\u0622\u0626\u06cc \u0627\u06cc\u0645 \u0627\u06cc\u0641 \u0627\u0648\u0631 \u067e\u0627\u06a9\u0633\u062a\u0627\u0646 \u06a9\u06d2 \u062f\u0631\u0645\u06cc\u0627\u0646 \u0645\u0630\u0627\u06a9\u0631\u0627\u062a \u06a9\u0644 \u0633\u06d2 \u0634\u0631\u0648\u0639 \u06c1\u0648\u0646\u06d2 \u06a9\u0627 \u0627\u0645\u06a9\u0627\u0646

27/06/2022 11:48:00 AM

پاکستان نے قرض پروگرام 6 سے بڑھا کر 8 ارب ڈالر کرنے کی درخواست کی ہے. تفصیلات جانیئے:

پاکستان نے قرض پروگرام 6 سے بڑھا کر 8 ارب ڈالر کرنے کی درخواست کی ہے. تفصیلات جانیئے:

\u0622\u0626\u06cc \u0627\u06cc\u0645 \u0627\u06cc\u0641 \u0627\u0648\u0631 \u067e\u0627\u06a9\u0633\u062a\u0627\u0646 \u06a9\u06d2 \u062f\u0631\u0645\u06cc\u0627\u0646 \u0645\u0630\u0627\u06a9\u0631\u0627\u062a \u06a9\u0627\u0645\u06cc\u0627\u0628\u06cc \u06a9\u06cc \u0635\u0648\u0631\u062a \u0645\u06cc\u06ba \u0642\u0631\u0636 \u0645\u0639\u0627\u06c1\u062f\u06d2 \u067e\u0631 \u062f\u0633\u062a\u062e\u0637 \u06c1\u0648\u06ba \u06af\u06d2\u060c \u0648\u0632\u06cc\u0631\u062e\u0632\u0627\u0646\u06c1 \u0627\u0648\u0631 \u06af\u0648\u0631\u0646\u0631\u0627\u0633\u0679\u06cc\u0679 \u0628\u06cc\u0646\u06a9 \u0645\u0630\u0627\u06a9\u0631\u0627\u062a \u0645\u0639\u0627\u06c1\u062f\u06d2 \u067e\u0631 \u062f\u0633\u062a\u062e\u0637 \u06a9\u0631\u06cc\u06ba \u06af\u06d2\u06d4

Comments آئی ایم ایف اور پاکستان کے درمیان معاہدہ بجٹ منظوری سے مشروط ہے۔ فوٹو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ فائل اسلام آباد: عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) اور پاکستان کے درمیان مذاکرات کل سے شروع ہونے کا امکان ہے۔ آئی ایم ایف اور پاکستان کے درمیان مذاکرات کامیابی کی صورت میں قرض معاہدے پر دستخط ہوں گے، وزیرخزانہ اور گورنراسٹیٹ بینک مذاکرات معاہدے پر دستخط کریں گے۔ ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف اور پاکستان کے درمیان معاہدہ بجٹ منظوری سے مشروط ہے، پاکستان نے قرض پروگرام 6 سے بڑھا کر 8 ارب ڈالر کرنے کی درخواست کی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان نےآئی ایم ایف سےقرض کی مدت میں ایک سال کی توسیع بھی مانگی ہے جبکہ پاکستان نےعالمی مالیاتی ادارے کی شرائط پرعملدرآمد بھی کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق آئندہ مالی سال بجٹ کا حجم تقریباً 10 ہزارارب روپے ہوجائےگا، پیٹرولیم مصنوعات پر 11فیصد سیلزٹیکس یکم جولائی سےوصول کیا جائےگا، پیٹرولیم مصنوعات پر50روپےفی لیٹرلیوی لگانےکافیصلہ کیا گیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق پیٹرولیم مصنوعات پرہرماہ 5روپے فی لیٹرلیوی لگانے پراتفاق ہوا ہے جبکہ ٹیکس وصولیوں کا ہدف 7005 سے بڑھاکر7450ارب روپےکرنے پراتفاق ہوا ہے۔.0 ایم کیو ایم پاکستان کے وفد نے پی اے ایف فیصل بیس میں وزیراعظم سے ملاقات کی—فوٹو:مسلم لیگ (ن) ٹوئٹر وزیر اعظم شہباز شریف نے متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم پاکستان) کی اس تجویز سے اتفاق کیا جس میں دونوں پارٹیوں کے ارکان پر مشتمل کمیٹی کی درخواست کی گئی تھی جو سزائے اور اقتدار میں آنے سے قبل فریقین کے درمیان طے پانے والی شرائط پر پیشرفت کا جائزہ لے گی۔ ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ کمیٹی کے قیام کے بارے میں دی گئی تجویز پر اصولی طور پر اتفاق کیا گیا اور توقع ہے کہ آئندہ ہفتے کے شروع میں دونوں پارٹیوں کے 3،3 ارکان پر مشتمل کمیٹی کا باضابطہ طور پر نوٹی فکیشن جاری کیا جائے گا۔ گفتگو کےدوران ایم کیو ایم پاکستان نے گورنر سندھ کی تقرری کا معاملہ بھی اٹھایا۔ واضح رہے کہ گورنر سندھ کی تقرری اب تک نہیں کی جاسکی، یہ دفتر 11 اپریل سے خالی ہے۔ متحدہ قومی موومنٹ نے وزیراعظم سے اپنے نامزد گورنر کی تقرری کے عمل کو تیز کرنا کا بھی کہا۔ وزیر اعظم کی جانب سے گورنر سندھ کی تقرری دونوں پارٹیوں کے درمیان اعتماد سازی کے بڑے اقدام کے طور پر کام کر سکتا ہے۔ یہ معاہدہ پی اے ایف فیصل بیس پر ہونے والی ملاقات میں ہوا جہاں ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماؤں ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی، امین الحق، وسیم اختر، عامر خان اور کنور نوید جمیل نے وزیراعظم شہباز سے ملاقات کی اور وفاق کے اربن سندھ ڈویلپمنٹ پروگرام سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا۔ ملاقات کے دوران حکومت اور ایم کیو ایم کے درمیان مارچ 2022 کے اجلاس میں طے پانے والے معاہدے پر عمل در آمد سے متعلق بھی بات چیت کی گئی جس پر دونوں پارٹیوں نے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو ہٹانے کے لیے اتحادی بننے کا فیصلہ کیا تھا۔ وزیر اعلیٰ سندھ کا وزیر اعظم سے صوبے کے مسائل پر تبادلہ خیال دوسری جانب، وزیر اعظم شہباز شریف نے نواب شاہ میں زرداری ہاؤس کے دورے کے دوران پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق صدر آصف علی زرداری کی رضاعی والدہ کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات میں وفاقی حکومت کو درپیش چیلنجز اور سیاسی و معاشی امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کی سابقہ حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے پاکستان کو بے شمار چیلنجز کا سامنا ہے تاہم معاشی اور توانائی کے بحرانوں کے حل کے لیے کوششیں جاری ہیں۔ شہباز شریف نے کہا کہ وفاقی حکومت غریب اور کم مراعات یافتہ طبقے کو ریلیف فراہم کرنے اور ملکی معیشت کو مضبوط بنانے پر توجہ دے رہی ہے۔ ملاقات کے دوران سابق صدر آصف زرداری نے وزیراعظم کو قوم کی فلاح و بہبود کے لیے وفاقی حکومت کے تمام پہلوؤں کے ساتھ اپنے تعاون اور حمایت کا یقین دلایا۔ اس موقع پر پیپلز پارٹی کے چیئرمین اور وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری ، سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی، وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق سمیت دیگر رہنما بھی موجود تھے۔ زرداری ہاؤس کے ذرائع نے بتایا کہ وزیر اعلیٰ سندھ نے وزیر اعظم شہبازشریف سے پانی کی قلت اور بجلی کی لوڈشیڈنگ سمیت صوبہ سندھ سے متعلق مسائل پر بھی تبادلہ خیال کیا، وزیراعظم نے وزیراعلیٰ سندھ کو صوبے کے مسائل کے حل میں مرکزی حکومت کے تعاون کا یقین دلایا۔.Jun 26, 2022 آئی ایم ایف نے پاکستان کو معاہدے سے پہلے دستاویزات فراہم کرنے کی یقین دہانی کرادی ہے۔ عالمی مالیاتی فنڈ کی جانب سے قرض پروگرام بحالی کے حوالے سے حکومت کی کوششیں جاری ہیں، اور اب آئی ایم ایف نے معاہدے سے پہلےدستاویزات فراہم کرنےکی یقین دہانی کرا دی ہے۔ حکومتی ذرائع نے بتایا ہے کہ آئی ایم ایف نے معاہدے سے پہلے پاکستان کو دستاویزات فراہم کرنے کی یقین دہانی کرادی ہے، اور میمورنڈم آف اکنامک اینڈ فنانشل پالیسیز کا مسودہ پیر کو پاکستان کے حوالے کردیا جائے گا۔ حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان نے قرض پروگرام کا حجم بڑھا کر 8 ارب ڈالرکرنے کی درخواست کررکھی ہے، پاکستان 6 ارب ڈالر کے قرض میں سے 3 ارب ڈالر پہلے ہی حاصل کر چکا ہے۔ ذرائع کے مطابق پاکستان نے نئے معاہدوں میں قرض پروگرام کی مدت میں بھی ایک سال کی توسیع کا مطالبہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ وزیراعظم شہبازشریف اپنے بیانات میں متعدد بار کہہ چکے ہیں کہ آئی ایم ایف سے قرض پروگرام کی بحالی معاہدے دیکھ کر کی جائے گی۔.0 وزیر خزانہ نے کہا کہ ہم نے جو سپر ٹیکس لگایا ہے وہ کپمنی پر لاگو ہوگا کسی پراڈکٹ پر نہیں —فائل فوٹو: ڈان نیوز وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسمٰعیل نے کہا ہے کہ عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) سے کچھ معاملات پر باتیں چل رہی ہیں، جو کل تک مکمل ہو جائیں گی اور اگلے ہفتے تک معاہدہ ہو جائے گا۔ جیو نیوز کے پروگرام جرگہ میں سلیم صافی کو انٹرویو دیتے ہوئے وزیر خزانہ نے کہا کہ ہم نے جو سپر ٹیکس لگایا ہے وہ کسی پراڈکٹ پر نہیں کمپنی پر لاگو ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم نے مخصوص فیکٹریوں سے 10 فیصد ٹیکس مانگا ہے، جس میں وزیر اعظم کے بیٹے کی بھی ایک فیکٹری شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ جتنا ٹیکس میں ایک سال میں ادا کرتا ہوں، اتنا عمران خان نے پوری زندگی میں بھی ادا نہیں کیا ہوگا۔ مزید پڑھیں: تنخواہ دار طبقے کو دیا گیا ریلیف ختم، ٹیکس کی حد 12 لاکھ سے واپس 6 لاکھ روپے مقرر وزیر خزانہ نے کہا کہ ہم نے سناروں سمیت دیگر متعدد شعبوں پر ٹیکس عائد کیا ہے، اب چونکہ آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے کے بعد بجٹ پیش کیا گیا ہے تو آئندہ چند ماہ میں بلڈرز کو بھی ٹیکس کے دائرے میں لائیں گے، ان سے ہماری بات چل رہی ہے۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ مسلم لیگ ن کے لیے مشہور تھا کہ وہ سرمایہ کار کو لاتی ہے تو اس پر انہوں نے جواب دیا کہ مسلم لیگ نے ہمیشہ سرمایہ کاری کو ترجیح دی، سرمایہ دار کو نہیں، پاکستان میں جو بھی مسلم لیگ (ن) کی حکومت میں منصوبے بنے ہیں ان سے سرمایہ دار کو فائدہ نہیں ہوا۔ اس سوال کے جواب میں کہ پیٹرول مہنگا ہوگیا اور آپ نے ٹیکس لگا دیے تو اس کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ ہماری ذمہ داری ہے، مغرب کے اندر معیشت کم ہو رہی ہے، کوشش ہے کہ سب فیکٹریوں کو مناسب قیمت پر بجلی اور گیس فراہم کریں، اگلے چند دنوں میں مناسب قیمت میں چوبیس گھنٹے بجلی اور گیس دیں گے۔ یہ بھی پڑھیں: وزیر خزانہ نے آج پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی رپورٹس کو مسترد کردیا جب ان سے پوچھا گیا کہ سپر ٹیکس لگانے کے بعد اسٹاک مارکیٹ نیچے آگئی تو اس پر انہوں نے کہا کہ اسٹاک مارکیٹ ایک دن نیچے گئی لیکن جیسے لوگ سمجھیں گے تو بہتر ہو جائے گا، اسٹاک مارکیٹ میں بہتری آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ میں بینک کا حصہ دار ہوں، میں نے خود پر اور شہباز شریف پر بھی ٹیکس لگایا ہے، کیا اس ملک میں اتنا امیر و غریب میں فرق ہوگا کہ لوگوں کو بنیادی سہولیات میسر نہیں آئیں گی۔ قبائلی اضلاع پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ترقیاتی بجٹ سے ہم نے پیسے نہیں کاٹے،جتنا فاٹا پر خرچ ہوتا ہے وہ وفاق ادا کرتا ہے، تو کیا یہ سب کی ذمہ داری نہیں کہ اس میں حصہ دیں۔ انہوں نے کہا کہ اقتصادی کمیٹی کا اجلاس بلائیں گے، اس میں بات کریں گے لیکن ہر چیز کا ازالہ نہیں ہو سکتا، ستر سالوں سے کے پی کے لوگ محروم رہے ہیں، تمام صوبوں اور حکومتوں کو بیٹھ کر کام کرنا ہوگا تاکہ بلوچستان، فاٹا کے علاقوں میں محرومی نہ ہو۔.

مزید پڑھ:
Aaj TV Urdu »
Loading news...
Failed to load news.

\u06a9\u0631\u0627\u0686\u06cc: \u0634\u06c1\u0628\u0627\u0632 \u0634\u0631\u06cc\u0641 \u0627\u0648\u0631 \u0627\u06cc\u0645 \u06a9\u06cc\u0648 \u0627\u06cc\u0645 \u067e\u0627\u06a9\u0633\u062a\u0627\u0646 '\u0688\u06cc\u0644' \u067e\u0631 \u0639\u0645\u0644\u062f\u0631\u0622\u0645\u062f \u06a9\u06d2 \u0644\u06cc\u06d2 \u06a9\u0645\u06cc\u0679\u06cc \u06a9\u06d2 \u0642\u06cc\u0627\u0645 \u067e\u0631 \u0645\u062a\u0641\u0642\u0648\u0632\u06cc\u0631 \u0627\u0639\u0638\u0645 \u0646\u06d2 \u0646\u0648\u0627\u0628 \u0634\u0627\u06c1 \u0645\u06cc\u06ba \u0632\u0631\u062f\u0627\u0631\u06cc \u06c1\u0627\u0624\u0633 \u06a9\u06d2 \u062f\u0648\u0631\u06d2 \u06a9\u06d2 \u062f\u0648\u0631\u0627\u0646 \u0622\u0635\u0641 \u0632\u0631\u062f\u0627\u0631\u06cc \u0633\u06d2 \u0627\u0646 \u06a9\u06cc \u0631\u0636\u0627\u0639\u06cc \u0648\u0627\u0644\u062f\u06c1 \u06a9\u06d2 \u0627\u0646\u062a\u0642\u0627\u0644 \u067e\u0631 \u062a\u0639\u0632\u06cc\u062a \u06a9\u0627 \u0627\u0638\u06c1\u0627\u0631 \u06a9\u06cc\u0627\u06d4

\u0622\u0626\u06cc \u0627\u06cc\u0645 \u0627\u06cc\u0641 \u06a9\u06cc \u0645\u0639\u0627\u06c1\u062f\u06d2 \u0633\u06d2 \u067e\u06c1\u0644\u06d2 \u067e\u0627\u06a9\u0633\u062a\u0627\u0646 \u06a9\u0648 \u062f\u0633\u062a\u0627\u0648\u06cc\u0632\u0627\u062a \u062f\u06cc\u0646\u06d2 \u06a9\u06cc \u06cc\u0642\u06cc\u0646 \u062f\u06c1\u0627\u0646\u06cc\u0645\u0633\u0648\u062f\u06c1 \u067e\u06cc\u0631 \u06a9\u0648 \u062f\u06cc\u0627 \u062c\u0627\u0626\u06d2 \u06af\u0627\u060c \u062d\u06a9\u0648\u0645\u062a\u06cc \u0630\u0631\u0627\u0626\u0639 shakeel_ahmed9 YEH BOORHA ZEHNI MAREEZ HA shakeel_ahmed9 حیرت ھے سات لاکھ کی پاکستانی فوج میں ایک بھی غیرت مند راشد منہاس نہیں بچا جو غدار باجوے اور اسکے ساتھ دوسرے غداروں کو جہنم واصل کر کے پاکستانی قوم کو ان سے نجات دلا سکے۔ ان غداروں سے جان چھڑوا لو پھر سرحدوں کی حفاظت کرنا۔ورنہ یہ غدار شہیدوں کا لہو بیچ کر کھاتے رہیں گے ۔

\u0622\u0626\u06cc \u0627\u06cc\u0645 \u0627\u06cc\u0641 \u06a9\u06d2 \u0633\u0627\u062a\u06be \u0627\u06af\u0644\u06d2 \u06c1\u0641\u062a\u06d2 \u062a\u06a9 \u0645\u0639\u0627\u06c1\u062f\u06c1 \u06c1\u0648 \u062c\u0627\u0626\u06d2 \u06af\u0627\u060c \u0645\u0641\u062a\u0627\u062d \u0627\u0633\u0645\u0670\u0639\u06cc\u0644\u062c\u062a\u0646\u0627 \u0679\u06cc\u06a9\u0633 \u0645\u06cc\u06ba \u0627\u06cc\u06a9 \u0633\u0627\u0644 \u0645\u06cc\u06ba \u0627\u062f\u0627 \u06a9\u0631\u062a\u0627 \u06c1\u0648\u06ba \u0627\u062a\u0646\u0627 \u0639\u0645\u0631\u0627\u0646 \u062e\u0627\u0646 \u0646\u06d2 \u067e\u0648\u0631\u06cc \u0632\u0646\u062f\u06af\u06cc \u0645\u06cc\u06ba \u0628\u06be\u06cc \u0627\u062f\u0627 \u0646\u06c1\u06cc\u06ba \u06a9\u06cc\u0627 \u06c1\u0648\u06af\u0627\u060c \u0648\u0632\u06cc\u0631 \u062e\u0632\u0627\u0646\u06c1 ڈالر کو بھی کنٹرول کریں مفتی اسماعیل صاحب

\u0648\u0632\u06cc\u0631\u0627\u0639\u0638\u0645 \u0634\u06c1\u0628\u0627\u0632 \u0634\u0631\u06cc\u0641 \u06a9\u0627 \u062f\u0648\u0631\u06c1 \u06a9\u0631\u0627\u0686\u06cc\u060c \u0627\u06cc\u0645 \u06a9\u06cc\u0648\u0627\u06cc\u0645 \u06a9\u06d2 \u0648\u0641\u062f \u0633\u06d2 \u0645\u0644\u0627\u0642\u0627\u062a\u0648\u0641\u062f \u0646\u06d2 \u067e\u06cc\u067e\u0644\u0632 \u067e\u0627\u0631\u0679\u06cc \u0633\u06d2 \u06c1\u0648\u0646\u06d2 \u0648\u0627\u0644\u06d2 \u0645\u0639\u0627\u06c1\u062f\u06d2 \u062c\u0633 \u06a9\u06d2 \u0636\u0627\u0645\u0646 \u0648\u0632\u06cc\u0631 \u0627\u0639\u0638\u0645 \u062a\u06be\u06d2 \u067e\u0631 \u062a\u0641\u0635\u06cc\u0644\u06cc \u0628\u0627\u062a \u0686\u06cc\u062a \u06a9\u06cc

\u0627\u06cc\u0645 \u06a9\u06cc\u0648 \u0627\u06cc\u0645 \u06a9\u06d2 \u0633\u0628 \u062f\u06be\u0691\u0648\u06ba \u06a9\u0648 \u062a\u0642\u0633\u06cc\u0645 \u062e\u062a\u0645 \u06a9\u0631 \u06a9\u06d2 \u0627\u06cc\u06a9 \u06c1\u0648\u0646\u0627 \u0686\u0627\u06c1\u06cc\u06d2\u060c \u0641\u0627\u0631\u0648\u0642 \u0633\u062a\u0627\u0631\u0648\u0633\u06cc\u0639 \u062a\u0631 \u0645\u0641\u0627\u062f \u06a9\u06d2 \u0644\u06cc\u06d2 \u0633\u0628 \u06a9\u0648 \u0645\u0644 \u0628\u06cc\u0679\u06be\u0646\u0627 \u067e\u0691\u06d2 \u06af\u0627\u060c \u0641\u0627\u0631\u0648\u0642 \u0633\u062a\u0627\u0631 اچھی بات کہی ہے فاروق ستار بھائی نے 🙂 ٹی ایل پی نے سارے کنجر ایک جگہ اکھٹے کر دیے 🤣🤣 پتا تھاایک دن یہی ھونا ھے

\u0648\u0641\u0627\u0642\u06cc \u0648\u0632\u06cc\u0631 \u0627\u0648\u0631 \u0627\u0653\u0626\u06cc \u0679\u06cc \u0635\u0646\u0639\u062a \u06a9\u0627 \u0628\u062c\u0679 \u0627\u0642\u062f\u0627\u0645\u0627\u062a \u067e\u0631 \u0627\u0638\u06c1\u0627\u0631 \u0645\u0627\u06cc\u0648\u0633\u06cc\u0679\u06cc\u0644\u06cc \u06a9\u0627\u0645 \u0633\u06cc\u06a9\u0679\u0631 \u0622\u0626\u06cc \u0679\u06cc \u0633\u06cc\u06a9\u0679\u0631 \u06a9\u06d2 \u0644\u06cc\u06d2 \u0631\u06cc\u0691\u06be \u06a9\u06cc \u06c1\u0688\u06cc \u06c1\u06d2\u060c \u0627\u0633 \u0634\u0639\u0628\u06d2 \u06a9\u0648 \u0641\u0631\u0648\u063a \u062f\u06cc\u0646\u06d2 \u06a9\u06d2 \u0644\u06cc\u06d2 \u0648\u0632\u0627\u0631\u062a \u0622\u0626\u06cc \u0679\u06cc \u06a9\u06cc \u062a\u062c\u0627\u0648\u06cc\u0632 \u067e\u0631 \u063a\u0648\u0631 \u06a9\u0631\u0646\u0627 \u0686\u0627\u06c1\u06cc\u06d2\u060c \u0627\u0645\u06cc\u0646 \u0627\u0644\u062d\u0642