‏ آئل مارکیٹنگ کمپنیوں، ڈیلرز کا مارجن بڑھانے کی منظوری

افغانستان کیلیے 1لاکھ75ہزار میٹرک ٹن گندم کی خریداری کی...;

Samaatv, Ecc

02/12/2021 1:13:00 PM

وفاقی وزیر برائے اقتصادی امور عمر ایوب کی زیر صدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس بدھ کو ہوا، جس میں آئل مارکیٹنگ کمپنیوں اور ڈیلرز مارجن کا بڑھانے کی منظوری دے دی گئی SamaaTV

افغانستان کیلیے 1لاکھ75ہزار میٹرک ٹن گندم کی خریداری کی...;

SAMAA |- Posted: Dec 2, 2021 | Last Updated: 26 mins agoSAMAA |Posted: Dec 2, 2021 | Last Updated: 26 mins agoفوٹو: اے ایف پیوفاقی وزیر برائے اقتصادی امور عمر ایوب کی زیر صدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس بدھ کو ہوا، جس میں آئل مارکیٹنگ کمپنیوں اور ڈیلرز مارجن کا بڑھانے کی منظوری دے دی گئی۔

جسٹس فائزعیسیٰ کی اہلیہ کا فروغ نسیم اور شہزاد اکبرکیخلاف کارروائی کیلئے نیب کو خط

مارجن بڑھانے کا اطلاق پیٹرولیم مصنوعات کی آئندہ نظرثانی سے ہوگا۔رپورٹس کے مطابق پیٹرول اور ہائی اسپیڈ ڈیزل پر آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کے مارجن میں 71پیسے فی لیٹر جبکہ ڈیلرز کے پیٹرول کے مارجن میں 99پیسے فی لیٹر اور ہائی اسپیڈ ڈیزل کے مارجن میں 83پیسے فی لیٹر اضافے کی منظوری دی ہے جس کے بعد پیٹرول پر ڈیلرز مارجن 3.91 سے بڑھا کر 4.90 روپے ہوگیا ہے۔

ڈیزل پر ڈیلرز مارجن 3.30 سے بڑھا کر 4.13 روپے فی لیٹر کر دیا گیا ہے جبکہ آئل مارکیٹنگ کمپنیوں (او ایم سیز) کا مارجن دو روپے 97 پیسے فی لیٹر سے بڑھ کر 3 روپے 68 پیسے فی لیٹر ہوگیا ہے۔اجلاس میں وزیر اعظم ریلیف پیکیج کے تحت پانچ اشیاء پر سبسڈی 31 دسمبر تک جاری رکھنے پر فیصلہ موخر کیا گیا جن میں آٹا، گھی، چینی، چاول اور دالیں شامل ہیں۔ وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ 3سال میں 50ارب روپے ملنے پر بھی یوٹیلٹی اسٹورز کارپوریشن مالی بحران کاشکار ہے، حکومتی فنڈز کے باوجود یوٹیلٹی اسٹورز کارپوریشن کے مالی معاملات میں بہتری نہ آسکی۔ headtopics.com

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے احساس ایمرجنسی کیش پروگرام میں مزید مستحقین کو شامل کرنے کے دوسرے مرحلے کی منظوری دیدی جس کے تحت نئے مستحقین کو بھی ایک بار 12 ہزار روپے کی فراہمی یقینی بنائی جائے گی۔اسکے علاوہ افغانستان کے لیے ایک لاکھ 75 ہزار روپے میٹرک ٹن گندم کی خریداری کی سمری منظوری دے دی ہے جس کے تحت ‏ورلڈ فوڈ پروگرام ایک لاکھ 75 ہزار میٹرک ٹن گندم پاسکو سے خریدے گا، یہ گندم افغانستان اور پاکستان میں خوراک کے مسائل سے دو چار افراد کے لیے ہوگی۔

وزیراعظم کا شہزاد اکبرکی کارکردگی پر عدم اعتماد کا اظہار

مزید پڑھ: SAMAA TV »

Mehakma Zaraat k darjano mulazmeen ka Lahore mei ehtjaj

محکمہ زراعت کے درجنوں ملازمین کا لاہور میں احتجاج#Protest #Agriculture

سوئی گیس کمپنی کا گیس کی قیمتیں ڈیڑھ سو فیصد بڑھانے کا مطالبہچیئرمین اوگرا کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف بعض اوقات گیس سبسڈی ختم کرنے کے لیے دباؤ ڈالتا ہے تاہم اوگرا صارفین کا مفاد سامنے رکھ کر ان کے حق میں فیصلہ کرے گی۔

متحدہ اپوزیشن کا پارلیمانی قومی سلامتی کمیٹی کی ان کیمرہ بریفنگ کے بائیکاٹ کا فیصلہ

سعودی کفیل کی موت پر ملازمین کا قانونی اسٹیٹس تبدیل کرنے کا طریقہسعودی کفیل کی موت پر ملازمین کا قانونی اسٹیٹس تبدیل کرنے کا طریقہ arynewsurdu

وزیر اعظم کی احساس راشن پروگرام کیلئے رجسٹریشن کا عمل تیز کرنے کی ہدایتاسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے احساس راشن پروگرام کے تحت گروسری اسٹورز کی رجسٹریشن کے عمل کو تیز کرنے کی ہدایت کی ہے۔ Ahsaas ki aisi ki taisi J

اومیکرون کا خطرہ، این سی او سی کا کورونا ویکسینیشن سے متعلق سخت اقدامات کا فیصلہاسلام آباد : نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر اومیکرون کے خطرے کے پیش نظر کورونا ویکسینیشن سے متعلق سخت اقدامات کا فیصلہ کرلیا تبدیلی حکومت سے پہلے جن کے پاس گاڈیاں تھی وہ اب سائیکل پر آگئے ۔ اور جن کے پاس سائیکل تھی وہ کھوتی پر آگئے اور جن کے پاس پہلے کھوتی تھی اب وہ بچارے کھوتی سے بھی محروم ہو گئے ہیں جن یوتھیوں کے اندر ابھی بھی تبدیلی والا کیڑا زندہ ہے وہ کہتے ہیں رل تے گئے ہاں پر چس بڑی آئی

چین کے مقابلے میں یورپ کا 300 ارب یورو کا عالمی منصوبہ - BBC News اردویورپی یونین 'گلوبل گیٹ وے' کے نام سے سرمایہ کاری کا ایک عالمی منصوبہ شروع کرنے کا اعلان کرنے والا ہے جس کے بارے میں خیال کیا جا رہا ہے کہ یہ چین کے 'بیلٹ اینڈ روڈ' منصوبے کا توڑ کرنے کی ایک کوشش ہے۔ چائنا جیسے ظالم سامراج کو روکنا ضروری ہے ہر کوئی چین سے مقابلہ کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ جہاں چین نے سب کو ہاتھ ملانے کی دعوت دی ہے اگر مقصد سمارٹ پریکیورمنٹ اور ڈسٹری بیوشن کے لیے انفراسٹرکچر بنانا ہے تو پھر مقابلہ کیوں؟ یورپ اور امریکہ اپنی برتری برقرار رکھنے کے لیے لڑ رہے ہیں اور کچھ نہیں۔ China have threatened the hegemony of all. And now all are ready to bring out their tons of money. Hats of to China