دلی ہنگاموں میں گجرات فسادات کی گونج کیوں؟

دہلی ہنگاموں میں گجرات فسادات کی گونج کیوں؟

2/26/2020

دہلی ہنگاموں میں گجرات فسادات کی گونج کیوں؟

سامنے آنے والی ویڈیوز اور تصاویر میں مسلح افراد زخمی مسلمان مردوں کو قومی ترانہ پڑھنے پر مجبور کرتے اور ایک نوجوان کو بے رحمی کے ساتھ پیٹتے نظر آئے۔خوفزدہ مسلمان خاندان شہر کے مخلوط محلے چھوڑنے لگے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images تین روز کے ہنگاموں اور 20 سے زیادہ ہلاکتوں کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی نے پہلی مرتبہ ٹویٹ کرتے ہوئے امن کی اپیل کی۔ ان کی ٹویٹ میں متاثرین کے لیے دکھ اور درد مندی کا کوئی اظہار نہیں تھا۔ دلی کی حکمراں جماعت عام آدمی پارٹی کو بھی ان حالات میں کچھ مؤثر اقدامات نہ اٹھانے پر تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ بہت سوں نے اسے دلی پولیس، جسے انڈیا میں سب سے زیادہ وسائل میسر ہیں کی سنگین ناکامی اور حزب اختلاف کی جماعتوں کا ایک ساتھ اکٹھا ہو کر سڑکوں پر آکر تناؤ کو کم کرنے میں نااہلی قرار دیا ہے۔ اس سب کے پیش نظر مسلح جتھوں کو فسادات کرنے کی کھلی چھوٹ اور متاثرین کو ان کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا۔ اس میں کوئی حیرانی کی بات نہیں کہ دلی ہنگاموں کا موازنہ ماضی میں ہونے والے انڈیا کے بدترین فرقہ وارانہ فسادات سے کیا جا رہا ہے۔ سنہ 1984 میں اس وقت کی وزیر اعظم اندرا گاندھی کی ان کے سکھ محافظ کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد دارالحکومت میں سکھ مخالف مظاہروں میں تقریباً 3000 افراد مارے گئے تھے۔ اور سنہ 2002 میں گجرات میں ایک ٹرین میں لگنے والی آگ کے نتیجہ میں 60 ہندو یاتریوں کی ہلاکت کے بعد ایک ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو گئے تھے جن میں زیادہ تر مسلمان تھے۔ وزیر اعظم مودی اس وقت ریاست گجرات کے وزیر اعلیٰ تھے۔ تصویر کے کاپی رائٹ AFP پولیس پر دونوں فسادات میں ملوث ہونے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔ دلی ہائی کورٹ نے جو فسادات سے متعلق درخواستوں کی سماعت کر رہی ہے، کہا ہے کہ وہ 'اپنے زیر نگرانی' 'ایک اور 1984' نہیں ہونے دے سکتی ہے۔ براؤن یونیورسٹی میں سیاسیات کے پروفیسر اشوتوش ورشنے جنھوں نے انڈیا میں بڑے پیمانے پر مذہبی تشدد پر تحقیق کی ہے ، کا خیال ہے کہ دلی کے فسادات بہت حد تک 1984 اور 2002 کی طرح 'ایک منظم قتل عام دکھائی دیتا ہے۔' پروفیسر ورشنے کے مطابق منظم قتل عام اس وقت ہوتا ہے جب پولیس ہنگاموں کو روکنے کے لیے غیر جانبدارانہ طور پر کام نہیں کرتی، اس وقت توجہ نہیں دیتی جب ہجوم ہنگامہ آرائی کر رہا ہوتا ہے اور بعض اوقات مجرموں کی 'واضح طور پر' مدد کرتی ہے۔ دلی پولیس کی بے حسی گذشتہ تین روز سے سب سے سامنے آئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ' یقیناً ابھی تشدد کی انتہا ماضی میں ہونے والے گجرات یا دہلی جیسے فسادات تک نہیں پہنچی، ہماری تمام تر توانائیاں اس تشدد کو مزید پھیلنے سے روکنے پر مرکوز ہونی چاِہیں۔' سیاسیات کے ماہر بھانو جوشی اور محققین کی ایک ٹیم نے فروری میں ریاستی انتخابات سے قبل دلی کے حلقوں کا دورہ کیا تھا۔ انھیں علم ہوا کہ حکمراں جماعت بی جے پی نے اپنی جماعت کو شبہات، دقیانوسی تصورات اور بد نظمی کے بارے میں مسلسل پیغام دینے کے لیے متحرک کیا ہوا ہے۔ ایک محلے میں انھوں نے پارٹی کے ایک کونسلر کو لوگوں سے یہ کہتے ہوئے دیکھا کہ 'آپ اور آپ کے بچوں کے پاس مستقل ملازمتیں اور پیسہ ہے۔ لہذا مفت، مفت کے بارے میں سوچنا چھوڑ دیں۔ (وہ حکومت کی طرف سے لوگوں کو مفت پانی اور بجلی دینے کی طرف اشارہ کررہی تھیں۔) اگر یہ قوم باقی نہیں رہی تو تمام آزادیاں بھی ختم ہوجائیں گی۔' تجزیہ کار جوشی کا کہنا ہے کہ ایسے وقت میں ملکی سلامتی کے بارے میں اس طرح کی پیش گوئی کرنا کہ جب انڈیا ایک ’محفوظ ملک‘ ہے 'پہلے سے موجود لسانی تفریق کو مزید وسعت دینا اور لوگوں کو شبہات میں ڈالنے' کے مترادف ہے۔ دلی کی انتخابی مہم میں وزیر اعظم مودی کی جماعت نے ایک متنازعہ نئے شہریت کے قانون، کشمیر کی خود مختاری کو ختم کرنے اور ایک نیا ہندو مندر بنانے کے لیے معاشرے کو تفریق کرنے مہم شروع کی۔ تصویر کے کاپی رائٹ AFP پارٹی قائدین نے آزادانہ طور پر نفرت انگیز تقاریر کی تھیں اور انھیں انتخابی حکام نے سنسر کیا تھا۔ دلی کے ایک مسلم اکثریتی محلے شاہین باغ میں خواتین کے ذریعہ شہریت کے قانون کے خلاف وسیع پیمانے پر ہونے والے احتجاج کو بی جے پی کی مہم نے خاص طور پر نشانہ بنایا تھا جس میں مظاہرین کو 'غدار' ظاہر کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔ بھانو جوشی کا کہنا ہے کہ 'اس مہم کے نتائج واٹس ایپ گروپس، فیس بک پیجز، اور گھرانوں میں شبہات اور نفرت پر مبنی گفتگو کے صورت میں سامنے آئے۔' دلی کی نازک اور حساس صورتحال کبھی بھی بگڑنے میں صرف وقت حائل تھا۔ اتوار کے روز بی جے پی کے ایک رہنما نے دھمکی جاری کرتے ہوئے دلی پولیس کو کہا کہ ان کے پاس ان مقامات جہاں لوگ شہریت کے قانون کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں کو خالی کروانے کا تین دن کا وقت ہے اور اگر وہ ایسا کرنے میں ناکام رہے ہیں تو اس کے نتائج بھگتنے کے لیے تیار رہیں۔ جھڑپوں کی پہلی اطلاعات بعد میں اس دن سامنے آئیں۔ اس کے بعد ہونے والے نسلی تشدد کی پیش گوئی ایک المیہ تھا۔ متعلقہ عنوانات مزید پڑھ: BBC News اردو

کورونا فنڈ: سائنسدانوں، انجینئرز، این سی اے، ایس پی ڈی ملازمین کا حصہ ڈالنے کا اعلان



ترک خاتون کے ہاں پانچ بچوں کی پیدائش

بھارت: تبلیغی اجتماع میں شرکت کرنیوالے 27 کو کورونا، 7 افراد جاں بحق



ایس پی ڈی اور این سی اے کے ملازمین کا کرونا فنڈ میں حصہ ڈالنے کا اعلان -

بھارت میں ہندو فیملی کا کورونا زدہ لاش وصولی سے انکار، آخری رسومات مسلمانوں نے ادا کیں - ایکسپریس اردو



تبلیغی جماعت کے اجتماع کے بعد کورونا وائرس متاثرین کی تلاش

کورونا وائرس: گھروں پر کام کرنیوالوں کو ہر گھنٹے بعد سیلفی بھیجنے کی ہدایت



وہی دونوں غنڈے اور اس کی پارٹی بر سر اقتدار مودی_شاہ گینگ سے فسادات کے علاوہ اور کیا توقع انڈین سرکار دہلی narendramodi فسادات رکوانے کے مخلص نہیں ہے DelhiRiots2020 India is bad doing Responsible for the number of BJP MLA has MPs like Kapil Mishra Anorak Thakoor and others ان لله وان اليه راجعون الله انسانوں کے خون سے کھلنا مودی کا مشغلہ ہے مودی کی سوچ مذہب پرستی، نسل پرستی غیر محفوظ معاشرہے کو پروان چھڑانا مودی کی اصلیت ہے ہندو مسلمان عسائی آج کے وقت ہندوستان میں غیر محفوظ ہے دنیا میں کوئی معاشرہ مذہب پرستی نسل پرسی سے ترقی نہیں کرتا ہندوستان معاشرتی حساب سے پیچھے جا رہا ہے

So sad کیونکہ یہ گجرات کے قصائی کے ایماء پر ہو رہا ہے کیونکہ حقیقت چھپا رہے ہو So sad and so tragic it's all just really shameful specially from this Modi gov't it's not an India of Nehru and Gandhi it's not a secular India it's a new India of P.M. Modi already known as butcher of Gujarat and Kashmir. Arvind kejriwal I think he is also responsible for the bad situation of Delhi

God blees

جنگ زدہ علاقوں میں جانوروں کو تحفظ فراہم کرنے والا مسلمان ڈاکٹردنیا کے مختلف ممالک میں جنگی صورت حال کا سامنا ہے، جس بہت زیادہ جانی و مالی نقصان ہورہا ہے۔جنگ زدہ علاقوں میں جہاں انسانوں کی حفاظت اہم ہے وہیں چڑیا گھر یا جنگلات میں رہنے والے جنگلی جانوروں کے تحفظ کا خیال بھی پیدا ہوتا ہے کیونکہ وہ بھی اس کی زد می

مودی کو ایک اور خفت کا سامنا، کانگریس کا ٹرمپ کے عشائیے میں شرکت سے انکارمودی کو ایک اور خفت کا سامنا، کانگریس کا ٹرمپ کے عشائیے میں شرکت سے انکار Congress Refuses Invitation Trump Dinner Reception INCIndia BJP4India PMOIndia IndiaToday IndianExpress timesofindia POTUS StateDept DeptofDefense USAO_SC

ایک اور خوشخبری، ڈیڑھ لاکھ پاکستانیوں کو برطانیہ میں نوکریاں دینے کا معاہدہ طے پاگیالاہور(ویب ڈیسک) پاکستانی اور برطانوی کمپنی کے درمیان ڈیڑھ لاکھ پاکستانی باشندوں کو

رانا ثنا اللہ6 مارچ اور میاں جاوید لطیف 13مارچ کو نیب میں طلبرانا ثنا اللہ6 مارچ اورمیاں جاوید لطیف 13مارچ کو نیب میں طلب PMLN NABLahore RanaSanaullah MianJavedLatif NABSummons PMLNLeaders Politicians GOPunjabPK CMPunjabPK pmln_org RanaSanaUllah70 realjavedlatif Marriyum_A president_pmln Dr_FirdousPTI

چین میں کرونا وائرس کے 409نئے مریضوں میں اضافہ اور 150 افراد مزید ہلاکچین میں نوول کرونا وائرس کے 409نئے مصدقہ مریضوں اور150نئی اموات کی تصدیق ہوئی ہے .چینی صحت

ایران میں کروناکےکیسز،کوئٹہ میں ماسک کی قیمتوں میں اضافہایران میں کروناکےکیسز،کوئٹہ میں ماسک کی قیمتوں میں اضافہ SamaaTV یہ تو قوم کی حرکتیں ہیں پھر انٹرنیشنل میں اپنے آپ کو ایمامدار بھی بولتے ہیں شرم نہیں انکو Despicable. No compassion no humanity, what matters nowadays is just the money. ٹڈی دل ذراعت کو نقصان پہنچا رہی ہے۔ کرونا وائرس کی وجہ سے ہر طرف سے تجارت ختم ہو رہی ہے۔ ابھی اور آگے نہ جانے کیا ہو۔ کیا یہ کوئی اور بڑی قدرتی آفت آنے کے اشارے نہیں ہیں؟ اپنے اعمالوں پر نظر ثانی کرو اور توبہ کرو۔ ایسا نہ ہو کہ بہت دیر ہو جائے۔ سود ، جھوٹ ، کم تولنا، وغیرہ وغیرہ۔



کرسی سلامت رہے!

Hareem Shah to host Ramazan transmission?

'کوشش ہے کہ اینٹی کورونا وائرس ویکسین پاکستان سے تیارہو'

کرونا وائرس، اوزون کی تہہ میں بنا شگاف بھرنا شروع

ہم نے پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا ریلیف پیکج دیا ہے،وزیراعظم -

انڈیا کے مزدوروں کا اپنے گھروں کی جانب پیدل مارچ - BBC News اردو

ٹائیگر فورس پی ٹی آئی کی نہیں پاکستان کی فورس ہوگی، شفقت محمود -

تبصرہ لکھیں

Thank you for your comment.
Please try again later.

تازہ ترین خبریں

خبریں

26 فروری 2020, بدھ خبریں

پچھلا خبر

انٹرنیٹ کی معطلی میں انڈیا پہلے نمبر پر

اگلا خبر

پاکستان میں کرونا وائرس کا پہلا کیس سامنے آگیا - ایکسپریس اردو
کورونا فنڈ: سائنسدانوں، انجینئرز، این سی اے، ایس پی ڈی ملازمین کا حصہ ڈالنے کا اعلان ترک خاتون کے ہاں پانچ بچوں کی پیدائش بھارت: تبلیغی اجتماع میں شرکت کرنیوالے 27 کو کورونا، 7 افراد جاں بحق ایس پی ڈی اور این سی اے کے ملازمین کا کرونا فنڈ میں حصہ ڈالنے کا اعلان - بھارت میں ہندو فیملی کا کورونا زدہ لاش وصولی سے انکار، آخری رسومات مسلمانوں نے ادا کیں - ایکسپریس اردو تبلیغی جماعت کے اجتماع کے بعد کورونا وائرس متاثرین کی تلاش کورونا وائرس: گھروں پر کام کرنیوالوں کو ہر گھنٹے بعد سیلفی بھیجنے کی ہدایت مخیر حضرات کی جانب سے تقسیم راشن دکانوں پر بیچا جانے لگا آسمان پر اڑنے والی ’انسان نما چیز‘ کی ویڈیو وائرل کورونا وائرس دنیا کے تمام ممالک تک پہنچ گیا، امریکا میں اموات چین سے زیادہ ہو گئیں کورونا کی ساخت کا پتا لگا لیا، ویکسین بنانے میں مدد ملے گی: ڈاکٹرعطاء الرحمان بڑی خبر، پاکستان میں كورونا کے 17مریض مکمل صحتیاب
کرسی سلامت رہے! Hareem Shah to host Ramazan transmission? 'کوشش ہے کہ اینٹی کورونا وائرس ویکسین پاکستان سے تیارہو' کرونا وائرس، اوزون کی تہہ میں بنا شگاف بھرنا شروع ہم نے پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا ریلیف پیکج دیا ہے،وزیراعظم - انڈیا کے مزدوروں کا اپنے گھروں کی جانب پیدل مارچ - BBC News اردو ٹائیگر فورس پی ٹی آئی کی نہیں پاکستان کی فورس ہوگی، شفقت محمود - ایک ماہ میں پاکستان کی تیار کردہ کورونا تشخیصی کٹس دستیاب ہوں گی، فواد چوہدری 1 لاکھ سے زائد ہلاکتوں کا خدشہ ہے، ٹرمپ نے امریکیوں کو خبردار کر دیا کورونا وائرس: پاکستان میں آن لائن ذرائع سے تدریسی عمل جاری مگر طلبا کو مسائل کا سامنا انڈین شہر بریلی میں لوگوں کو بھی کیمیکل سے دھو دیا گیا بلوچستان میں برف باری، موسم سرما لوٹ آیا