کورونا وائرس پر حکومت صرف میٹنگ کررہی ہے، ہو کچھ نہیں رہا، چیف جسٹس - ایکسپریس اردو

کورونا وائرس پر حکومت صرف میٹنگ کررہی ہے، ہو کچھ نہیں رہا، چیف جسٹس -

06/04/2020 11:36:00 AM

کورونا وائرس پر حکومت صرف میٹنگ کررہی ہے، ہو کچھ نہیں رہا، چیف جسٹس -

یہ ملک میں کس طرح کی میڈیکل ایمرجنسی نافذ کی ہے، ہراسپتال اور کلینک لازمی کھلا رہنا چاہیے، چیف جسٹس گلزار احمد

اسلام آباد: چیف جسٹس گلزار احمد کا کہنا ہے کہ حکومت صرف میٹنگز کررہی ہے لیکن زمین پر کچھ کام بھی نہیں ہورہا ہے۔سپریم کورٹ میں قیدیوں کی رہائی سے متعلق ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل پر سماعت ہوئی۔ عدالت نے کہا کہ معاملہ صرف قیدیوں کی رہائی کا نہیں بلکہ دیکھنا یہ ہے حکومت کورونا سے کیسے نمٹ رہی ہے، صرف میٹنگ میٹنگ ہورہی ہے، زمین پر کچھ بھی کام نہیں ہورہا۔

لداخ میں چین اور بھارتی فوج میں جھڑپ، متعدد بھارتی اہلکار گرفتار - ایکسپریس اردو ارطغرل غازی کی جانب سے پاکستانیوں کو عید مبارک - ایکسپریس اردو ’بھائی لاپتہ ہے تو عید کیسے مناؤں؟‘

چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ اسلام آباد میں کوئی ایسا اسپتال نہیں جہاں میں جا سکوں، تمام اسپتالوں کی او پی ڈیز بند کردی گئی ہیں، ملک میں صرف کورونا کے مریضوں کا علاج ہورہا ہے، مجھے اپنی اہلیہ کو چیک کرانے کیلئے ایک بہت بڑا اسپتال کھلوانا پڑا، نجی کلینکس اوراسپتال بھی بند پڑے ہیں، یہ ملک میں کس طرح کی میڈیکل ایمرجنسی نافذ کی ہے، ہر اسپتال اور کلینک لازمی کھلا رہنا چاہیے۔

چیف جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ وزارت ہیلتھ نے خط لکھا کہ سپریم کورٹ کی ڈسپنسری بند کی جائے، کیوں بھائی یہ ڈسپنسری کیوں بند کی جائے، کیا اس طرح سے اس وبا سے نمٹا جارہا ہے، وفاق کے پاس تو کچھ ہے ہی نہیں، وفاق تو کچھ کرہی نہیں رہا، آپ نے جو رپورٹ جمع کرائی ہے یہ اس بات کو واضح کررہی ہے۔

اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ ایک رپورٹ آج بھی جمع کرائی ہے، وفاق بھرپور طریقے سے اقدامات کررہا ہے جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ شیریں مزاری نے جواب داخل کرایا کہ پشاورہائیکورٹ نے 32سو قیدیوں کی رہائی کا حکم دیا ہے جس پر اٹارنی جنرل نے جواب دیا کہ پشاور ہائی کورٹ نے ایسا کوئی حکم نہیں دیا، میرے خیال میں وزارت انسانی حقوق کو غلط فہمی ہوئی ہے۔



مزید پڑھ: Express News

جس ملک میں انصاف کی کرسی پر ایسے نمونے بیٹھے ہو جو نہ تو اپنا کام کرتے ہیں اور نہ ہی کسی کو کرنے دیتے ہیں۔ اسکی مٹال ہمارے عدالتی جانبدانہ اور ظلم پر مبنی فیصلے اور عدالتوں میں کئی دہائوں سے ان ضمیرفروشوں کے ہاتھوں لٹکائے ہوئے کیسز ہیں۔ Can this CJ RESTRICT TO HIS OWN BUISNESS, APNA KAM TO HOTA NAHIN, SO MANY PENDING CASES IN COURTS AND POCKING HIS NOSE IN EXECUTIVE AFFAIRS. CLOWN

AWAM Ko Koy relief Nahi mili. Afsos yehi hey, baatain hi ho rahi hain.Kaam hota,ammul hota to mulk aiysa na rehta. سچ بہت کڑوا ہوتا ہے ۔ اب گالیاں کھاو ۔ پوری دنیا کرونا سے لڑ رہی ہے اور ہم کرونا کے ساتھ ساتھ اس گندگی سے بھی لڑ رہے ہیں یہ ہے نیا پاکستان اور حفا ظتی اقدامات جو حکومت نے کیے ہیں شرم تو آتی نہیں مجھ کو مگر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

درست ہے لاک ڈاون پر غریبوں کو کوئی حکومتی ریلیف نہیں ملا ۔شوگر مافیا کی رپورٹ پبلک کرنے کا ڈرامہ عوام کو۔گمراہ کرنے کے لئے رچایا گیا ہے ۔ Yh khud ab tk kia kr rhy بعیرت بے شرم سو موٹو نوٹس نہیں بنتا، Sir aap Jo muft ke rotia Thor rahi ho Ye to meeting bi ni kr rahy Allah karey corona inko lag jayee phir pata lagey ga kitna kaam howa hai

Mr chief plz you take over that situation and work on Corona for the people of Pakistan CJ Sab ko corona karwa dayen he will know what government is doing other than meetings. First do ur own job properly and don’t create hurdles in tackling corona. Just provide justice to peoples and fix the slow judicial system.

اس بندر کو کیا کہیں ! تم لوگوں سے بڑی فلمیں بھی کبھی کسی قوم نے نہیں دیکھیں ہونگی Inko zara hospital le kar jao pata chale inhein Then what are you doing...!!!If you have more knowledge about Chronic disease, why you can't give orders...!! I think you are just trying to be popular,nothing else.after every 2,3 Days few orders,again silent. Please don't make comparison, do something for our common people's.

چل اپنا کام کر Supreme court nai corona virus ki vaccine bnany ka faislaa kr liyaa اس چاچے کا اپنا مسئلہ ہے 😁 اپ انصاف کی کرسی پر بیٹھے ہیں انصاف نہیں کر رہے اس کا کام جناب اپنا کام تو پہلے ٹھیک سے کرو پھر حکومت کہ طرف بھی آ جائیے گا۔ اپنا کام ہوتا نہیں دوسرے کہ کام میں دخل دینے پہنچ جاتے ہیں True Sir what are YOU doing in providing justice and doing justice for the ppl of Pakistan

Tm jysy log to pysa e kha pee lyty hn ..faisala adal sy hota ni h or hulamat k kamoon main tangain uraty hn آپ کو بھی الله نے اعلیٰ منصب دیا ہے آپ بھی خلق خدا کی خدمت کیجئیے صرف باتیں مت کریں AC میں بیٹھکر Apna kaam ho nai raha aur syasat ki phri hai sirf naam e kamany aty hain judge b Cj go to expo bhai

تو یہ صاحب خود باہر نکل آئیں کرونا کا خاتمہ جلد از جلد فرما دیں ۔ ۔ جیمز بانڈ Itna control jo hoa hay wo supream court nay nawaz or zardari family ko bahar bhaij kar dya warna undonon ko under rakhtay to kaisay control hota corona sahi bat hay Sir can you do anything against this epidemic? Pls Come forward and ply your roll .

ballyyyy waiii thik ay g thik a ager ab b kuch ni oraa to phr ALLAH e hafi ay ap logun ka Kia kren Italy bna den R u Doctor? Judge sb ko America baij dainy پہلے عدالتوں کا نظام تو ٹھیک کرو۔ ہر کام میں ٹانگ اڑاتے ہو Ji bilkul sara decisions tu court la rahi hai baki duniya tu beathi hwi hai pehla jo court ka cases hain inha tu imandari sa nibta lain ap.... Yahan apna geriban koi nai deakh raha pr dosro pa ki Har sae uchal raha hain sub....

Hona b nhe unse kuch نہیں جناب کتا فورس بھی بنائی ھے ۔ دنیا میڈیکل سپلائی، سہولیات بہتر کر رھی ھے اوت یہاں کتا فورس کے لیے کروڑوں کی کٹ تیار کی جا رھی ھے ۔ آپ کی عدالت کا صادق اور آمین ھے لو بھئی اب اس بےوقوف کی کمی تھی Well, very difficult to satisfy oneself why media and judiciary remain always in opposition mode will never appreciate any good move of govt just to satisfy their ego and sense of superiority.

تسی کر لو جناب۔۔۔۔۔اپنا کام تے کرنا کوئ نہیں۔۔۔۔کوئ شرم ہوتی ہے کوئ حیاء ہوتی ہے۔۔۔۔اپ میں بھی ہوتی ہے کیا؟ Bhot achaa b adalat chalti ni or hukamat ko mashwara. جو کام عدالت نے کرنے ہے وہ کام کریں عدالتوں میں مقدمات بہت ہیں جیسے حکومت رات دن کرونا وائرس کے مریضوں کے لیے کام کررہی ہیں اس طرح رات دن ایک کر کے فیصلے کریں

بلکل اب اپ ہمت کرے اور خود ہسپتالوں کا جائزہ لے جا کر تے سرکار توسی کج کرو۔۔۔۔لاک ڈاون کو تو عوام نے ھوا میں اڑا دیا ھہ HassanNisar Maal baat lea gaya sirf awam aik dosray ki madad kar rahi hay JazakAllah bht meharbani apki Orders Karo wafaq ko notice lu g Oye oyeeee oyeee📌 Big Mouth

کرونا وائرس کے خلاف جنگ طویل ہے ہم نے مل کر لڑنا ہے، وزیراعظم -لاہور: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کے خلاف جنگ طویل ہے ہم نے مل کر لڑنا ہے، عوام صرف انہیں یاد رکھیں گے جو مشکل وقت میں ساتھ دے گا۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں وزیراعظم عمران خان نے کرونا ریلیف ٹائیگر فورس کے رضاکاروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ … Tiger forced join karni hy Please help me App Buht buzy hy 03215804030 کرونا وائرس کے خلاف فرنٹ لائن پےلڑنے والے سندھ کے تمام نرسز کی تنخواہ کاٹی جا رہی ہے۔CM سندھ کو گزارش ہے کے مہربانی کر کے نرسز کو رسک الاؤنس بہھی دیا جائے۔ Gloves masks & sntzrs are still not provided at sindh govt hospitals. Inshahallah

سبسڈی نہیں مسئلہ چینی کی قیمت کا ہے وہ کیسے بڑھی؟سبسڈی نہیں مسئلہ چینی کی قیمت کا ہے وہ کیسے بڑھی؟ تحقیقاتی رپورٹ بتاتی ہے کہ آٹا بحران وفاقی و صوبائی حکومتوں کی نااہلی کی وجہ سے ہوا mac61lhr Covid_19 SugarCrisis PMImranKhan ImranKhanPTI pid_gov

کورونا مریضوں کی تعداد 50 ہزار تک پہنچ سکتی ہے: رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع

Roznama Dunya: اسپیشل فیچرز :- کورونا وائرس کی تشخیص کیسے ہوتی ہے؟چین کے شہر ووہان سے شروع ہونے والی کورونا وائرس کی وبا پھیلتی ہی چلی جا رہی ہے۔ اس نے سماجی اور معاشی نظام کو تہ و بالا اور نظام زندگی معطل کر دیا ہے۔اس کے خاتمے یا کم از کم اس کی رفتار کم کرنے کے لیے دنیا بھر میں غیرمعمولی اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ ان میں اجتماع اور نقل و حرکت پر پابندی، احتیاطی تدابیر سے آگہی اور ''لاک ڈاؤن‘‘ شامل ہیں۔ یہ تمام اقدامات بے سود ثابت ہو سکتے ہیں اگر کووڈ19- کی بروقت اور مناسب پیمانے پر تشخیص نہ کی جائے۔ کسی ملک میں وائرس کا پھیلاؤ ابتدائی مراحل میں ہو یا بہت زیادہ ہو چکا ہو، دونوں صورتوں میں ٹیسٹ کے ذریعے تشخیص کی اہمیت مسلمہ ہے۔ مختلف ممالک میں اس مرض کے ٹیسٹوں کی شرح مختلف ہے۔ اس کا انحصار جہاں مریضوں کی تعداد پر ہے وہیں حکومتی ترجیحات اور سہولیات کی دستیابی پر بھی ہے۔ بعض ممالک نے ٹیسٹنگ ترجیحی بنیادوں پر کی۔ ان میں چین اور جنوبی کوریا کے نام شامل ہیں۔ ان ممالک نے ٹیسٹنگ کے لیے ضروری سامان کی پیداوار کو جلد ممکن بنایا۔ زیادہ مشتبہ افراد کے ٹیسٹ کرنے سے انہیں وبا کی روک تھام میں مدد ملی۔ کس کا ٹیسٹ کرنا ہے اور کس کا نہیں، اس کا ایک عمومی پیمانہ ہے البتہ بعض ممالک میں تھوڑے سے شبے پر ٹیسٹ کر لیے جاتے ہیں اور بعض میں واضح علامات آنے پر ہوتے ہیں۔ ٹیسٹ کے بغیر یہ ممکن نہیں کہ کسی فرد میں اس وائرس کی موجودگی کا حتمی فیصلہ کر لیا جائے۔ کسی کا ٹیسٹ کرنے کی دو بڑی وجوہات ہوتی ہیں۔ فرد میں کورونا وائرس کی علامات ظاہر ہو جائیں یا اس کے مریض سے اس کا رابطہ ہوا ہو۔ کووڈ19- کی اہم علامات بخار، خشک کھانسی اور سانسوں میں تیزی ہیں۔ یہ نزلہ یا عام زکام جیسی ہوتی ہیں اس لیے صورت حال کو دیکھتے ہوئے اس کا ٹیسٹ کیا جاتا ہے۔ لیکن بہت سے لوگوں کے ٹیسٹ مثبت آئے ہیں جو کہتے ہیں کہ ان کا کسی ایسے مریض سے واسطہ نہیں پڑا۔ اسی سے پتا چلتا کہ یہ کتنا بڑا چیلنج ہے۔ٹیسٹوں کی سہولت کم ہونے کی وجہ سے یہ فیصلہ کرنا پڑ سکتا ہے کہ کس کا ٹیسٹ کیا جائے اور کس کا نہیں۔ ٹیسٹوں میں معمراور پہلے سے بیمار افراد کو ترجیح دی جاتی ہے کیونکہ ذیابیطس، بلند فشارِخون، امراض قلب اور سرطان میں مبتلا افراد میں کورونا وائرس سے پیچیدگیوں کا امکان بڑھ جاتا ہے۔ کووڈ19- کی علامات انفیکشن کے فوری بعد ظاہر نہیں ہوتیں، ان میں وقت لگتا ہے جو دو ہفتے تک ہو سکتا ہے۔ اس دوران وائرس کا شکار فرد

’کورونا وائرس سے شدید بیمار ہونیوالے نوجوانوں کی تعداد بڑھ رہی ہے‘ - Health - Dawn NewsIs liya k won ok Allah taala see dedar k wqt qreb ho rah hay

’کورونا وائرس سے شدید بیمار ہونیوالے نوجوانوں کی تعداد بڑھ رہی ہے‘ - Health - Dawn News