کورونا وائرس: کیا مودی حکومت لاک ڈاؤن کے بارے میں غلطی کر گئی؟

کورونا وائرس: مودی حکومت کیا اس بارے میں صورتحال کا جائزہ لینے میں غلطی کر گئی

25/05/2020 4:34:00 AM

کورونا وائرس: مودی حکومت کیا اس بارے میں صورتحال کا جائزہ لینے میں غلطی کر گئی

انڈیا میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے اور اب لاک ڈاؤن میں بھی نرمی کی جارہی ہے۔

اس کے 52 دن بعد 24 مارچ کو ملک کے وزیر اعظم نریندر مودی نے خطاب کرتے ہوئے محض چار گھنٹے کے نوٹس پر پورے انڈیا میں لاک ڈاؤن کا اعلان کردیا تھا۔اسی دن یعنی 24 مارچ تک پورے انڈیا میں کورونا وائرس کے کل 564 پوزیٹو کیسز سامنے آچکے تھے اور اس وقت کورونا وائرس سے ہونے والی اموات کی تعداد 10 بتائی گئی۔ یعنی کل 1.77 فی صد اموات۔

آرمی چیف نے کینسر کے مریض بچے کی ملاقات کی خواہش پوری کردی - ایکسپریس اردو 'Greatness and destiny' - Imran Khan, a man born to win | ESPNcricinfo.com آرمی میرٹ پر یقین رکھتی ہے، میرا تقرر منہ بولتا ثبوت ہے، پہلی خاتون جنرل

اب بات کرتے ہیں مئی کے تیسرے ہفتے کی۔ انڈیا میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی کل تعداد 108،923 ہے۔ حکومتی اعداد و شمار کے مطابق ان میں سے 45،299 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔ کورونا وائرس کی وجہ سے ہونے والی اموات کی اس وقت تعداد 3،435 ہے یعنی کل 17۔3 فی صد۔

سوال یہ ہے کہ کیا انڈیا کو اتنے سخت لاک ڈاؤن کی واقعی ضرورت تھی؟دوسری جانب ایک حقیقت یہ ہے جس کا سامنا پوری دنیا کو ہے۔ وہ ہے بے روزگاری۔ غربت کی کھائی میں واپس دوبارہ جانے کا، اپنوں سے دور رہنے کا۔ اور انڈیا جیسے ملک میں غریب مزدوروں کی بد حالی۔ جو مزدور لاک ڈاؤن کے دوران بھوکے پیاسے پیدل اپنے گھروں کو نکلے اور راستے میں حادثات کا شکار ہوئے۔

ایک اندازے کے مطابق انڈیا میں کورونا وائرس پر قابو پانے کے لیے جو لاک ڈاؤن کیا گیا تھا اس کی وجہ سے اب تک 12 کروڑ لوگ بے روزگار ہوچکے ہیں۔ان میں سے بیشتر غیر منظم شعبوں میں کام کرنے والے مزدور ہیں یا پھر کمی مدتی کانٹریکٹ پر کام کرنے والے ملازمین ہیں۔

اتنی ہی بڑی تعداد ان لوگوں کی ہے جو بے روزگار تو نہیں ہوئے لیکن جو بغیر تنخواہ کے گھر پر بیٹھے ہیں اور پھر سے دفاتر کھلنے کا انتظار کر رہے ہیں کیونکہ جب دفاتر بند تھے انہیں تنخواہیں نہیں ملیں۔ملک کی معیشت کا یہ حال ہے کہ گذشتہ دو ماہ کے اندر حکومت کو 20 لاکھ کروڑ روپے کے امدادی پیکج کا اعلان کرنا پڑا ہے۔

معاملے کی سنجیدگی کا اندازہ لگانے کے لیے یہ بتا دوں کہ یہ رقم ملک کی مجموعی پیداوار یعنی جی ڈی پی کا 10 فی صد حصہ ہے۔تصویر کے کاپی رائٹEPAImage captionایک اندازے کے مطابق انڈیا میں کورونا وائرس پر قابو پانے کے لیے جو لاک ڈاؤن کیا گیا تھا اس کی وجہ سے اب تک 12 کروڑ لوگ بے روزگار ہوچکے ہیں۔

لاک ڈاؤن کیوں؟کووڈ 19 ایک ایسی بیماری ہے جس سے نمٹنے میں پوری دنیا مصروف ہے۔چین کے ووہان شہر سے شروع ہونے والی اس وبا نے دنیا کے ترقی پسند ممالک اور غریب ممالک سب کو اپنی لپیٹ میں لینے کی کوشش کی ہے۔سپین ہو یا اٹلی، امریکہ ہو یا برطانیہ، جاپان یا جنوبی کوریا، کینیڈا یا برازیل، ہر ملک میں اس وائرس نے اپنا سر اٹھایا اور لوگوں کی جانیں لی ہیں۔

آرمی چیف نے کینسر کے مرض میں مبتلا بچے کی خواہش پوری کر دی پنجاب پولیس نے ڈکیتی کے ملزم کے گھر کا کرایہ کیوں ادا کیا؟ اگر شراب کی بوتلیں کاغذ کی بننے لگیں تو بالی وڈ کا کیا ہو گا؟

عالمی ادارہ صحت یعنی ڈبلو ایچ او کے مطابق دنیا میں کورونا وائرس کے کل کیسز 47 لاکھ سے تجاوز کر گئے ہیں جن میں سے تین لاکھ سے زیادہ کی اموات ہوچکی ہیں۔دنیا کے بعض ممالک نے اس پر قابو پانے کے لیے مکمل لاک ڈاؤن کا نفاذ کیا تو بعض نے جزوی لاک ڈاؤن کا۔ یعنی جن علاقوں میں کم یا نہ ہونے کے برابر کیسز سامنے آئے وہاں لاک ڈاؤن کا نفاذ نہیں کیا۔

خامیاں کہاں رہیں؟دلی کی جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں ڈیلولپمنٹ اکنومکس کی پروفیسر جیوتی گھوش کے مطابق انڈین حکومت نے لاک ڈاؤن کا نفاذ کرنے میں تاخیر کی اور ایک 'جمہوری ملک ہوتے ہوئے اپنے کروڑوں غریب مزدوروں کے بارے میں بے حد کم سوچا۔'ان کا کہنا ہے کہ ’بنگلہ دیش، نیپال اور پاکستان جیسے پڑوسی ممالک نے لاک ڈاؤن کا انڈیا سے بہتر طریقے سے نفاذ کیا۔ مزدوروں کو اپنے گھر لوٹنے کا مناسب وقت دیا، ان کے لیے پبلک ٹرانسپورٹ کی سہولت فراہم کی۔ اس کے برعکس انڈیا میں غریب مزدوروں کو 45 روز تک پبلک ٹرانسپورٹ کی سہولت سے محروم رکھا اور جو جہاں تھا وہ وہیں پھنسا رہا۔ بیشتر بھوکے پیاسے۔ پھر اس کے بعد میڈیا کے دباؤ میں آکر خصوصی ٹرین سروس شروع کی لیکن کرائے اتنے مہنگے کہ متوسط طبقہ بھی ان کا نہ خرید سکے۔‘

حکومت کی جانب سے لاک ڈاؤن کے فوراً نفاذ کے دو مقاصد تھے۔ پہلا یہ ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنا کیونکہ اس کے پھیلنے کی شرح جسے 'آر او' کہتے ہیں، اسے قابو کرنا تھا اور دنیا کے دیگر ممالک کے تجربے اور ڈبلو ایچ او کی ہدایات کے مطابق قرنطینہ اس کا واحد علاج لگ رہا تھا۔

عالمی سطح پر اسے 'فلیٹ دا کرو' کہا جارہا ہے اور اس عمل سے ہسپتالوں میں مریضوں کے لیے بیڈ، آکسیجن وینٹیلیٹرز، پی پی ای کٹس کا انتظام کرنے کا وقت مل جاتا ہے۔ہوسکتا ہے حکومت کو یہ بھی امید ہو کہ اس لاک ڈاؤن کے دوران ہی اس وائرس کے لیے کوئی ویکسین ایجاد ہوجائے۔

مزید پڑھ: BBC News اردو »

nur1l_12 Crime minster You don't say! مودی مے جان بوجھ کر ایسا کیا کیونکہ غریب انڈین عوام مسلمانوں اور دلت ہندووں پر مشتمل ہے انڈیا کے حکمرانوں کو اس کی پرواہ ہی نہیں BBC reprinting...... غیر معمولی غلطی یہ ہے ہی کمینہ مودی کتا ارے وہاں کی جنتا اس مودی وائرس کو منتخب کرنے میں غلطی کرگئی جس کا خمیازہ وہ ہر روز بھگت رہی ہے

مودی نے کشمیر میں لاک ڈاون لگا رکھا تھا تو اب پورے بھارت میں لاک ڈاون لگانا پڑا ہے اب مودی بتائے کسی کولاک ڈاوان میں قید کرنا کیسا ہوتا ہے مودی کو چاہیے بھارت میں مزید 10 مہینے کے لیے لاک ڈاون لگا دے اور انٹرنیٹ فون سروس بھی بند کر دے मुह चलाने मे और देश चलाने मे फरक है 6साल_बुरा_हाल आत्मनिर्भर_भारत

مودی جی سے کوئی اچھا کام ہوا ہے تو بتائیں سارے کام الٹے سیدھے نکلتے ہیں انڈیا جیسے سمجھدار لوگوں کے سر پر سی آئی اے نے کیا چیزیں لا کر بیٹھا دیں 😢 چالیس کروڑ بے یارومددگار پیدل اپنے گھروں کی جانب رواں دواں مزدور تو یہی بتا رہے ہیں کہ نوٹ بندی کے بعد یہ مودی سرکار کی ایک اور فاش غلطی ہے۔

کورونا وائرس: امریکہ میں بھوک، افلاس اور بے روزگاری میں اضافہدنیا کے طاقتور ترین ملک، امریکہ میں کورونا وائرس کی وجہ سے بھوک و افلاس کا مسئلہ سنگین صورت حال اختیار کرتا جا رہا ہے۔ گذشتہ آٹھ سے نو ہفتوں کے دوران ملک میں تین کروڑ 60 لاکھ لوگ بے روزگار ہو چکے ہیں۔ خدشہ ہے کہ بے روزگار لوگوں کی اصل تعداد اس سے زیادہ ہے۔ Hi guys Watch this Video and Subscribe my YouTube Channel. 👌👌 Ayesha HappyEid EidMubarak Eid2020 Eidi عيد_الفطر_2020

پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 52 ہزار 162 ہوگئی - Pakistan - Dawn News

پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 52 ہزار 162 ہوگئی - Pakistan - Dawn News

برازیل کورونا وائرس کے330,890 متاثرہ کیسز کے ساتھ دنیا میں دوسرے نمبر پر آ گیابرازیل کورونا وائرس کے330,890 متاثرہ کیسز کے ساتھ دنیا میں دوسرے نمبر پر آ گیا Brazil CoronaVirus CasesReported DeathRateToll SecondHighestNumber Ranked InfectedCountry

پنجاب میں دو صوبائی وزراء راجہ راشد حفیظ اور ڈاکٹر اختر ملک کورونا وائرس کا شکارلاہور: (دنیا نیوز) پنجاب میں دو صوبائی وزراء کورونا وائرس کا شکار ہوئے، صوبائی وزیر برائے لٹریسی راجہ راشد حفیظ اور صوبائی وزیر ڈاکٹر اختر ملک مہلک وباء کا نشانہ بن گئے۔

کورونا وائرس کے سائے میں اس بار عید کیسے منائی جائے گی؟اس بار عید کے موقع پر نہ تو بچوں اور بزرگوں کو عید گاہ جانے کی اجازت ہو گی نہ ہی بچے بڑے تفریحی مقامات پر جا سکتے ہیں۔ حکومت نے اپنے پیغام میں عوام سے کہا کہ نماز عید کے بعد اپنے پیاروں کو گلے لگانے سے بھی اجتناب کریں۔ FollowCovidSafeSOPsOnEid On this Eid let us remember our loved ones who lost their lives in the plane crash and pray for their highest ranks in Jannah. RIP. Let us also pray for the earliest recovery of the survivors. بہت سادگی کے ساتھ اور وہ لوگ ضرور یاد رکھے جو پچھلے سال ہمارے ساتھ تھے لیکن اب نہیں