Kashmir, India, Pakistan, Usa, Donaldtrump

Kashmir, India

صدر ٹرمپ کی مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی دوبارہ پیشکش

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کشمیر کے معاملے پر ثالثی کی پیشکش دہراتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور انڈیا کے تعلقات طویل عرصے سے خراب ہیں اور یہ انتہائی خطرناک صورتحال ہے۔

21.8.2019

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان اور انڈیا کو مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی دوبارہ پیشکش کی ہے۔ آپ کے خیال میں کیا امریکی صدر اس معاملے پر دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی ختم کرنے میں کوئی کردار ادا کر سکتے ہیں؟ Kashmir India Pakistan USA DonaldTrump

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کشمیر کے معاملے پر ثالثی کی پیشکش دہراتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور انڈیا کے تعلقات طویل عرصے سے خراب ہیں اور یہ انتہائی خطرناک صورتحال ہے۔

اقوام متحدہ کی رپورٹ، کشمیر میں تشدد روکنے پر زور انھوں نے کہا کہ وہ آئندہ ہفتے انڈین وزیراعظم نریندر مودی سے اس معاملے بر بات کریں گے۔ امریکی صدر اور انڈین وزیراعظم آئندہ ہفتے فرانس میں ایک سربراہی اجلاس میں شرکت کرنے والے ہیں۔ 'ہم معاملے کے حل کے لیے اپنی پوری کوشش کر رہے ہیں اور میں اپنی جانب سے ثالثی کا کردار ادا کرنے کی بھرپور کوشش کروں گا۔ میرے ان دونوں سے اچھے تعلقات ہیں لیکن ان دونوں کی آپس میں دوستی نہیں ہے۔ یہ پیچیدہ معاملہ ہے اور اس کی پیچھے مذہب ہے۔ مذہب پیچیدہ معاملہ ہوتا ہے۔' یہ پہلا موقع نہیں ہے جب صدر ٹرمپ نے کشمیر کے مسئلہ کو حل کرنے کے لیے ثالثی کی پیشکش کی ہے۔ پاکستانی وزیراعظم عمران خان کے حالیہ دورۂ امریکہ کے دوران بھی ان کی جانب سے یہ پیشکش سامنے آئی تھی تاہم اس وقت جہاں پاکستان نے اس کا خیرمقدم کیا تھا وہیں انڈیا نے اسے مسترد کر دیا تھا۔ تصویر کے کاپی رائٹ AFP Image caption امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر کشمیر کے معاملے کو حل کرنے کے لیے بطور ثالث کردار ادا کرنے کی پیشکش کی ہے انڈیا نے کشمیر کے معاملے پر بیرونی ثالثی کی پیشکش کو کبھی قبول نہیں کیا اور اس کا موقف ہے کہ اس سلسلے میں صرف دو طرفہ بات چیت ہو سکتی ہے۔ انڈیا کو چند روز قبل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں بھی کشمیر کے مسئلے کے زیر بحث آنے پر اعتراض تھا اور اس کی جانب سے کہا گیا تھا کہ انڈیا 'یہ قطعی طور پر قبول نہیں کرے گا کہ بین الاقوامی طاقتیں اسے بتائیں کہ اسے کیسے جینا ہے۔' دوسری جانب خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق امریکی محکمۂ خارجہ کی جانب سے انڈیا سے کہا گیا ہے کہ وہ خطے میں کشیدگی میں کمی کے لیے اپنے زیرِ انتظام کشمیر میں بنیادی آزادی بحال کرے اور گرفتار افراد کو فوری رہا کیا جائے۔ محکمۂ خارجہ کے ایک سینیئر اہلکار نے صحافیوں کو بتایا کہ 'ہمیں اس علاقے کے رہائشیوں پر مستقل پابندیوں اور حراست میں لیے جانے کی رپورٹس پر مسلسل تشویش ہے'۔ ان کا کہنا تھا کہ 'ہم انفرادی حقوق کے احترام، قانونی طریقۂ کار کی تعمیل اور جامع مذاکرات پر زور دیتے ہیں'۔ خیال رہے کہ پانچ اگست کو انڈیا کی جانب سے کشمیر کو دی گئی خصوصی آئینی حیثیت کے خاتمے کے بعد سے وادی میں سکیورٹی لاک ڈاؤن کی صورتحال ہے۔ انڈین حکام نے اس فیصلے کے تناظر میں کشمیر کے باقی دنیا سے مواصلاتی رابطے منقطع کر دیے تھے جو دو ہفتے بعد بھی جزوی طور پر ہی بحال ہوئے ہیں۔ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images ایک اندازے کے مطابق انڈیا کے زیرِ انتظام کشمیر میں پانچ اگست کے بعد سے چار ہزار افراد کو حراست میں لیا جا چکا ہے اور مقامی جیلوں میں جگہ نہ ہونے کی وجہ سے انھیں وادی سے باہر منتقل کیا گیا ہے۔ لائن آف کنٹرول پر کشیدگی جاری ادھر اس فیصلے کے بعد سے پاکستان اور انڈیا کے زیرِ انتظام کشمیر کو تقسیم کرنے والی لائن آف کنٹرول پر بھی کشیدگی دن بدن بڑھتی جا رہی ہے اور پاکستان نے منگل کو مزید چھ انڈین فوجیوں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا ہے۔ پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے سربراہ میجر جنرل آصف غفور نے اس سلسلے میں ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ لائن آف کنٹرول پر پاکستانی فوج نے انڈین فائرنگ کا موثر جواب دیا جس کے نتیجے میں چھ انڈین فوجی ہلاک ہوئے ہیں۔ ایک ٹویٹ میں انھوں نے بتایا کہ انڈیا کی جانب سے ایل او سی پر تتہ پانی سیکٹر میں انڈین فائرنگ سے ایک سات سالہ بچے سمیت تین شہری ہلاک ہوئے تھے جس کے جواب میں پاکستانی فوج نے یہ کارروائی کی۔ @OfficialDGISPR کی ٹوئٹر پر پوسٹ کا خاتمہ Pakistan Army’s befitting response to Indian CFVs in Tatta Pani Sector along LOC. Indian fire had martyred 3 civilians including 7 years old boy. Pakistan Army targeted Indian posts. 6 Indian soldiers including an officer killed, many injured 2 bunkers destroyed. — DG ISPR (@OfficialDGISPR) 20 اگست، 2019 @OfficialDGISPR کی ٹوئٹر پر پوسٹ سے آگے جائیں انھوں نے دعویٰ کیا کہ ہہلاک کیے جانے والے انڈین فوجیوں میں ایک افسر بھی شامل ہے جبکہ دو بنکرز بھی تباہ کیے گئے ہیں۔ حالیہ کشیدگی کے دوران لائن آف کنٹرول پر فائرنگ سے کم از کم پانچ پاکستانی شہری اور چار فوجی ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ پاکستانی فوج نے 11 انڈین فوجیوں کی ہلاکت کے بھی دعوے کیے ہیں۔ پاکستان نے منگل کو اپنے شہریوں کی ہلاکت پر انڈین ڈپٹی ہائی کمشنر گورو آہلووالیہ کو بھی دفترخارجہ طلب کر کے احتجاج کیا۔ دفترِ خارجہ کے مطابق 18 اگست کو لائن آف کنٹرول کے تتہ پانی اور چڑی کوٹ سیکٹرز میں انڈین فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا سات سالہ بچہ صدام ولد نور ہلاک ہو گیا جس پر انڈین سفارتکار کو طلب کیا گیا اور جنگ بندی کے معاہدے کی خلاف ورزی کی مذمت کی گئی۔ اس سے قبل پیر کو دو شہریوں کی ہلاکت پر بھی انڈین ڈپٹی ہائی کمشنر سے احتجاج کیا گیا تھا۔ دفترِ خارجہ کے ترجمان کے مطابق انڈین افواج ایل او سی اور ورکنگ باؤنڈری پر مسلسل 2003 میں ہونے والے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیاں کر رہی ہیں اور شہری آبادی کو توپخانے، مارٹر گولوں اور خودکار ہتھیاروں سے نشانہ بنا رہی ہیں۔ ان کے مطابق جان بوجھ کر شہری آبادی والے علاقوں کو نشانا بنانا قابل مذمت اور بین الاقوامی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ متعلقہ عنوانات مزید پڑھ: BBC News اردو

ٹرمپ سے رابطے میں وزیر اعظم نے کشمیر سے کرفیو ہٹوانے کی بات کی: شاہ محمودٹرمپ سے رابطے میں وزیر اعظم نے کشمیر سے کرفیو ہٹوانے کی بات کی: شاہ محمود مزید پڑھیں: ARYNewsUrdu Trump kashmir ShahMehmoodQureshi

امریکی صدر کی ایک مرتبہ پھر مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش - World - Dawn News

ٹرمپ اور مودی کا ٹیلیفونک رابطہ، امریکی صدر کا کشمیر پر تناؤ کم کرنے پر زورامریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور بھارتی وزیراعظم مودی کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا ہے، امریکی صدر نے مودی کو مسئلہ کشمیر پر تناؤ کم کرنے پر زور دیا

کشمیر: صدر ٹرمپ کے مودی اور عمران خان سے رابطےامریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ انھوں نے انڈیا اور پاکستان کے وزرائے اعظم کے ساتھ انڈیا کے زیر انتظام کشمیر کے مسئلے پر خطے میں پیدا ہونے والی حالیہ کشیدگی کم کرنے کے لیے بات چیت کی ہے۔

مقبوضہ کشمیر پر صدر ٹرمپ کا مصالحانہ کردار خوش آئند ہے، فردوس عاشق - ایکسپریس اردوآزادی کی صبح تک کشمیریوں کی سیاسی، سفارتی اور اخلاقی حمایت جاری رہے گی، معاون خصوصی

مقبوضہ کشمیر میں نسل کشی کا آغاز ہو چکا ہے، صدر آزاد کشمیر - Pakistan - Dawn News

پاکستان میں‌ داخل ہونے کی کوشش، سیکیورٹی ایجنسی کی بروقت کارروائی، 17 بھارتی گرفتار

وائرس سے بچنے کے لیے ہاتھ کیسے دھوئیں؟

پاکستان کے لیے اچھی خبر کی امید، ایف اے ٹی ایف کا افتتاحی اجلاس آج پیرس میں ہوگا

بلوچستان میں ایک سے زائد سركاری گاڑیاں ركھنے والوں كیخلاف كارروائی كی تیاریاں - ایکسپریس اردو

ٹڈی دل کا حملہ: بلوچستان میں گندم کی فصل زد میں

Pakistan defeats India to win Kabaddi World Cup

تبصرہ لکھیں

Thank you for your comment.
Please try again later.

تازہ ترین خبریں

خبریں

21 اگست 2019, بدھ خبریں

پچھلا خبر

مژگاں تو کھول (آخری حصہ) - ایکسپریس اردو

اگلا خبر

پاکستان بھارت مسئلہ کشمیر پرکشیدگی کے خاتمے کیلئے ہرممکن کوشش کریں گے:ڈونلڈٹرمپ
کبڈی ورلڈ کپ: انڈیا کو شکست، پاکستان ورلڈ چیمپیئن پاکستان روایتی حریف بھارت کو ہرا کر کبڈی کا عالمی چیمپئن بن گیا - ایکسپریس اردو Pakistan beat India in final match of Kabbadi World Cup 2020 - 92 News HD Plus چین میں ہسپتال تعمیر کرنے والی مشینیں ’ہیرو‘ بن گئیں سرعام پھانسی پرقرارداد قوم کی ترجمان ہے، نور الحق قادری - ایکسپریس اردو Pakistan wins Kabaddi World Cup 2020
پاکستان میں‌ داخل ہونے کی کوشش، سیکیورٹی ایجنسی کی بروقت کارروائی، 17 بھارتی گرفتار وائرس سے بچنے کے لیے ہاتھ کیسے دھوئیں؟ پاکستان کے لیے اچھی خبر کی امید، ایف اے ٹی ایف کا افتتاحی اجلاس آج پیرس میں ہوگا بلوچستان میں ایک سے زائد سركاری گاڑیاں ركھنے والوں كیخلاف كارروائی كی تیاریاں - ایکسپریس اردو ٹڈی دل کا حملہ: بلوچستان میں گندم کی فصل زد میں Pakistan defeats India to win Kabaddi World Cup