Dunyacolumns, Dunyaupdates

Dunyacolumns, Dunyaupdates

Nazeer Naji : نذیر ناجی :-روس میں اقتدار کا کھیل

پڑھیے نذیر ناجی کا مکمل کالم #DunyaColumns #DunyaUpdates

20.1.2020

پڑھیے نذیر ناجی کا مکمل کالم DunyaColumns DunyaUpdates

Read Roos me iqtedaar ka khail Column by Nazeer Naji that is originally published on, Monday 20 2020 in Roznama Dunya Newspaper

20-01-2020 روس میں اقتدار کا کھیل آمریت میں قیادت کی منتقلی کتنی خطرناک ہوسکتی ہے؟خاص طور پر ذاتی نوعیت کا نظام‘جس میںاقتدار ایک ایسی طاقتور سیاسی جماعت کو سونپا جائے‘ جہاںادارہ جاتی میکانزم کی کمی پائی جاتی ہو ‘اس کاہر ذی شعور بخوبی اندازہ لگا سکتا ہے ۔ روس میں اقتدار کی منتقلی کی خبریں عالمی میڈیا کی زینت بنے ہوئی ہیں۔ 15 جنوری کو روسی صدر نے اپنی قومی سالانہ ریاست کی تقریر میں‘ روسی حکومت کے اندر اقتدار کو دوبارہ تقسیم کی بات کر کے آئینی تبدیلیوں کی تجویز پیش کرتے ہوئے عوام کو حیرت میں ڈال دیا۔ یوں2024 ء میں روسی صدر کی مدت پوری ہوگی۔ایسا نہیں کہ روس کے قانون میں ترمیم کی جائے گی ۔ توقع کی جارہی تھی کہ پیوٹن 2024 ء سے آگے اقتدار میں اپنا وقت بڑھانے کا کوئی راستہ نکالیں گے‘ جیسے ماضی میں وہ کرتے آئے ہیں ۔ پیوٹن کی جانب سے یہ اعلان ‘ اگلے کئی برسوں کے دوران بننے والے ممکنہ دباؤ کو کم کرنے کے لیے کیا گیا‘جو ممکنہ طور پر مظاہروں کی صورت میں ہو سکتا تھا‘ کیونکہ روس میں پہلے ہی اشرافیہ کی لڑائی شدت اختیار کررہی تھی اورحالیہ برسوں میں ترقی پذیر روسی معیشت سے عوام کی عدم اطمینانی صاف جھلک رہی ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ روس کے جمود کا معاشی نقطہ نظر خراب ہوسکتا ہے ۔عین ممکن ہے کہ پیوٹن آئینی طریقے سے وزیر اعظم کے کردار میں واپس آ جائیں‘ جیسے کہ وہ 1999ء-2000ء اور 2008ء - 2012ء میں اقتدار میں آئے اورانہوں نے اپنے منصب کے اختیارات کو مستحکم کیا۔ یہ اقدام ترکی کے صدر رجب طیب اردوان کی طرف سے اقتدار کو برقرار رکھنے کی کوششوں کے مترادف قرار دیا جا سکتا ہے‘ جنہوں نے ایک مستحکم صدارتی نظام تشکیل دینے‘ وزیر اعظم کے عہدے سے سبکدوش ہونے اور پھر اپنے آپ کو 2014 ء میں صدر منتخب کرانے کے لیے قومی ریفرنڈم کا مطالبہ کیا ۔عالمی مبصرین کا کہنا ہے کہ حالیہ دور میں پیوٹن کے لیے یہ آپشن خطرناک ثابت ہو سکتا ہے‘ کیونکہ ہمیشہ حالات وہ نہیں رہتے‘ جیسے آپ چاہتے ہیں۔ زیادہ امکان ہے کہ پیوٹن سٹیٹ کونسل کے سربراہ کی حیثیت سے ایک نئے کردار میں قدم رکھیں گے ‘ جیسا کہ صدر کے خصوصی مشیر کی حیثیت سے2000 ء کی دہائی میںاس کی بہترین مثال موجود ہے‘ لیکن اب کی بار کہانی کچھ اور ہی ہو۔ پیوٹن کی اس حیثیت میں تبدیلی کا خیال ‘جس میں وہ سینئر سیاستدان یا قوم کے والد کا کردار ادا کرسکتے ہیں‘ کچھ عرصے سے کریملن کے اذہان میں زیرگردش ہے۔ پیوٹن اپنا الگ نظریہ رکھتے ہیں۔ پیوٹن نے ریاستی کونسل کا درجہ بڑھانے پر زور دیا۔ یہ راستہ قزاقستان میں اقتدار کی تبدیلی (2018ء) سے ملتا جلتا ہے‘ وہاں صدر نورسلطان نذربائف نے قازقستان پر تقریباً 30سال حکومت کی‘ تاہم گزشتہ سال استعفیٰ دینے سے قبل‘ نذر بائف نے ملک کی سلامتی کونسل کے اختیارات کو مستحکم کیا اور پھر وہ تاحیات چیئرمین بنے‘ جس سے وہ تا مرگ قازقستان کے طاقت ور بروکر بن گئے۔قطع نظر اس کے پیوٹن جو بھی راستہ اختیار کریں‘ یقینی بات ہے کہ وہ مستقبل قریب میں روسی سیاست کی تار کھینچتے رہیں گے‘ لہٰذا نتیجہ روس کے لیے منفرد نہیںہوگا۔ آمرانہ حکومتوں کے لیے یہ عام نصاب ہے ‘جو روس میں نظر آرہا ہے۔ آمرانہ نظام ایک ہی رہنما کے ذریعہ کئی دہائیوں تک چلایا جاتا ہے۔ تمام ممالک میں قائدانہ منتقلی کا اسر نوع جائزہ لیں ‘تو حالات درست منظر کشی کرتے ہیں‘ آمرکھیل کے اصولوں کو وقت اور حالات کے مطابق ‘آئینی کمزوریوں کا فائدہ اٹھاتے ہوئے تبدیل کرتے ہیں اور اقتدار کو اپنی فطری موت تک برقرار رکھتے ہیں۔ مثال کے طور شام میںحفیظ الاسد نے تقریباً 30 تیس سال حکومت کی ‘یہاں تک کہ وہ اپنے عہدے پر رہتے ہوئے اس دنیا ئے فانی سے کوچ کر گئے۔ ترکمانی صدر سپرمورات نیازوف اور ازبکستان کے اسلام کریموف بالترتیب 16 اور 25 سال برسر اقتدار رہنے کے بعد انتقال کر گئے۔یہ الگ بات ہے کہ حالات کشیدہ ہوں اور مردہ پالیسیوں کی بدولت عوامی دباؤ سے اقتدار چھوڑنا پڑ جائے۔ 1946ء سے 2012 ء کے درمیان قدرتی وجوہ کی بناء پر مرنے والے تمام 79 آمر رہنماؤں کی تاریخ پڑھیں تو 92 فیصدآمر تا مرگ حکومت پر قابض رہے۔ ترکمانستان اور ازبکستان کی مثالیں موجود ہیں۔ دونوں حکومتوں پر نیازوف اور کریموف قابض رہے۔ جب ایک مطلق العنان اقتدار میں مر جاتا ہے‘ توسیاسی اشرافیہ ایک نئے جانشین کے گرد اتحاد کرتے ہیں۔ دوسری صورت میں ان کے اختیارات میں تقسیم کا خطرہ بھی پیدا ہو جاتا ہے‘اس کا مطلب ہے کہ اہم تبدیلی لانے کی بجائے پیوٹن کا اعلان ممکنہ طور پر جمود کو جاری رکھنے کا محض اشارہ تھا‘ کیونکہ ملک کے نئے وزیر اعظم کے طور پر میخائل مشستین کا اعلان اس دعوے کی حمایت بھی کرتا ہے۔ فیڈرل ٹیکس سروس کے سربراہ کی حیثیت سے‘ مشستین ایک نسبتاًغیر معروف شخصیت تھی ۔ سیاسی پنڈت جانتے ہیں کہ کوئی بھی شخص کسی بھی منتقلی میں اپنا کردار ادا نہیں کر سکتا‘ جب تک وہ اپنا خاص مقام نہ رکھتا ہو۔ قیادت کی منتقلی میںآمر رہنما کمزور عہدیداروں کو مقرر کرنے کی کوشش کرتے ہیں (بعض اوقات غلطی سے)‘ تاکہ وہ ان پر اپنی گرفت مضبوط رکھ سکیں اور اگر اشرافیہ اور طاقتور ارکان یہ محسوس کرتے ہیں کہ وہ اس طرح سمجھوتہ کرنے والے شخصیات پر قابو پالیں گے‘ تو وہ اس فیصلے پر عمل کرنے میں زیادہ دیر نہیں لگاتے ہیں۔ نذیر ناجی کے تازہ کالم کا الرٹ میسج حاصل کرنے کے لیےسبسکرائب کریں مزید پڑھ: Roznama DUNYA

میرا بھائی ایسا نہیں ہے، کامران عمر اکمل کی حمایت میں سامنے آگئے - ایکسپریس اردو



باکسر عامر خان کے ہاں بیٹے کی پیدائش - ایکسپریس اردو

ایران سے کورونا وائرس پاکستان پہنچنے کا خدشہ، بلوچستان میں طبی ایمرجنسی نافذ - ایکسپریس اردو



سیمی کو پاکستانی شہریت دینا اچھا مگر میری خدمات کو بھی مدنظر رکھا جائے، ڈینی موریسن - ایکسپریس اردو

مریم باہر گئی تو شہباز شریف کو اپنی سیاست پر سوچنا ہو گا، شیخ رشید - ایکسپریس اردو



’خواتین کے کھیلوں کا کام کاغذی کارروائی بنا ہوا ہے‘

پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کے ہاں ننھے مہمان کی آمد



عقیدت مند مسیحیوں کی برفیلے پانیوں میں ڈبکیاںپیغمبر عیسیٰ کے بپتسمے کی یاد میں کئی آرتھوڈاکس مسیحی برفیلے پانی میں کیے گئے سوراخوں میں مقدس تثلیث کی تعظیم کرنے کے لیے تین مرتبہ ڈبکی لگاتے ہیں۔ اللہ ہدایت دے ان کو. پاگل لوگ

پنجاب میں تبدیلی کا کھیل۔ مقابلہ سخت ہے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان میں نامزدگیوں کے سلسلے میں پارلیمانی کمیٹی کا باقاعدہ شیڈول اجلاس پیر کو شام چار بجے پارلیمنٹ ہائوس میں ہوگاالیکشن کمیشن آف پاکستان میں نامزدگیوں کے سلسلے میں پارلیمانی کمیٹی کا باقاعدہ شیڈول اجلاس پیر کو شام چار بجے پارلیمنٹ ہائوس میں ہوگا ElectionCommissionofPakistan Nominations ParliamentaryCommittee Meeting ParliamentHouse Monday

تیسرا ٹیسٹ: جنوبی افریقہ کے خلاف انگلینڈ کی پوزیشن مستحکم - Sport - Dawn News

افریقہ میں ٹڈی دل کا بڑا حملہ،روزانہ ڈھائی ہزار لوگوں کی خوراک ہڑپافریقہ میں ٹڈی دل کا بڑا حملہ،روزانہ ڈھائی ہزار لوگوں کی خوراک ہڑپ Africa Locusts Attacks Food

بریسٹ امپلانٹس کتنے محفوظ ہیں؟بریسٹ امپلانٹس کا شمار دنیا کی مقبول ترین کاسمیٹک سرجریز میں کیا جاتا ہے جس میں پستان کے سائز میں تبدیلی کے لیے سیلیکون امپلانٹس استعمال کیے جاتے ہیں۔ بریسٹ امپلامٹس ہر کسی کو کرانے چاہیے مرد حضرات کو بھی اس سے آپ پانی میں ڈوبنے سے بچ سکتے ہیں ویسے اس کے بارے میں سلمان خان ایکٹر انڈیا کے پتہ ہو گا بے چارے کے جسم میں ہر جگہ پر لگے ہوئے ہیں بہت درد کرتے ہیں اس کو 😢 bwp808 ایتھے آؤ صاحب حاجی صاحب کے لیے غور و فکر ہو رہی ہے WHAT A NEWS ON CHANNEL?



بھارت میں ’’پاکستان زندہ باد‘‘ کا نعرہ لگانے والی لڑکی کو جیل بھیج دیاگیا - ایکسپریس اردو

سابق اٹارنی جنرل انور منصور خان کی متنازع بیان پر سپریم کورٹ سے معافی - ایکسپریس اردو

کرکٹ کھیلنے اور ملک چلانے میں فرق ہوتا ہے، وزیراعظم - ایکسپریس اردو

طالبان کے ساتھ امن معاہدہ 29 فروری کو: مائیک پومپیو

اعظم خان: ناقدین کو صرف بلے بازی سے جواب دے سکتا ہوں

’پاکستان زندہ باد‘ کا نعرہ لگانے پر انڈین خاتون گرفتار

لاہور کو پانچ وکٹوں سے، پشاور کو 10 رنز سے شکست

تبصرہ لکھیں

Thank you for your comment.
Please try again later.

تازہ ترین خبریں

خبریں

20 جنوری 2020, پير خبریں

پچھلا خبر

rasool baksh raees : رسول بخش رئیس:-کاشت کار کہاں جائیں‘ کیا کریں؟

اگلا خبر

افریقہ کی امیر ترین خاتون نے اپنے ’ملک کو کیسے لوٹا‘
میرا بھائی ایسا نہیں ہے، کامران عمر اکمل کی حمایت میں سامنے آگئے - ایکسپریس اردو باکسر عامر خان کے ہاں بیٹے کی پیدائش - ایکسپریس اردو ایران سے کورونا وائرس پاکستان پہنچنے کا خدشہ، بلوچستان میں طبی ایمرجنسی نافذ - ایکسپریس اردو سیمی کو پاکستانی شہریت دینا اچھا مگر میری خدمات کو بھی مدنظر رکھا جائے، ڈینی موریسن - ایکسپریس اردو مریم باہر گئی تو شہباز شریف کو اپنی سیاست پر سوچنا ہو گا، شیخ رشید - ایکسپریس اردو ’خواتین کے کھیلوں کا کام کاغذی کارروائی بنا ہوا ہے‘ پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کے ہاں ننھے مہمان کی آمد حاملہ چینی نرس کی ویڈیو پر اشتعال انگیز ردعمل کیوں؟ ایف اے ٹی ایف کے اکثریتی رکن ممالک نے پاکستانی کوششوں کا اعتراف کیا: حماد اظہر بلاول نےنورا کشتی پارٹ ٹو پیش کر دی، مراد سعید اس سیارے پرایک سال صرف 18 دن پرمحیط - ایکسپریس اردو جنگلی حیات اب شہروں میں کیسے رہتی ہے
بھارت میں ’’پاکستان زندہ باد‘‘ کا نعرہ لگانے والی لڑکی کو جیل بھیج دیاگیا - ایکسپریس اردو سابق اٹارنی جنرل انور منصور خان کی متنازع بیان پر سپریم کورٹ سے معافی - ایکسپریس اردو کرکٹ کھیلنے اور ملک چلانے میں فرق ہوتا ہے، وزیراعظم - ایکسپریس اردو طالبان کے ساتھ امن معاہدہ 29 فروری کو: مائیک پومپیو اعظم خان: ناقدین کو صرف بلے بازی سے جواب دے سکتا ہوں ’پاکستان زندہ باد‘ کا نعرہ لگانے پر انڈین خاتون گرفتار لاہور کو پانچ وکٹوں سے، پشاور کو 10 رنز سے شکست قومیں تباہ ہوجاتی ہیں جب بڑے چور لندن چلے جائیں اورچھوٹے پکڑے جائیں، وزیراعظم - ایکسپریس اردو عمران خان کی طرح نوازشریف بھی سلیکٹڈ تھے، بلاول بھٹو زرداری - ایکسپریس اردو کراچی کنگز کا فاتحانہ آغاز، پشاور زلمی کو 10 رنز سے شکست ’ٹرمپ دورہ انڈیا میں مذہبی آزادی پر بات کریں گے‘ میاں نواز شریف کی صحت میں کوئی بہتری نہیں آئی، لیگی رہنما عطاء اللہ تارڑ