کیا بچوں کو کورونا ویکسین لگانا چاہیئے، ایف ڈی اے نے بحث چھیڑ دی - ایکسپریس اردو

مزید پڑھئے :

13/06/2021 5:42:00 PM

مزید پڑھئے :

ماہرین کا ایک گروپ بچوں میں ویکسین کے عام استعمال کی منظوری کے حق میں ہیں تاہم کچھ اس کے سخت مخالف ہیں

کیلی فورنیا: امریکی ادارے فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن فائزر کی آر این اے ویکسن کی 12 سے 17 سال کے بچوں میں ہنگامی استعمال کی منظوری دے چکا ہے تاہم عام استعمال کی باقاعدہ منظوری سے قبل ماہرین کے درمیان بحث کا آغاز کردیا ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق عالمی شہرت یافتہ صحت کے مستند امریکی ادارے فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن نے ماہرین سے رائے طلب کی ہے کورونا ویکسین کے بچوں پر استعمال کے ٹرائل کے لیے کون سے ضروری اہداف مقرر کیے جانے چاہیئے اور ٹرائل کا طریقہ کار کیا ہونا چاہیئے۔

مریم نواز کا کورونا ٹیسٹ مثبت آگیا - ایکسپریس اردو تعلیمی اداروں میں چھٹیوں کے حوالے سے اہم خبر مزاحیہ فنکار کا قتل، افغان طالبان کا پہلے انکار پھر تفتیش کا اعلان - BBC News اردو

اس حوالے سے ایف ڈی اے کے ویکسین کے مشیروں میں سے کچھ کا کہنا ہے کہ بچوں میں کورونا ویکسین کے استعمال کی منظوری قبل از وقت ہوگی کیوں کہ بچے اب بھی فطری طور پر اس مہلک وائرس سے کافی حد تک محفوظ ہیں۔تاہم ایف ڈی اے کے اعلیٰ حکام کا کہنا ہے کہ کورونا ویکسین نہ صرف بچوں کو متاثر کرسکتا ہے بلکہ وہ بچوں کی جان بھی لے سکتا ہے۔ اس لیے بچوں میں بھی کورونا ویکسین کے استعمال کی جلد منظوری ضروری ہوگئی ہے۔

فی الحال ایف ڈی اے نے ویکسین سے متعلق اپنی کمیٹی سے کسی قسم کی تجویز یا معلومات لینے کے بجائے ویکسین بنانے والی کمپنیوں سے پوچھنے کا فیصلہ کیا ہے کہ بچوں میں ویکسین کے ٹرائل سے متعلق کیا ڈیٹا جمع کیا جانا چاہیئے اور یہ بھی کہ ٹرائل کا طریقہ کار کیا ہو اور کیا اہداف مقرر کیے جائیں گے اور سب سے بڑھ کر ٹرائل کے دوران بچوں کی صحت کی حفاظت کے لیے کیا اقدامات اُٹھائے جائیں گے۔ headtopics.com

ٹفٹس یونیورسٹی اسکول آف میڈیسن کے شعبہ بچوں کے امراض کے سربراہ ڈاکٹر کوڈے میسنیر نے کہا کہ کورونا کے مرض میں مبتلا ہو کر اسپتال میں داخل ہونے والوں بچوں کی تعداد انتہائی کم دیکھی گئی ہے اس لیے یہ زیادہ اہم ہے کہ اگر ٹرائل کیے جائیں تو پہلے اس ٹرائل کے نتائج سے آگاہی حاصل کرلی جائے۔

ڈاکٹر موڈے کے برعکس کیلی فورنیا میں سان ڈیاگو اسکول آف میڈیسن کے پروفیسر اور ماہر امراض اطفال ڈاکٹر مارک ساویئر کا کہنا ہے کہ میرا خیال ہے کہ کسی تاخیر کے بغیر ہی ہمیں جلد از جلد بچوں میں بھی کورونا ویکسین کے استعمال کی اجازت دے دینی چاہیئے۔ہارورڈ اسکول آف پبلک ہیلتھ کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ایرک روبن نے کہا کہ وبا کی صورت حال اب اتنی خراب یا قابو سے باہر نہیں رہی ہے تاہم مستقبل کے بارے میں کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہوگا۔

اسی طرح ایف ڈی اے کے ویکسین ریسرچ کے ڈائریکٹر موریسن گربر نے خدشہ ظاہر کیا کہ ہمیں نہیں معلوم کہ یہ ہلاکت خیز وائرس اسکول کھلنے کے بعد بچوں پر کس طرح حملہ آور ہو سکتا ہے اور کیا تباہ کاریاں پھیلا سکتا ہے۔ مزید پڑھ: Express News »

Hasb-e-Haal-part All-ep-25991-2021-07-21-Eid ul Adha Special | Dunya News

Eid ul Adha Special Hasb-e-Haal: 21 July 2021

No no no No جو چیز جانوروں پر تجربہ نہیں کی گئی اسے انسانوں کو لگانا ایک جنگی جرم ہے۔ Indeed

ملک میں گدھوں کی تعداد میں اضافے کے ذمہ دار عمران خان ہیں مولانا فضل الرحمانجمعیت علما اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کاکہناہے کہ بجٹ میں غلط اعداد و شمار پیش کئے گئے ،شوکت ترین پر سارا ملبہ ڈال دیا گیا۔ان کاکہناتھا کہ ملک میں رسول اللہ صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا : ’’ آسانی پیدا کرو ، تنگی پیدا نہ کرو ، سکون پہنچاؤ ، نفرت نہ دلاؤ ۔‘‘ متفق علیہ ۔ Iss jaisay gadhay be kaar hain, matti daalnay k liye use karein in ko, construction / development mn in ka bhi share ho ہاں جی آپ ہر دفعہ بریانی مفت میں چٹ کرجاتے تھے تب ہی تو اُن کی تعداد گھٹتی رھی

آسٹریا میں کورونا کے باعث قلیل وقتی کام کی مدت میں توسیعویانا(اکرم باجوہ)آسٹرین وزیر اقتصادیات مارگریٹ شریمبک نے اعلان کیا ہے کہ کورونا کے باعث قلیل وقتی کام کی مدت میں 30ستمبر تک توسیع کردی گئی ہے۔آسٹرین پارلیمنٹ

ملک کے بیشتر علاقوں میں آندھی اور گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکانمحکمہ موسمیات کے مطابق آئندہ24گھنٹوں کے دوران بالائی ، وسطی پنجاب، خیبر پختونخوا اور کشمیر میں آندھی اور گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔ اس دوران چند مقامات

سعودی عرب میں مزدوروں کے تیز دھوپ میں کام کرنے پر پابندیسعودی عرب کی وزارت افرادی قوت و سماجی ترقی نے مزدور پیشہ افراد کی بہبود اور ان کی صحت و سلامتی کے پیش نظر تیز دھوپ میں محنت مزدوری کرنے پر پابندی عائد کردی

بجٹ میں وزیراعظم ہاؤس اور سیکریٹریٹ کے اخراجات میں 18.4 کروڑ کا اضافہ - ایکسپریس اردووزیر اعظم آفس (انٹرنل) کے اخراجات میں 1.2 کروڑ اور وزیراعظم آفس (پبلک) کے لیے 17.2 کروڑ روپے کا اضافہ کیا جارہا ہے

مراد علی شاہ کراچی میں پانی کے بحران کے ذمہ دار ہیں: فواد چودھریوفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چودھری نے کہا ہے کہ سندھ کو بلدیاتی نظام کی بہت زیادہ ضرورت ہے۔ آرٹیکل 140 اے پر عملدرآمد نہیں ہورہا ہے، سپریم کورٹ آرٹیکل 140