ہمیں افسوس ہے عدالت اپنا رول ادا نہیں کر رہی: فواد چودھری

03/12/2022 8:02:00 PM

تفصیلات:

تفصیلات:

لاہور: (دنیا نیوز) پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما اور سابق وفاقی وزیر فواد چودھری نے کہا ہے کہ نواز شریف، زرداری ملک لوٹ کر باہربھاگ جاتے ہیں، الیکشن کا نام سن کر ان کوغشی کے دورے پڑتے ہیں۔ ہمیں افسوس ہے عدالت اپنا رول ادا نہیں کررہی۔مسلم لیگ والے توعوام میں بیٹھ کرکھانا نہیں کھاسکتے، الیکشن کیا لڑیں گے، لگ رہا ہے نوازشریف تو شائد واپس نہ آئے حکمران سارے لندن چلے جائیں گے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما نے کہا کہ حکومت کی طرف سے وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق، رانا ثناء اللہ نے پریس کانفرنس کی، کیا ان دونوں کو سابق وزیراعظم نواز شریف نے بطورِ مرغا پالا ہوا ہے کہ ہر معاملے میں چونچ مارنا شروع کر دیں۔ ان میں جرات ہونی چاہیے اپنے لیڈران سے این آر او کے بارے میں پوچھیں، اگران کو برا لگتا ہے کہ لوگ انہیں چور، ڈاکو کہتے ہیں تو اپنے لیڈران سے پوچھیں، دونوں جماعتوں کی لیڈرشپ کی لوٹ مار پر کیا کسی کو شک ہے؟ جب آپ کی لیڈرشپ ملک کا پیسہ لوٹے گی توڈاکوہی کہا جائے گا۔ اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نواز شریف، زرداری ملک لوٹ کر باہربھاگ جاتے ہیں، الیکشن کا نام سن کر ان کوغشی کے دورے پڑتے ہیں، رانا ثنا اللہ، خواجہ سعد رفیق اپنے حلقوں میں بھی بغیر گارڈ کے نہیں نکل سکتے، ملک کی75فیصد آبادی کہہ رہی ہے کہ الیکشن ہونے چاہئیں۔ سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ جنرل ضیا الحق، جنرل جیلانی کی پیدا کردہ جماعت ہمیں طعنہ دے انہیں شرم آنی چاہیے، مسلم لیگ کی پیدائش ہی گیٹ نمبر چار کی پیداوار ہیں، مسلم لیگ کے دونوں وزرائے خزانہ (اسحاق ڈار اور مفتاح اسماعیل) آپس میں لڑرہے ہیں، ان کے دونوں وزراء نے ملک کا بیڑہ غرق کیا، ہم الیکشن کی طرف جا رہے ہیں، ہم چاہتے ہیں ادارے آئین کے مطابق چلیں گے، ہمیں افسوس ہے عدالت اپنا رول ادا نہیں کررہی۔ فواد چودھری نے مزید کہا کہ ایک صحافی کہہ رہے ہیں جنرل (ر)باجوہ کے کہنے پر رات کو بارہ بجے عدالت کھولی گئی، یہ ہمارے جسٹس سسٹم پرسوالیہ نشان ہے، فیصلے اگر بند کمروں میں ہونگے تو پھر اسٹیبلشمنٹ کو سوچنا ہو گا، عام آدمی کی تو عدالتوں سے انصاف کی توقع ہی اُٹھ گئی ہے، تھوڑی دیر بعد سندھ کی پارلیمانی پارٹی کی میٹنگ ہو گی، ہمارے فیصلے ہوچکے ہم الیکشن کے لیے تیارہے۔ انہوں نے کہا کہ وکلا کی متفقہ رائے ہے ملک میں گورنرراج نہیں لگ سکتا، ہم الیکشن کی تاریخ کی طرف بڑھ رہے ہیں، مونس الہیٰ اورایک صحافی کی ٹویٹ پر کیا تبصرہ کروں، زرداری نے جن لوگوں کو پیسے دیئے تھے اب وہ بھی زرداری کا ساتھ دینے کوتیارنہیں، اگرکسی کا دماغی علاج ہونا ہے تو وہی زرداری کے ساتھ جائے گا۔ پی ڈی ایم کی سنجیدگی صرف کیسز ختم کرانا ہے، مریم نوازکیس کی نیب سپریم کورٹ میں اپیل ہی فائل نہیں کر رہا، یہ صرف پیسے لیکربھاگنے کے چکرمیں ہیں، ان کے بچے باہر ہیں ، پاکستان میں کوئی مفاد نہیں، پیپلزپارٹی اورجے یوآئی کے لوگ تو دس دس ہزارتک نہیں چھوڑ رہے، مجھے لگ رہا ہے نوازشریف تو شائد واپس نہ آئے یہ سارے لندن چلے جائیں گے۔ مسلم لیگ والے توعوام میں بیٹھ کرکھانا نہیں کھاسکتے،الیکشن کیا لڑیں گے، اگران کوبرا لگتا ہے کہ ان کے لیڈر کو چور،ڈاکونہ کہا جائے تو لیڈروں سے پوچھیں کرپشن کیوں کیں۔ متعلقہ خبریں.میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما نے کہا کہ حکومت کی طرف سے وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق، رانا ثناء اللہ نے پریس کانفرنس کی، کیا ان دونوں کو سابق وزیراعظم نواز شریف نے بطورِ مرغا پالا ہوا ہے کہ ہر معاملے میں چونچ مارنا شروع کر دیں۔ ان میں جرات ہونی چاہیے اپنے لیڈران سے این آر او کے بارے میں پوچھیں، اگران کو برا لگتا ہے کہ لوگ انہیں چور، ڈاکو کہتے ہیں تو اپنے لیڈران سے پوچھیں، دونوں جماعتوں کی لیڈرشپ کی لوٹ مار پر کیا کسی کو شک ہے؟ جب آپ کی لیڈرشپ ملک کا پیسہ لوٹے گی توڈاکوہی کہا جائے گا۔ اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نواز شریف، زرداری ملک لوٹ کر باہربھاگ جاتے ہیں، الیکشن کا نام سن کر ان کوغشی کے دورے پڑتے ہیں، رانا ثنا اللہ، خواجہ سعد رفیق اپنے حلقوں میں بھی بغیر گارڈ کے نہیں نکل سکتے، ملک کی75فیصد آبادی کہہ رہی ہے کہ الیکشن ہونے چاہئیں۔ سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ جنرل ضیا الحق، جنرل جیلانی کی پیدا کردہ جماعت ہمیں طعنہ دے انہیں شرم آنی چاہیے، مسلم لیگ کی پیدائش ہی گیٹ نمبر چار کی پیداوار ہیں، مسلم لیگ کے دونوں وزرائے خزانہ (اسحاق ڈار اور مفتاح اسماعیل) آپس میں لڑرہے ہیں، ان کے دونوں وزراء نے ملک کا بیڑہ غرق کیا، ہم الیکشن کی طرف جا رہے ہیں، ہم چاہتے ہیں ادارے آئین کے مطابق چلیں گے، ہمیں افسوس ہے عدالت اپنا رول ادا نہیں کررہی۔ فواد چودھری نے مزید کہا کہ ایک صحافی کہہ رہے ہیں جنرل (ر)باجوہ کے کہنے پر رات کو بارہ بجے عدالت کھولی گئی، یہ ہمارے جسٹس سسٹم پرسوالیہ نشان ہے، فیصلے اگر بند کمروں میں ہونگے تو پھر اسٹیبلشمنٹ کو سوچنا ہو گا، عام آدمی کی تو عدالتوں سے انصاف کی توقع ہی اُٹھ گئی ہے، تھوڑی دیر بعد سندھ کی پارلیمانی پارٹی کی میٹنگ ہو گی، ہمارے فیصلے ہوچکے ہم الیکشن کے لیے تیارہے۔ انہوں نے کہا کہ وکلا کی متفقہ رائے ہے ملک میں گورنرراج نہیں لگ سکتا، ہم الیکشن کی تاریخ کی طرف بڑھ رہے ہیں، مونس الہیٰ اورایک صحافی کی ٹویٹ پر کیا تبصرہ کروں، زرداری نے جن لوگوں کو پیسے دیئے تھے اب وہ بھی زرداری کا ساتھ دینے کوتیارنہیں، اگرکسی کا دماغی علاج ہونا ہے تو وہی زرداری کے ساتھ جائے گا۔ پی ڈی ایم کی سنجیدگی صرف کیسز ختم کرانا ہے، مریم نوازکیس کی نیب سپریم کورٹ میں اپیل ہی فائل نہیں کر رہا، یہ صرف پیسے لیکربھاگنے کے چکرمیں ہیں، ان کے بچے باہر ہیں ، پاکستان میں کوئی مفاد نہیں، پیپلزپارٹی اورجے یوآئی کے لوگ تو دس دس ہزارتک نہیں چھوڑ رہے، مجھے لگ رہا ہے نوازشریف تو شائد واپس نہ آئے یہ سارے لندن چلے جائیں گے۔ مسلم لیگ والے توعوام میں بیٹھ کرکھانا نہیں کھاسکتے،الیکشن کیا لڑیں گے، اگران کوبرا لگتا ہے کہ ان کے لیڈر کو چور،ڈاکونہ کہا جائے تو لیڈروں سے پوچھیں کرپشن کیوں کیں۔ متعلقہ خبریں.نور مقدم کیس: 7 جولائی سے قتل تک کیا کیا ہوا؟ وکیل عثمان کھوسہ نے دلائل میں تکنیکی نکات اٹھاتے ہوئے کہا کہ پراسیکیوشن کے بیانات میں تضاد ہے، ظاہرجعفرکا نور مقدم کو قتل کرنےکا کوئی ارادہ یا منصوبہ بندی نہیں تھی، پراسیکیوشن کےکیس سے بھی کہیں قتل ثابت نہیں ہوتا۔ چیف جسٹس عامرفاروق نے کہا کہ کیا منصوبہ بندی کے بغیر کسی کو قتل نہیں کیا جا سکتا؟ عدالت کو بتایا گیا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں مقتولہ کے جسم پر زخموں کے نشانات کی وضاحت نہیں کی گئی تو چیف جسٹس نے کہا کہ معذرت کے ساتھ کہنا پڑتا ہےکہ یہاں پوسٹ مارٹم کرنے والے نااہل اورکرپٹ ہیں، نجانے تھراپی ورکس کے ملازمین کو ملزم بنانے کی کیا منطق تھی؟ نجانے پولیس بنیادی چیزوں کو کیوں اور کیسے نظرانداز کر سکتی ہے؟اسی لیے ہمیں کہنا پڑتا ہے کہ یہ نااہلی کی انتہا ہے۔ ظاہر جعفر کے وکیل کے دلائل جاری تھے کہ سماعت منگل 6 دسمبر تک ملتوی کر دی گئی ۔ وکیل نے ظاہر جعفر کا میڈیکل کرانے کی متفرق درخواست بھی دائر کردی۔ مزید خبریں :.فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ،بریت کی درخواست پر 24دسمبر کو دلائل طلب کر لیے۔ نجی ٹی وی چینل"ڈان نیوز"کے مطابق ڈاکٹر عاصم منیر کی جانب سے درخواست دائر کی گئی ہے ، جس میں کہا گیا کہ میرے خلاف بے بنیاد مقدمہ درج کیا گیا ،7سال میں ایک گواہ نے بھی میرے خلاف بیان نہیں دیا اس لیے مقدمے سے بری کیا جائے۔ واضح رہے کہ ڈاکٹر عاصم حسین پر 2015میں دہشت گردوں کے علاج معالجے کا مقدمہ درج کیا گیا تھا۔.

مزید پڑھ:
Dunya News »
Loading news...
Failed to load news.

Kashmir msi kia howa ایسے ہی تم لوگوں کو نظام کی تبدیلی کے نام پر موت پڑتی ھے اور پھر انکو پرانی جرابیں سنگھا کر ہوش میں لایا جاتا۔

ہمیں افسوس ہے عدالت اپنا رول ادا نہیں کر رہی: فواد چودھریلاہور: (دنیا نیوز) پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما اور سابق وفاقی وزیر فواد چودھری نے کہا ہے کہ نواز شریف، زرداری ملک لوٹ کر باہربھاگ جاتے ہیں، الیکشن کا نام سن کر ان کوغشی کے دورے پڑتے ہیں۔ ہمیں افسوس ہے عدالت اپنا رول ادا نہیں کررہی۔مسلم لیگ والے توعوام میں بیٹھ کرکھانا نہیں کھاسکتے، الیکشن کیا لڑیں گے، لگ رہا ہے نوازشریف تو شائد واپس نہ آئے حکمران سارے لندن چلے جائیں گے۔ In beghairat insan qadyaniyn ko invitr karnay par lanat bhaijo Isy bhalo ko kon sa Rol chahy?

'پتہ نہیں ہماری پولیس کب سیکھے گی؟ ہر کیس میں مسائل سامنے آ رہے ہیں'پولیس بنیادی چیزوں کو کیسے نظرانداز کر سکتی ہے؟اسی لیے ہمیں کہنا پڑتا ہے کہ یہ نااہلی کی انتہا ہے، چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ عامر فاروق

دہشت گردوں کے علاج کا کیس ڈاکٹر عاصم حسین نے بریت کیلئے درخواست دے دیکراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) دہشت گردوں کے علاج معالجے کے کیس میں ڈاکٹر عاصم حسین نے انسدد دہشت گردی عدالت میں بریت کی درخواست دائر کر دی  ہے،عدالت نے

نہیں معلوم 15دن بعد یہ حکومت ہو گی یا نہیں فواد چودھریلاہور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما فواد چودھری نے دعویٰ کیا ہے کہ موجودہ حکومت نہیں چل سکے گی اور نہیں معلوم 15 دن بعد یہ حکومت ہو گی یا نہیں۔پی

عدالتیں پاکستان کی تاریخ کو مزید داغدار کرنے میں پیش پیش ہیں: فواد چودھری10:23 AM, 2 Dec, 2022, اہم خبریں, پاکستان, اسلام آباد: ترجمان پی ٹی آئی فواد چودھری نے عدلیہ پر شدید تنقید کی ہے ۔کہتے ہیں عدالتیں پاکستان کی تاریخ کو مزید Bull dog

آپ سے ملک نہیں چل رہا، دونوں وزیر خزانہ آپس میں لڑ رہے ہیں، فواد چوہدریپاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ یہ باہر سے آتے ہیں، ملک کو لوٹتے ہیں اور باہر چلے جاتے ہیں۔ تفصیلات جانیے: DailyJang