چین کے مقابلے میں یورپ کا 300 ارب یورو کا عالمی منصوبہ - BBC News اردو

چین کے مقابلے میں یورپ کا 300 ارب یورو کا عالمی منصوبہ

01/12/2021 6:11:00 PM

چین کے مقابلے میں یورپ کا 300 ارب یورو کا عالمی منصوبہ

یورپی یونین 'گلوبل گیٹ وے' کے نام سے سرمایہ کاری کا ایک عالمی منصوبہ شروع کرنے کا اعلان کرنے والا ہے جس کے بارے میں خیال کیا جا رہا ہے کہ یہ چین کے 'بیلٹ اینڈ روڈ' منصوبے کا توڑ کرنے کی ایک کوشش ہے۔

یورپی یونین کے ذرائع کا کہنا ہے کہ اس کوشش کے تحت 'مواصلات، توانائی، ماحولیات اور ڈیجیٹل' شعبوں میں ٹھوس منصوبے شامل کیے جائیں گے۔اس منصوبے کے بارے میں عام خیال یہ ہی ہے کہ یہ یورپ کی طرف سے افریقہ اور دنیا کے دیگر خطوں میں چین کے بڑھتے ہوئے اثر و رسوخ کا مقابلہ کرنے کے لیے بنایا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیےسی پیک ترجیح ہے: نئی حکومت کی چین کو یقین دہانییورپی کمیشن کی صدر ارسلا فان ڈر لی ین اگلے ہفتے بدھ کے روز 'گلوبل گیٹ وے' منصوبے کی تفصیلات پیش کریں گے۔یورپی یونین اس بات پر غور کر رہا ہے کہ وہ کسی طرح یورپی برادری کے رکن ملکوں، مالی اداروں اور نجی سرمایہ کاروں سے اس پلان کے تحت بنائے جانے والے منصبوں کے لیے اربوں یورو اکھٹا کر سکتا ہے۔

یورپین کمیشن کی صدر نے اس سال ستمبر میں اپنے سالانہ 'سٹیٹ آف یونین' خطاب میں کہا تھا کہ 'ہمیں معیاری انفراسٹرکچر جس سے سفر اور مال کی ترسیل میں آسانی ہو بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کی ضرورت ہے۔'گلوبل گیٹ وے منصبوے کی چودہ صفاحت پر مشتمل ابتدائی دستاویز میں یہ نہیں کہا گیا کہ یہ چین کی حکمت عملی کا مقابلہ کرنے کے لیے ترتیب دیا گیا ہے۔ headtopics.com

قومی ایئر لائن نے آسٹریلیا مالدیپ اور ہانگ کانگ کے لیے براہ راست پروازوں کا فیصلہ کر لیا

کمیشن نے منگل کے روز اس منصوبے کے بارے میں بار بار پوچھے جانے کے باوجود چین کا نام لینے سے دانستہ طور پر گریز کیا۔جرمن مارشل فنڈ کے بحر اوقیانوس کے خطے کے ماہر اینڈریو سمال کا کہنا ہے کہ اس کے پس منظر سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔ ان کا کہنا ہے کہ اگر چین کی طرف سے بیلٹ اینڈ روڈ منصوبہ شروع نہ کیا جاتا تو گلوبل گیٹ وے کا خیال بھی نہ آتا۔

ان کے مطابق یہ منصوبہ یورپ کی طرف سے پہلی سنجیدہ کوشش ہے کہ ایسے پیکج مرتب کیے جائیں اور سرمایہ کاری کا نظام ترتیب دیا جائے تاکہ جو ممالک چین سے قرضے حاصل کر رہے ہیں ان کو متبادل ذرائع بھی دستیاب ہوں۔بیلٹ اینڈ روڈ چین کی خارجہ پالیسی کا اہم جز ہے۔ جس کے تحت تجارتی روابط استوار کرنے کے لیے سڑکیں، بندرگاہیں، ریلوے لائینیں اور پل بنانے کے منصوبے میں پیسہ لگایا جا رہے۔

یہ حکمت عملی مشرق بعید اور جنوبی مشرقی ایشیا سے ہوتی ہوئی افریقہ اور یورپی یونین کے بلقان کے مغربی ہمسایہ ملکوں تک پہنچ گئی ہے۔چین کی اس حکمت عملی پر شدید تنقید کی جاتی ہے اور اسے مختلف ملکوں کو 'پھانسنے کے قرضے' اور 'قرضوں کے جال کی سفارتی کاری' کا نام دیا جاتا ہے۔

پی ایس ایل7: پشاور زلمی نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے منہ سے فتح چھین لی

لیکن کچھ لوگوں کی رائے میں یہ اتنا سیدھا معاملہ نہیں ہے اور اس میں بہت پیچیدگیاں ہیں کیونکہ بڑے بڑے قرضوں کا حصول کبھی بھی خطرے سے خالی نہیں ہوتا۔ چین نے ایک ایسی خلا پر کی ہے جو دوسرے نہیں کر سکے۔ مغرب کی چین سے بڑھتی ہوئی کشمکش کے دوران چین کا اقتصادی، سیاسی اور دفاعی اثر و رسوخ بڑھتا جا رہا ہے۔ headtopics.com

اینڈریو سمال کا کہنا ہے کہ اب جب کہ یورپی یونین اپنے اثر و رسوخ اور وسائل میں اضافہ کرنے کی کوشش میں ہے یہ اس کے لیے ایک بڑا امتحان ثابت ہو سکتا ہے۔ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا یورپی یونین اس عالمی سیاست میں موثر کردار ادا کر سکتا ہے۔'یا یہ اپنے اندرونی بیوروکریٹک جھگڑوں میں اس قدر الجھا ہوا ہے کہ یہ کردار ادا کر سکے۔' ان کا استدلال ہے کہ اگر یہ ناکام ہو گیا تو یہ ایک بڑا موقع گنواں دے گا۔

ایک سفارت کار کا کہنا ہے کہ یہ ایک اچھا شگون ہے کہ آخر کار یورپ نے اس علاقے میں اپنا اثر و رسوخ استعمال کرنا شروع کیا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا یہ مشترکہ مفاد کا معاملہ ہے اور جس میں یورپی یونین کے بحر اوقیانوس کے اتحادی امریکہ اور برطانیہ شامل ہیں۔سینٹر فار گلوبل ڈویلپمنٹ کے ماہر سکاٹ مورس کا کہنا ہے کہ مشترکہ مفادات سے باہمی مسابقت کی فضا بھی جنم لیتی ہے۔

پی ایس ایل: 12سال سے کم عمر بچوں کے اسٹیڈیم میں داخلے پر پابندی

انھوں نے کہا کہ امریکہ نے گزشتہ جون میں جی سیون کے ملکوں کے اجلاس کے موقعے پر اس طرز کے اپنے منصوبے 'بلڈ بیک بیٹر ورلڈ' شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔ سکاٹ مورس نے کہا کہ بہت شور مچ رہا ہے اور مختلف برانڈ آپس میں ٹکرا رہے ہیں۔ لیکن وہ گلوبل گیٹ وے منصوبے کی کامیابی کے بارے میں پر امید تھے۔

انھوں نے کہا کہ چین کے مقابلے سے زیادہ ضروری بات یہ ہے یورپ ترقی پذیر ملکوں کے لیے سرمایہ کاری حاصل کرنے کا ایک ذریعہ بن جائے۔یورہی یونین کے اس منصوبے کے کمشنروں کے اجلاس میں بدھ کو منظوری کے بعد اسے یورپی کمیشن کی صدر کے سامنے پیش کیا جائے گا۔پورپی یونین نے اس بات پر زور دیا ہے کہ وہ ایک شفاف اور اقدار پر مبنی نظام ترتیب دینا چاہتا ہے جس سے دوسرے ملکوں سے تعلقات بن سکیں نہ کہ انھیں دستِ نگر بنایا جائے۔ headtopics.com

مزید پڑھ: BBC News اردو »

Atta Ullah Esa Khelvi ki London mei 'Pakistan' se guftagu, tamam afwaho ka jawab de dia

عطااللہ عیسیٰ خیلوی کی لندن میں 'پاکستان' سے گفتگو، تمام افواہوں کا جواب دے دیا#AttaUllahEsa #UK مزید پڑھ >>

Great China have threatened the hegemony of all. And now all are ready to bring out their tons of money. Hats of to China ہر کوئی چین سے مقابلہ کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ جہاں چین نے سب کو ہاتھ ملانے کی دعوت دی ہے اگر مقصد سمارٹ پریکیورمنٹ اور ڈسٹری بیوشن کے لیے انفراسٹرکچر بنانا ہے تو پھر مقابلہ کیوں؟ یورپ اور امریکہ اپنی برتری برقرار رکھنے کے لیے لڑ رہے ہیں اور کچھ نہیں۔

چائنا جیسے ظالم سامراج کو روکنا ضروری ہے

کرکٹ میچ کے دوران دل کا دورہ پڑنے سے کھلاڑی جاں بحق - ایکسپریس اردوجان بحق کرکٹر کو لانڈھی قبرستان میں سپردخاک کر دیا گیا موت کہیں بھی آ سکتی ہے اس میں کونسی انہونی والی بات ہے May Allah give him highest rank in jannat Reat in peace 😭 💔

پائلٹس کے جعلی لائسنس کا معاملہ، پاکستان نے برطانیہ کی خدمات حاصل کر لیں - ایکسپریس اردوسی اے اے پاکستان اور یو کے سول ایوی ایشن انٹرنیشنل کے مابین معائدے کی مدت تین سال ہوگی

دارالحکومت میں‌ پیٹرول کی قیمت 8 روپے فی لیٹر کم کرنے کا اعلانبھارتی دارالحکومت میں‌ پیٹرول کی قیمت 8 روپے فی لیٹر کم کرنے کا اعلان arynewsurdu

منفی 71 والے علاقے کے لوگ زندہ کیسے؟ ویڈیو سامنے آگئیمنفی 71 والے علاقے کے لوگ زندہ کیسے؟ ویڈیو سامنے آگئی arynewsurdu

راکھی ساونت کے شوہر سے متعلق نیا انکشاف - ایکسپریس اردوشادی کے دو سال بعد راکھی اور ان کے شوہر پہلی بار بگ باس شو کے ذریعے منظرِ عام پر آئے

گورنر سندھ کے غیر قانونی تعمیرات سے متعلق آرڈیننس پر تحفظاتگورنر سندھ کے غیر قانونی تعمیرات سے متعلق آرڈیننس پر تحفظات arynewsurdu گورنر کو اس بل پر دستخط نہ کرنا چاہیے