چلغوزے کی قیمت آسمان سے زمین پر کیسے آئی؟ وجہ سامنے آگئی

تفصیلات جانیے: #DailyJang

Chilgoza, Pine Nut

27/01/2022 6:57:00 PM

تفصیلات جانیے: DailyJang

حکومت کا انتظام بھی خوب ہے جس شہ کا دام بڑھ رہا ہو اسے اور بڑھاتی ہے اور جس کا بھاؤ پہلے ہی گر رہا ہو اسے مزید گرانے کا انتظام کرتی ہے۔

پچھلی سردیوں میں چلغوزے کا بھاؤ 9 ہزار روپے کلو تھا تاہم رواں سال افغانستان کے سیاسی منظر نامے کے سبب پائن نٹ کی طلب کم رہی۔ قیمت بھی کم ہوگئی، حکومت نے ٹیکس کم کرکے قیمت کو مزید گرادیا ہے۔حکومت کا انتظام بھی خوب ہے جس شے کا دام بڑھ رہا ہو اسے اور بڑھاتی ہے اور جس کا بھاؤ پہلے ہی گررہا ہو اسے مزید گرانے کا انتظام کرتی ہے۔

اعلامیے کے مطابق برآمد کی جانے والی اشیا میں چینی، چاول،مچھلی،گوشت شامل ہوگا، برآمد کی جانے والی اشیا میں پھل،سبزیاں،سیمنٹ،نمک اورخشک میوہ جات بھی شامل ہے۔کرکرے، مکھن بھرے، خوشگوار میٹھے اور غذایت بھرے چلغوزے کو ہی لے لیں۔ گئی سردیوں میں 9 ہزار روپے کلو تھے، آج بازار میں تقریباً آدھی قیمت پر فروخت ہورہے ہیں۔

مزید پڑھ: Daily Jang »

Sami Ibrahim Revealed Big Inside Story | PM Shehbaz Sharif vs Establishment | Tajzia

Sami Ibrahim Revealed Big Inside Story | PM Shehbaz Sharif vs Establishment | Tajzia#SamiIbrahim #PMShehbazSharif #EstablishmentBreaking News | Latest News |... مزید پڑھ >>

کارکن کی ہلاکت: خالد مقبول کا وزیراعلیٰ سندھ کیخلاف قتل کا مقدمہ درج کرانے کا اعلان

ایم کیو ایم کا وزیراعلیٰ سندھ کیخلاف قتل کا مقدمہ درج کروانے کا اعلانایم کیو ایم کا وزیراعلیٰ سندھ کیخلاف قتل کا مقدمہ درج کروانے کا اعلان ARYNewsUrdu تم ٹائم نکال کے مر کیوں نہیں جاتے کب ہمارا پیچھا چھوڑوگے Excellent

وبا کے خلاف زیرو ٹالرنس پالیسی کا کیا فائدہ ہے؟دنیا بھر سے ہمارے دوست اکثر سوال کرتے ہیں کہ  عوامی جمہوریہ چین میں وبا کے خلاف زیرو ٹالرنس پالیسی کب ختم ہوگی؟ اس پالیسی کا کیا فائدہ ہے؟ دنیا کے ترقی

قومی کرکٹ میں PSL کا اہم کردار ہے، انضمام الحقپاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان انضمام الحق کا کہنا ہے کہ قومی کرکٹ میں ایچ بی ایل پی ایس ایل کا اہم کردار ہے۔ DailyJang

’ریت کا وسیع ہوتا قالین‘: دبئی میں زرخیز زمین سمٹ کیوں رہی ہے؟ - BBC News اردودبئی میں صحرا کی حدود میں اضافہ وہاں غذا کی فراہمی کے لیے خدشے کا باعث بن رہا ہے۔ کیا وہاں کا ماحول دوست ٹیکنالوجی سیکٹر اس خطرے کا مقابلہ کر سکتا ہے؟ Nature has its own ways to be benevolent or malevolent. Artificial islands of Dubai are also sinking gradually. According to Penguin Marine, the sand used to build the islands is slowly falling back into the sea from where it came. did someone ever try to calculate the environmental damage done by these artificial islands in the sea and the impact of high rise buildings on the environment?

آئندہ 2 ماہ ملک میں دہشتگردی میں اضافے کا خدشہ ہے: شیخ رشیدوفاقی وزیرِ داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ ملک کا فائدہ اسی میں ہے کہ اسٹیبلشمنٹ اور عمران خان ایک صفحے پر ہوں، پاکستان میں دہشت گردوں کے خلاف لڑنے اور معلومات اکٹھی کرنے کا نظام کافی بہتر ہے، آئندہ 2 ماہ تک ملک میں دہشت گردی کے واقعات میں اضافے کا خدشہ ہے، دہشت گردی کی اس تازہ لہر پر قابو پا لیا جائے گا۔ کیا تم چھنکنا بجانے کے لیۓ آۓ ہو- کیا پولیس اور فوج چھٹی گئ ہے؟ مارچ رکوانے کا بہانہ ہے! Han g inko pehly he khabar hoti hai دبئی میں میٹرو سے باہر جھانکا، صرف بلڈنگز، گورے کالے۔۔۔لاہور میں باہر جھانک کے مزہ آ گیا۔۔کہیں ٹوٹی اینٹیں، کہیں دھوتی جھاڑتا بابا۔۔۔کلچر، زندگی۔ پشاور کے لوگ تو نسوار پھینکنے کو ڈرم ڈھونڈتے، یہ کلچر دور کی بات۔ اس دور میں ڈیفالٹر اور دہشت گردی کی باتیں ہی ہوسکتی۔ بزدار زندہ باد

خاص رپورٹ پچھلی سردیوں میں چلغوزے کا بھاؤ 9 ہزار روپے کلو تھا تاہم رواں سال افغانستان کے سیاسی منظر نامے کے سبب پائن نٹ کی طلب کم رہی۔ قیمت بھی کم ہوگئی، حکومت نے ٹیکس کم کرکے قیمت کو مزید گرادیا ہے۔ حکومت کا انتظام بھی خوب ہے جس شے کا دام بڑھ رہا ہو اسے اور بڑھاتی ہے اور جس کا بھاؤ پہلے ہی گررہا ہو اسے مزید گرانے کا انتظام کرتی ہے۔ اعلامیے کے مطابق برآمد کی جانے والی اشیا میں چینی، چاول،مچھلی،گوشت شامل ہوگا، برآمد کی جانے والی اشیا میں پھل،سبزیاں،سیمنٹ،نمک اورخشک میوہ جات بھی شامل ہے۔ کرکرے، مکھن بھرے، خوشگوار میٹھے اور غذایت بھرے چلغوزے کو ہی لے لیں۔ گئی سردیوں میں 9 ہزار روپے کلو تھے، آج بازار میں تقریباً آدھی قیمت پر فروخت ہورہے ہیں۔ طلب و رسد کا قانون پہلے ہی قیمت پر بھاری تھا۔ اس پر منی بجٹ میں حکومت نے مرے کو سو درے اور لگائے۔ بازار کی نبض پر ہاتھ رکھا تو سمجھ آیا کہ چلغوزہ عوام کا آئٹم ہے ہی نہیں، محسوس ہوتا ہے کہ حکومت نے منی بجٹ میں اشرافیہ کو ریلیف دیا ہے، وہ جنہیں اس کی قیمت کے بڑھنے گھٹنے سے کوئی سروکار ہی نہیں ہے، عام آدمی تو اب بھی بس چلغوزے جیسا منہ لے کر ہی رہ جاتا ہے۔ قومی خبریں سے مزید