'کافرہ' جو مخالفت کے باوجود مسلمانوں کے دوش بہ دوش کھڑی تھی! -

‘کافرہ’ جو مخالفت کے باوجود مسلمانوں کے دوش بہ دوش کھڑی تھی! #ARYNewsUrdu

01/08/2021 10:05:00 PM

‘کافرہ’ جو مخالفت کے باوجود مسلمانوں کے دوش بہ دوش کھڑی تھی! ARYNewsUrdu

آداب کرتے ہوئے ساڑی کا پلّو چہرے سے ڈھلک گیا تو ہم نے پہچانا کہ یہ سروجنی نائیڈو ہے۔

آزادی کی یہ متوالی، عظیم راہ نما، دانش ور و مدبّر خاتون جو اردو اور انگریزی پر یکساں عبور رکھتی تھیں اور ہندو مسلم اتحاد کی زبردست حامی تھیں، ایک موقع پر مسلم یونیورسٹی کے جلسے میں شریک ہوئی تھیں۔ اس موقع پر سروجنی نائڈو کا زبردست استقبال ہوا تھا اور پورے اسلامی تمدّن اور تہذیب کے ساتھ ان کو صفِ اوّل میں بٹھایا گیا تھا۔ اس پورے منظر کو مختار مسعود نے اپنی تحریر میں گویا متحرک بنا دیا ہے۔ ظاہری اور باطنی اوصاف کے علاوہ طلبا کے استقبال کا انداز اور نائیڈو کی تقریر کا جوش اور اس میں حق و صداقت سے پُر آواز کا انھوں نے بھرپور نقشہ کھینچا ہے۔

جنرل اسمبلی سے خطاب؛ وزیر اعظم نے دنیا کے سارے سربراہان کو پیچھے چھوڑ دیا - ایکسپریس اردو محمد زبیرنے آرمی چیف کی توسیع کے حوالے سے مریم نواز کے بیان کی حمایت کردی Sawal with Ehtesham Amir-ud-Din | SAMAA TV | 26 Sep 2021 | SAMAATV

ان کے قلم سے جلسے کی کیفیت اور تقریر کے انداز کو ملاحظہ کیجیے:“میں آج مسلم یونیورسٹی علی گڑھ میں کئی لوگوں کے مشورے کے خلاف اور چند لوگوں کی دھمکی کے باوجود حاضر ہوئی ہوں، مجھے علی گڑھ کی ضلعی اور یو پی کی صوبائی کانگریس نے پہلے مشورہ اور پھر حکم دیا کہ تم مسلم یونیورسٹی کا دورہ منسوخ کر دو۔ انہیں یہ بات بھو ل گئی کہ گورنر کی حیثیت سے میں اب کانگریس کی ممبر نہیں رہی لہٰذا نہ ان کی رائے کی پابند ہوں نہ ان کے ضابطے سے مجبور، اور میں کسی کی دھمکیوں کو کب خاطر میں لاتی ہوں۔ میں حاضر ہوگئی ہوں، بلبل کو چمن میں جانے سے بھلا کون روک سکتا ہے؟،،

ایک دوسرے مقام پر وہ اسلام کے پیغامات کی صداقت اور حقانیت کا اعلان کرتے ہوئے یوں گویا ہوتی ہیں:“اگرچہ میں تمہارے دوش بہ دوش کھڑے ہونے کے باوجود تمہاری نظروں میں ایک کافرہ ہوں مگر میں تمہارے سارے خوابوں میں شریک ہوں، میں تمہارے خوابوں اور بلند خیالوں میں بھی تمہارے دوش بدوش ہوں کیوں کہ اسلام کے نظریات بنیادی اور حتمی طور پر اتنے ترقّی پسند نظریات ہیں کہ کوئی انسان جو ترقّی سے محبّت کرتا ہو ان پر ایمان لانے سے انکار نہیں کر سکتا۔” headtopics.com

مزید پڑھ: ARY News Urdu »

Zum Anzeigen anmelden oder registrieren

Sieh dir auf Facebook Beiträge, Fotos und vieles mehr an.

قیام پاکستان کیلئے جس جس نے جو کردار ادا کیا وہ ھمارا اور اسلام کا محسن ھے اور ھم اس کی جدوجہد کی دل سے قدر کرتے ھیں ❤️💐 پی ٹی آئی کی تعلیم دشمن پالیسیوں سے پنجاب ایجوکیشن فاونڈیشن میں کرپشن شروع کر دی گئی ہے ای وی ایس فیز سولہ کی انیس ماہ کی پیمنٹ ہڑپ کر لی مزید 40ہزار بچے سکولوں سے باہر ہو گئے ہیں بکواس یہ بتاو حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا کلمہ پڑھا اس نے ؟

سندھ حکومت کے لاک ڈاؤن کے اقدام کے خلاف وزیر اعظم بھی بول پڑےاسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) سندھ حکومت کی جانب سے لاک ڈاؤن کے اقدام کے خلاف وزیر اعظم عمران خان بھی بول پڑے کہا کہ سندھ حکومت سے بس اتنا کہوں گا کہ

‏’کس نے کہا تھا کرفیو لگائیں؟ جو بات ہوئی نوٹیفکیشن اس کے برعکس تھا‘‏’کس نے کہا تھا کرفیو لگائیں؟ جو بات ہوئی نوٹیفکیشن اس کے برعکس تھا‘ مزید پڑھیں : ARYNewsUrdu

پاکستان کے سربراہ کا فرمان ہے کہ جو یوٹرن نہیں لیتا وہ احمق ہےThe head of Pakistan says that he who does not take u-turn is an idiot

شاہد خاقان عباسی نے شہباز شریف کے استعفے کے خبروں کی تردید کر دی09:03 PM, 30 Jul, 2021, اہم خبریں, پاکستان, لاہور: مسلم لیگ (ن) کے سینیئر نائب صدر و سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے پارٹی کے صدر شہباز شریف کے استعفے کے

پشاور سوات چترال اور دیر کے علاقوں میں زلزلے کے جھٹکےپشاور، سوات، چترال اور دیر کے علاقوں میں زلزلے کے جھٹکے لوگ کلمہ طیبہ کا ورد کرتے گھروں سے باہر نکل آئے۔   زلزلہ پیما مرکز کے مطابق ریکٹر سکیل پر

ویڈیو:چھٹی کے روزبھی صبح سویرے ایکسپو کے باہر لمبی قطاریںکراچی میں سم بند ہونے کے خوف اور تنخواہ روکنے کے ڈر سے چھٹی والے روز بھی صبح سویرے شہریوں کی بڑی تعداد ویکسینیشن کیلئے ایکسپو سینٹر کے باہر جمع ہوگئی: SamaaTV اب رش میں کرونا نہیں پھیل رہا؟ ویسے تو عوام کو جمع ھونے پر کل ڈنڈے مارے گئے تھے گدھے کے بچوں میڈیا کبھی سچ نہیں بولے گا ان بیچاروں کے روزگار بند کردئے گئے ہیں پولس والے دو دو سو روپے لیکر سرٹیفکیٹ سے مبرا کر رہے ہیں تم میڈیا والوں کی روزی روٹی بند ہو تو پتا چلے کالونی نظام یا جنگل نظام میں رہنے والے مظلوم یا اندھے گونگے بہروں کے لئے خبروں کی سرخیاں ایسے ہی لگائی جاتی ہیں... مجاور، سرمایہ دارانہ نظام میں محکوم غلام ایسے ہی مخاطب کئیے جاتے ہیں...