وزیر نے کہا کہ شہباز گل کے خلاف مقدمہ درج ہوا ہے، انہیں قانون کے مطابق گرفتار کیا گیا، ایک گاڑی سے دوسری گاڑی میں بٹھایا گیا، عدالت میں پیش کیا گیا۔ وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ پائلٹس کے جعلی لائسنس سے متعلق بیان کے بعد ہم پر پابندیاں لگیں۔ اُن کا کہنا تھا کہ آپ نے لوگوں کو گرفتار کرکے ڈیڑھ سال جیل میں رکھا، مجھےگرفتار کیا گیا، کیا مجھے صفائی کا موقع دیا؟ پوچھتا ہوں ویڈیو وائرل ہے، کہاں ڈرائیو پر تشدد کیا گیا؟ رانا ثنا ء اللّٰہ نے کہا کہ 6 لوگوں کی شناخت ہوگئی ہے، 78 لوگوں کا پروسیس ہورہا ہے، جو لوگ شناخت ہوئے ہیں ان کا سب کو پتاہے کہ کون ہیں، اس میں کوئی شک نہیں کہ یہ ٹرینڈ پی ٹی آئی کی طرف سے چلایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کو اپنا کردار اور گفتگو یاد نہیں رہتی، فوج کے بطور ادارہ بات برداشت نہیں ہوتی، پی ٹی آئی سربراہ قوم کو تقسیم کررہا ہے، نوجوان کو گمراہ کررہا ہے۔ وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے سابق وزیراعظم عمران خان کی حکومت پر تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کو ویلکم کہنے کا الزام لگادیا۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ آپ خود نفرت پیدا کررہے ہیں، تفریق پیدا کررہے ہیں، لوگوں کو کہتے ہیں کہ انہیں گالیاں دو، یہ کہتے ہیں دشمنوں، قاتلوں کے ساتھ بیٹھ سکتا ہوں، یہ کہتے ہیں مخالف سیاستدانوں کےساتھ نہیں بیٹھ سکتا۔ اُن کا کہنا تھا کہ توشہ خانہ ریفرنس میں عمران خان مس ڈکلیئریشن میں نااہل ہوں گے، بچ نہیں سکتے، وہ چاہتے ہیں نیوٹرل نیوٹرل نہ رہیں، انہیں 2018 کی طرح بٹھا دیا جائے۔ رانا ثناء اللّٰہ نے کہا کہ یہ ملک بند کرنے کی بالکل صلاحیت نہیں رکھتے، اگر ایسا خیال ذہن میں پالا تو بہت بری شکست اور ناکامی ہوگی، یہ صرف 10، 15 ہزار لوگوں کا جلسہ کرسکتے ہیں۔ قومی خبریں سے مزید.وفاقی بجٹ میں ایکسائز ڈیوٹی میں اضافے کے بعد سگریٹ کتنی مہنگی ہوگی؟ تاہم بعض ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت نے کھاد کے شعبے پر ٹیکس بڑھانے کا خیال ترک کر دیا ہے اس لیے صدارتی آرڈیننس کے ذریعے سگریٹ اور تمباکو کے پتوں کی پروسیسنگ پر ٹیکس کی شرح میں اضافہ کیا جا سکتا ہے۔ مجوزہ آرڈیننس کے ذریعے حکومت دنیا کے مختلف مقامات پر تعینات پاکستانی سفارتکاروں کو حاصل مراعات پر ٹیکس چھوٹ بحال کر سکتی ہے۔ عہدیدار نے کہا کہ اس کے لیے ریونیو کی جانب سے ڈیڑھ ارب روپے کی لاگت درکار ہوگی۔ ایک اعلیٰ عہدیدار نے کہا کہ حکومت نے اصولی طور پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی شرح میں اضافہ کرکے تمباکو کے شعبے سے 12 ارب روپے اور تمباکو کی گرین لیف تھریشنگ پراسیس (جی ایل ٹی پی) پر ود ہولڈنگ ٹیکس کے نفاذ کے ذریعے مزید 6 ارب روپے حاصل کرنے کا اصولی فیصلہ کیا ہے یعنی ایڈجسٹ موڈ میں ود ہولڈنگ ٹیکس میں اضافہ کیا جائے گا۔ حکومت آئی ایم ایف کے رکے ہوئے پروگرام کو بحال کرنے کے لیے منی بجٹ پیش کرنے پر مجبور ہے کیونکہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی قیادت میں حکومت نے ریٹیلرز کے سامنے اپنے فکسڈ ٹیکس کو معاف کرنے پر رضامندی ظاہر کردی ہے جسے بجلی کے بل کے ذریعے وصول کیا جانا تھا۔ اعلیٰ سرکاری ذرائع نے دی نیوز کو تصدیق کی کہ آئی ایم ایف کسی بھی وقت جلد ہی لیٹر آف انٹینٹ (ایل او آئی) بھیجے گا کیونکہ آئی ایم ایف کے مشن چیف کو اپنی ذاتی مصروفیات کی وجہ سے آسٹریلیا جانا پڑ گیا تھا۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ ہمیں اگلے 24 گھنٹوں کے اندر ایل او آئی موصول ہو سکتا ہے اور پھر اس پر وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اور گورنر اسٹیٹ بینک کی جانب سے دستخط کیے جائیں گے۔ مزید خبریں :.