\u06c1\u0627\u0626\u0631\u0627\u06cc\u062c\u0648\u06a9\u06cc\u0634\u0646 \u06a9\u0645\u06cc\u0634 \u06a9\u06cc \u0686\u0627\u0626\u06d2 \u06a9\u06d2 \u0628\u062c\u0627\u0626\u06d2 \u0644\u0633\u06cc \u06a9\u0648 \u0641\u0631\u0648\u063a \u062f\u06cc\u0646\u06d2 \u06a9\u06cc \u06c1\u062f\u0627\u06cc\u062a

24/06/2022 10:00:00 PM

چائے کے استعمال میں کمی کے منصوبے پر کام شروع #SamaaTV #highereducationcommission #TeaImport

چائے کے استعمال میں کمی کے منصوبے پر کام شروع SamaaTV highereducationcommission TeaImport

\u0686\u0627\u0626\u06d2 \u06a9\u06d2 \u0627\u0633\u062a\u0639\u0645\u0627\u0644 \u0645\u06cc\u06ba \u06a9\u0645\u06cc \u06a9\u06d2 \u0645\u0646\u0635\u0648\u0628\u06d2 \u067e\u0631 \u06a9\u0627\u0645 \u0634\u0631\u0648\u0639

Jun 24, 2022 ہائر ایجوکیشن کمیشن نے چائے کے استعمال میں کمی کے منصوبے پر کام شروع کردیا۔ ایچ ای سی نے ملک بھر کی یونیورسٹیز کو ستو اور لسی کو فروغ دینے کی ہدایت کی گئی ہے۔ یونیورسٹیز کے وائس چانسلرز کے نام مراسلے میں کہا گیا ہے کہ چائے کے بجائے لسی اور ستو کو فروغ دیں کیونکہ چائے کی درآمد میں کمی سے ہمارے درآمدی بل میں کمی آئے گی۔ مراسلے میں مقامی چائے کے باغات اور روایتی مشروبات کو بھی فروغ دینے کا کہا گیا ہے ۔ یہ تجویز بھی دی گئی ہے کہ مقامی کوکنگ آئل پر تحقیق اور درآمد شدہ خوردنی تیل کو تبدیل کرنے کیلئے مارکیٹنگ کریں۔ موٹرسائیکل، گاڑیوں، بسوں اور ٹرینوں میں متبادل توانائی کے استعمال پر تحقیق بھی مراسلے میں شامل ہے۔.سماء ویب ڈیسک Jun 23, 2022 سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے پی ٹی آئی کے مارچ کے دوران گرفتار افراد کی فوری رہائی کی ہدایت کردی۔ سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس چیئرمین کمیٹی سینیٹر محسن عزیز کی زیرصدارت پارلیمنٹ ہاوُس میں منعقد ہوا- جس میں قائد حز ب اختلاف سینیٹ سینیٹر ڈاکٹر شہزاد وسیم، سینیٹرز ثمینہ ممتاز زہری، رانا مقبول احمد، شہادت اعوان، فوزیہ ارشد، سرفراز احمد بگٹی، دلاور خان، شبلی فراز، ولید اقبال، فلک ناز، اسپیشل سیکرٹری داخلہ، اسپیشل سیکرٹری داخلہ سندھ، اسپیشل سیکرٹری داخلہ پنجاب، ڈی سی اسلام آباد، آر پی او راولپنڈی، ایڈیشنل آئی جی کراچی اور ایڈیشنل کمشنر اسلام آباد نے شرکت کی۔ قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں پی ٹی آئی کے حقیقی آزادی مارچ کے دوران امن امان قائم کرنے والی ایجنسیوں اور انتظامیہ کی جانب سے لانگ مارچ شرکاء پر شیلنگ اور پی ٹی آئی قیادت پر پولیس کا کریک ڈاؤن اور چادر و چار دیواری کے تقدس کی پامالی کے معاملات کا تفصیل سے جائزہ لیا گیا۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ حالات و واقعات کا تفصیلی جائزہ لینے کیلئے چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی کی اجازت سے تمام صوبوں کا دورہ کر کے حتمی رپورٹ تیار کرے گی۔ قائمہ کمیٹی کے حوالے سے ٹویٹ اور سوشل میڈیا پر ریٹائرڈ آرمی افسران کی کینیڈا میں شہریت کے حوالے سے غلط خبریں گردش کر رہی ہیں جن کا اس کمیٹی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔کمیٹی میں یہ معاملہ نہ ہی کبھی زیر بحث لایا گیا ہے اور نہ ہی اس حوالے سے کوئی رپورٹ بنائی گئی ہے۔ چیئرمین کمیٹی سینیٹر محسن عزیز نے کہا کہ سینیٹرز ولید اقبال، اعظم سواتی، اعجاز چوہدری اور ڈاکٹر یاسمین راشد کے کیسز کے حوالے سے متعلقہ ادارے 15دن کے اندر رپورٹ تیار کر کے کمیٹی کو فراہم کریں۔ سوشل میڈیا سے تعلق رکھنے والے عمران ریاض نے کمیٹی کو بتایا کہ مجھے اور میرے گھر والوں کو ہراساں کیا جا رہا ہے، مجھے کہا جا رہا ہے کہ لاہور سے شفٹ ہو جائیں۔ میرے گھر کے آس پاس پانچ پولیس ناکے لگا کر مجھ سے ملنے آنے والوں کو شدید تنگ کیا جاتا ہے۔ سینیٹر رانا مقبول احمدنے کہا کہ جعلی مقابلے اور عمران ریاض کو ہراساں کرنے کے معاملے کی انکوائری ہونی چاہئے۔ جو پولیس اہلکار ملوث ہیں ان کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے۔ سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ کچھ معروف صحافیوں کو جان بوجھ کر ٹارگٹ کیا جا رہا ہے اُن کو کام سے روکنے کیلئے ایسے ہتھ کنڈے استعمال کئے جا رہے ہیں جس کی ہم بھر پور مذمت کرتے ہیں۔.اسرائیل کی لبنان کو جنگ کی دھمکی June 23, 2022 June 23, 2022 0 تل ابیب: اسرائیل نے لبنان کو دھمکی دی ہے کہ اگر ہمارے لوگوں کو نشانہ بنایا گیا تو لبنان پر حملہ کر دیں گے۔ عالمی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینٹز نے کہا ہے کہ اگر اسرائیلی عوام کو خطرہ ہوا تو ہم لبنان کے خلاف جنگ کے لیے تیار ہیں اور دنیا ایک بار پھر ہمارے فوجیوں کو بیروت، صیدا اور صور کی سڑکوں پر مارچ کرتا دیکھے گی۔ اسرائیلی وزیر دفاع نے لبنان کو دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ اگر ہمارے لوگوں کو کسی بھی فوجی کارروائی میں نشانہ بنایا گیا تو ہم لبنان کا نئے سرے سے محاصرہ کر کے حزب اللہ کو بھاری نقصان پہنچانے کو تیار ہیں۔ انہوں نے لبنان کو 6 جون 1982 کی جنگ یاد دلاتے ہوئے کہا کہ اس وقت ہماری افواج بیروت تک پہنچ گئی تھیں اور اُس جنگ میں اسرائیل نے 88 دنوں تک بری اور بحری محاصرہ جاری رکھا تھا۔ اسرائیلی وزیر دفاع نے کہا کہ اگر ہمیں آج لبنان میں فوجی کارروائی کے لیے مجبور کیا گیا تو وہ پہلے سے زیادہ سخت جنگ ہو گی۔ جس میں حزب اللہ اور لبنان کو بھاری قیمت چکانا ہو گی۔ اسرائیل اور لبنان کی سمندری حدود کا فیصلہ لبنان کے لیے لائف لائن کی حیثیت رکھتا ہے۔ previous post عمران خان نے ملک کو دیوالیہ کے قریب چھوڑا، 120 ارب روپے کا خسارہ تھا next post.0 جبران ناصر نے کہا سیکریٹری صحت عمر کے تعین کے حوالے سے درخواست منظور نہیں کرتے تو سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کریں گے— فائل فوٹو: ڈان نیوز سپریم کورٹ کراچی رجسٹری نے سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف دعا زہرہ کے والد کی درخواست خارج کرتے ہوئے انہیں میڈیکل بورڈ کی تشکیل کے لیے متعلقہ فورم سے رجوع کرنے کی ہدایت کردی۔ سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں تین رکنی بینچ نے دعا زہرہ کے والد کی درخواست پر سماعت کی، عدالت نے استفسار کیا کہ والدین سے ملاقات کرائی گئی تھی جس پر درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مختصر ملاقات کروائی گئی تھی۔ دورانِ سماعت عدالتی استفسار پر دعا زہرہ کے والد نے بتایا کہ 5 منٹ کے لیے چیمبر میں ملاقات کروائی گئی تھی اس موقع پر کمرے میں 15 سے 20 پولیس اہلکار بھی موجود تھے۔ مزید پڑھیں: دعا زہرہ کے والد نے سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا جسٹس سجاد علی نے استفسار کیا کہ سندھ ہائی کورٹ نے اسکا بیان ریکارڈ کیا اور کہا کہ بچی جس کے ساتھ جانا چاہے جا سکتی ہے۔ جسٹس محمد علی مظہر نے ریمارکس دیے کہ آپ نے میڈیکل بورڈ کو چیلنج کیا ہے جس پر وکیل نے کہا کہ ہم نے سیکریٹری صحت کو اس حوالے سے خط لکھا ہے۔ جسٹس منیب اختر نے وکیل سے مکالمہ کیا کہ آپ جذباتی نا ہوں ہم آپ کی قدر کرتے ہیں قانونی نکات پر عدالت کی معاونت کریں جس پر وکیل نے کہا کہ پولیس نے اغواء کا کیس سی کلاس کردیا ہے۔ جسٹس سجاد علی شاہ نے کہا کہ بچی نے 2 عدالتوں میں جاکر کہہ دیا کہ مجھے کسی نے اغوا نہیں کیا ہے، سندھ ہائی کورٹ نے تفتیشی افسر کو کیس کا چالان ٹرائل کورٹ میں چالان پیش کرنے کا کہا تھا، دو رکنی بینچ کے سامنے دیا گیا دعا زہرہ کا بیان پڑھیں۔ یہ بھی پڑھیں: دعا زہرہ کے پہلے انٹرویو پر نیا تنازع کھڑا ہوگیا جسٹس منیب اختر نے درخواست گزار کے وکیل سے استفسار کیا کہ شادی کو اگر چیلنج کرنا ہو تو کہاں کریں گے، جس پر جسٹس محمد علی مظہر نے کہا کہ فیملی کورٹ میں شادی کو چیلنج کیا جاتا ہے۔ جسٹس محمد علی مظہر کا مزید کہنا تھا کہ لڑکی عدالت کے اندر اتنے بیانات دے رہی ہے اگر آپکی ملاقات ہوجاتی اور لڑکی کہتی کہ مجھے شوہر کے ساتھ جانا ہے پھر کیا ہوتا، لڑکی نے ہائی کورٹ اور مجسٹریٹ کے سامنے بیان دے دیا ہے۔ عدالت نے وکیل سے استفسار کیا کہ پنجاب کا چائلڈ میرج ایکٹ کیا کہتا ہے، اس معاملے میں کتنے لوگ گرفتار ہوئے تھےجس پر وکیل نے بتایا کہ نکاح خواں اور ایک گواہ گرفتار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آپ 6،8 گھنٹے بچی سے مل لیں صبح 10 بجے سے 2 بجے تک مل لیں، آپ اور آپکی کی بیگم بچی سے تسلی سے مل لیں پوچھ لیں اس پر کوئی دباؤ ہے یا نہیں ہے، اگر پھر بھی بچی آپ کے ساتھ نا جانا چاہے اور کہے کہ میں خوش ہوں توآپ کیا کریں گے۔ مزید پڑھیں: سندھ پولیس کی عدالت سے دعا زہرہ اغوا کیس کو کالعدم قرار دینے کی سفارش جسٹس سجاد علی شاہ نے دعا زہرہ کے والد سے استفسار کیا کہ آپ کیا چاہتے ہیں، ہمیں آپ کے جذبات کا احساس ہے لیکن بچی نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے اسکے بھی حقوق ہیں۔ سپریم کورٹ نے دعا زہرہ کے والد کی درخواست خارج کردی اور انہیں متعلقہ فورمز سے رجوع کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ متعلقہ کیس ہمارے دائرہ کار میں نہیں ہے۔ تاہم فیصلہ سناتے ہوئے عدالت نے ریمارکس دیے کہ میڈیکل بورڈ کی تشکیل کے لیے مناسب فورم سے رجوع کرسکتے ہیں یا اگر آپ کوئی ریلیف لینا چاہتے ہیں، آپ کو سول عدالت سے رجوع کرنا چاہیے تھا۔ کسی عدالت میں نکاح نامہ جعلی ثابت نہیں ہوا ہے، جبران ناصر سماجی رہنما جبران ناصر کی میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ہماری استدعا تھی کہ بچی کو کیس کے فیصلے تک شیلٹر ہوم بھیجا جائے، میڈیکل بورڈ تشکیل دیا جائے۔ مزید پڑھیں: غلطی کی معافی مانگتی ہوں، والدین بھی دل بڑا کرکے معاف کردیں، دعا زہرا سماجی رہنما کے مطابق انہوں نے اپنی درخواست واپس لے لی ہے کیونکہ عدالت نے کہا ہے کہ عمر کے تعین کی رپورٹ کو چیلنج کر سکتے ہی، عدالت نے فیصلہ دیا ہے کہ سندھ ہائی کورٹ کا عمر کے تعین کا فیصلہ رکاوٹ نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ عمر کے تعین کے حوالے سے میڈیکل بورڈ کی تشکیل کی درخواست دیں گے سیکریٹری صحت عمر کے تعین کے حوالے سے درخواست منظور نہیں کرتے تو سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کریں گے۔ جبران ناصر کا کہنا تھا کہ ہمیں امید ہے کہ میڈیکل بورڈ کا فیصلہ ہمارے حق میں آئے گا، کسی عدالت میں نکاح نامہ جعلی ثابت نہیں ہوا ہے، بچی سے ایک جھوٹ بلوایا گیا تھا۔ خیال رہے 18 جون کو دعا زہرہ کے والد مہدی کاظمی نے سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کی تھی۔ دعا زہرہ کے والد نے درخواست میں سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے پر سوال اٹھاتے ہوئے مؤقف اختیار کیا ہے کہ دعا زہرہ کے طبی معائنے کی رپورٹ میڈیکل بورڈ نے تیار نہیں کی۔ مزید پڑھیں: دعا زہرہ کی لاہور سے ’ملنے‘ کی خبر پر لوگوں کے تبصرے درخواست گزار کا کہنا تھا کہ سندھ ہائی کورٹ نے 8 جون 2022 کو دعا زہرہ کو اس کی مرضی سے فیصلہ کرنے کا حکم دیا تھا، دعا زہرہ کے بیان اور میڈیکل ٹیسٹ کی بنیاد پر فیصلہ سنادیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا تھا کہ میڈیکل رپورٹ میں دعا زہرہ کی عمر 17 سال بتائی گئی ہے میرے پاس موجود نادرا ریکارڈ ،تعلیمی اسناد اور کے مطابق دعا زہرہ کی عمر 14 سال ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پولیس نے کیس کا چالان سی کلاس میں ٹرائل کورٹ میں جمع کرادیا ہے، سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے میں خامی ہے۔ سال مارچ میں کراچی سے لاپتا ہونے والی دعا زہرہ کو رواں ماہ کے آغاز میں پنجاب کے شہر بہاولنگر سے بازیاب کروایا گیا تھا۔ 30 مئی کو دعا زہرہ کی والدہ کی جانب سے دائر کردہ درخواست کی سماعت کے دوران لڑکی کی بازیابی میں ناکامی پر عدالت نے آئی جی سندھ کو عہدے سے ہٹاتے ہوئے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو دوسرا افسر تعینات کرنے کا حکم دیا تھا۔ یہ بھی پڑھیں: دعا زہرہ کی بازیابی کیلئے والد کی درخواست پر فریقین کو نوٹس عدالت نے ریمارکس دیے تھے کہ صوبے کی پولیس اتنی نااہل ہوچکی ہے، عدالت 21 دن سے احکامات جاری کر رہی ہے لیکن بچی کو بازیاب نہیں کروایا گیا، پولیس بچی کو بازیاب نہیں کروائے گی تو کون بچی کو بازیاب کروائے گا۔ تاہم 17 جون کو سندھ ہائی کورٹ نے دعا زہرہ کی جانب سے اپنے اغوا سے متعلق بیان حلفی دینے کے بعد کیس کو نمٹاتے ہوئے اسے شوہر کے ساتھ رہنے یا والدین کے ساتھ جانے سے متعلق اپنی مرضی سے فیصلہ کرنے کی اجازت دی تھی۔ 3 صفحات پر مشتمل فیصلے میں عدالت نے کہا تھا کہ تمام شواہد کی روشنی میں اغوا کا مقدمہ نہیں بنتا۔ تحریری حکم نامے میں سندھ ہائی کورٹ نے دعا زہرہ کو اپنی مرضی سے فیصلہ کرنے کی اجازت دے دی تھی۔ حکم نامے میں عدالت نے کہا تھا کہ عدالت بیان حلفی کی روشنی میں اس نتیجے پر پہنچی ہے کہ دعا زہرہ اپنی مرضی سے شوہر کے ساتھ رہنا چاہے یا اپنے والدین کے ساتھ جانا چاہے تو جا سکتی ہے، وہ اپنے اس فیصلے میں مکمل آزاد ہے۔ یہ بھی پڑھیں: سندھ ہائی کورٹ کی دعا زہرہ کو اپنی مرضی سے فیصلہ کرنے کی اجازت عدالت نے اپنے حکم نامے میں کیس کے تفتیشی افسر کو کیس کا ضمنی چالان جمع کرانے کا حکم دینے کے ساتھ ساتھ عمر کے تعین سے متعلق میڈیکل سرٹیفکیٹ اور سندھ ہائی کورٹ میں ریکارڈ کرایا گیا بیان بھی پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔ عدالت نے یہ بھی کہا تھا کہ دعا زہرہ کو لاہور ہائی کورٹ میں پیش کرنا سندھ حکومت کی صوابدید ہے، ٹرائل کورٹ قانون کے مطابق کارروائی جاری رکھے، اس حکم نامے کے ساتھ ہی عدالت نے دعا زہرہ کی بازیابی سے متعلق درخواست نمٹا دی تھی۔.

مزید پڑھ:
SAMAA TV »
Loading news...
Failed to load news.

کیا حکمران اور اشرافیہ ملے ہیں خود جو مرضی پئیں بلکہ پورا ملک کھا جائیں لسی پی کے سو جاؤ ، قوم۔پہلے ہی۔سوئی ہوئی۔ہے

\u0633\u06cc\u0646\u06cc\u0679 \u06a9\u0645\u06cc\u0679\u06cc \u06a9\u06cc \u067e\u06cc \u0679\u06cc \u0622\u0626\u06cc \u06a9\u06d2 \u0645\u0627\u0631\u0686 \u06a9\u06d2 \u062f\u0648\u0631\u0627\u0646 \u06af\u0631\u0641\u062a\u0627\u0631 \u0627\u0641\u0631\u0627\u062f \u06a9\u06cc \u0641\u0648\u0631\u06cc \u0631\u06c1\u0627\u0626\u06cc \u06a9\u06cc \u06c1\u062f\u0627\u06cc\u062a\u0688\u06cc \u0686\u0648\u06a9 \u0627\u0648\u0631 \u0646\u0627\u062f\u0631\u0627 \u0686\u0648\u06a9 \u06a9\u06cc \u0628\u0646\u062f\u0634 \u067e\u0631 \u0642\u0627\u0626\u0645\u06c1 \u06a9\u0645\u06cc\u0679\u06cc \u06a9\u0627 \u0627\u0638\u06c1\u0627\u0631 \u062a\u0634\u0648\u06cc\u0634 Abhi tak rehai nahi di awam ko shabash hai bhaee police ko noon league ne bhi khilaya or awam se bhi lout rakhay unhe lock up mein rakh Kay begairat police

\u0627\u0633\u0631\u0627\u0626\u06cc\u0644 \u06a9\u06cc \u0644\u0628\u0646\u0627\u0646 \u06a9\u0648 \u062c\u0646\u06af \u06a9\u06cc \u062f\u06be\u0645\u06a9\u06ccAbbtakk News

\u062f\u0639\u0627 \u0632\u06c1\u0631\u06c1 \u06a9\u06d2 \u0648\u0627\u0644\u062f \u06a9\u06cc \u06c1\u0627\u0626\u06cc \u06a9\u0648\u0631\u0679 \u06a9\u06d2 \u0641\u06cc\u0635\u0644\u06d2 \u067e\u0631 \u0646\u0638\u0631\u062b\u0627\u0646\u06cc \u06a9\u06cc \u062f\u0631\u062e\u0648\u0627\u0633\u062a \u062e\u0627\u0631\u062c\u0633\u067e\u0631\u06cc\u0645 \u06a9\u0648\u0631\u0679 \u0646\u06d2 \u062f\u0639\u0627 \u0632\u06c1\u0631\u06c1 \u06a9\u06d2 \u0648\u0627\u0644\u062f \u06a9\u0648 \u0645\u06cc\u0688\u06cc\u06a9\u0644 \u0628\u0648\u0631\u0688 \u06a9\u06cc \u062a\u0634\u06a9\u06cc\u0644 \u06a9\u06d2 \u0644\u06cc\u06d2 \u0645\u0646\u0627\u0633\u0628 \u0641\u0627\u0631\u0645 \u0633\u06d2 \u0631\u062c\u0648\u0639 \u06a9\u0631\u0646\u06d2 \u06a9\u06cc \u06c1\u062f\u0627\u06cc\u062a \u06a9\u0631\u062f\u06cc\u06d4 shmags_zeus Let this story end there! Corrupt judges Mafia buhut strong hee Closed NADRA offices BBCUrdu Ess judge ke larki keh sath kuch hogga tb patta chlle ga. Corrupt police Corrupt judges Strong mafia BBCUrdu TurkeyUrdu ChinaUrdu_ Dua zehra case Karachi Pakistan

\u0645\u0644\u06a9 \u0628\u06be\u0631 \u0645\u06cc\u06ba \u06a9\u0648\u0631\u0648\u0646\u0627 \u0648\u0627\u0626\u0631\u0633 \u06a9\u06d2 268 \u06a9\u06cc\u0633\u0632 \u0631\u067e\u0648\u0631\u0679\u060c \u0645\u062b\u0628\u062a \u06a9\u06cc\u0633\u0632 \u06a9\u06cc \u0634\u0631\u062d 2.14 \u0641\u06cc\u0635\u062f \u062a\u062c\u0627\u0648\u0632\u06a9\u0648\u0631\u0648\u0646\u0627 \u0648\u0627\u0626\u0631\u0633 \u06a9\u06d2 \u067e\u06be\u06cc\u0644\u0627\u0624 \u06a9\u0648 \u0631\u0648\u06a9\u0646\u06d2 \u0627\u0648\u0631 \u0627\u0633 \u0633\u06d2 \u062d\u0641\u0627\u0638\u062a \u06a9\u06d2 \u0644\u06cc\u06d2 \u062a\u0645\u0627\u0645 \u0635\u0648\u0628\u0648\u06ba \u0645\u06cc\u06ba \u062a\u0631\u062c\u06cc\u062d\u06cc \u0628\u0646\u06cc\u0627\u062f\u0648\u06ba \u067e\u0631 \u0628\u0648\u0633\u0679\u0631 \u0634\u0627\u0679\u0633 \u0644\u06af\u0627\u0626\u06d2 \u062c\u0627\u0626\u06cc\u06ba\u060c \u0648\u0632\u06cc\u0631 \u0635\u062d\u062a

\u06a9\u06d2-\u0627\u0644\u06cc\u06a9\u0679\u0631\u06a9 \u06a9\u06cc \u06a9\u0631\u0627\u0686\u06cc \u06a9\u06d2 \u0635\u0627\u0631\u0641\u06cc\u0646 \u06a9\u06cc\u0644\u0626\u06d2 \u0628\u062c\u0644\u06cc \u0641\u06cc \u06cc\u0648\u0646\u0679 11\u0631\u0648\u067e\u06d2 34 \u067e\u06cc\u0633\u06d2 \u0645\u06c1\u0646\u06af\u06cc \u06a9\u0631\u0646\u06d2 \u06a9\u06cc \u062f\u0631\u062e\u0648\u0627\u0633\u062a\u06a9\u06d2-\u0627\u0644\u06cc\u06a9\u0679\u0631\u06a9 \u0646\u06d2 \u0645\u0626\u06cc 2022 \u06a9\u06cc \u0645\u0627\u06c1\u0627\u0646\u06c1 \u0641\u06cc\u0648\u0644 \u0627\u06cc\u0688\u062c\u0633\u0679\u0645\u0646\u0679 \u06a9\u06cc \u0645\u062f \u0628\u062c\u0644\u06cc \u0641\u06cc \u06cc\u0648\u0646\u0679 \u0645\u06c1\u0646\u06af\u06cc \u06a9\u0631\u0646\u06d2 \u06a9\u06cc \u062f\u0631\u062e\u0648\u0627\u0633\u062a \u0646\u06cc\u067e\u0631\u0627 \u06a9\u0648 \u0627\u0631\u0633\u0627\u0644 \u06a9\u0631\u062f\u06cc\u06d4 kyunn bhaiii voo suteelay hainn K-Elec is MAFIAAA... need better regulator to hold them acountable... crooks!! Ye zulm hoga ایم کیو ایم ، کہاں ہو؟

’\u0686\u06cc\u0646 \u06a9\u06cc \u0627\u0639\u0627\u0646\u062a \u06a9\u06d2 \u0628\u063a\u06cc\u0631 \u06a9\u06d2 \u0633\u06cc \u0622\u0631 \u06a9\u06d2 \u0627\u0646\u0641\u0631\u0627 \u0627\u0633\u0679\u0631\u06a9\u0686\u0631 \u0645\u06cc\u06ba \u062a\u0648\u0633\u06cc\u0639 \u0645\u0645\u06a9\u0646 \u0646\u06c1\u06cc\u06ba‘\u06c1\u0645\u0627\u0631\u06d2 \u062d\u0627\u0644\u0627\u062a \u06a9\u0648 \u062f\u06cc\u06a9\u06be\u062a\u06d2 \u06c1\u0648\u0626\u06d2\u060c \u0645\u06cc\u06ba \u062a\u0648\u0633\u06cc\u0639 \u0646\u06c1\u06cc\u06ba \u062f\u06cc\u06a9\u06be \u0631\u06c1\u0627\u060c \u0627\u0633 \u0648\u0642\u062a \u062e\u0648\u062f \u06a9\u0648 \u0631\u06cc\u0644\u0648\u06d2 \u06a9\u0648 \u0686\u0644\u0627\u0646\u0627 \u0645\u0634\u06a9\u0644 \u06c1\u0648 \u0631\u06c1\u0627 \u06c1\u06d2\u060c \u0648\u0632\u06cc\u0631 \u0631\u06cc\u0644\u0648\u06d2