کرپٹ حکام آزاد میڈیا سے ڈرتے ہیں، وزیراعظم کی صحافی حبیب اکرم کیساتھ لائیو کال میں گفتگو

کرپٹ حکام آزاد میڈیا سے ڈرتے ہیں، وزیراعظم کی صحافی حبیب اکرم کیساتھ لائیو کال میں گفتگو

01/08/2021 7:31:00 PM

کرپٹ حکام آزاد میڈیا سے ڈرتے ہیں، وزیراعظم کی صحافی حبیب اکرم کیساتھ لائیو کال میں گفتگو

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کسی بھی ملک کیلئے آزادی اظہار رائے بڑی نعمت ہے، میڈیا مثبت تنقید کے ذریعہ حکومت اور اداروں کی کارکردگی بہتر بنانے میں معاونت کرے۔

انہوں نے کہا کہ اگر میں نے چوری کی ہو تو پھر آزاد میڈیا سے ڈروں گا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میڈیا کا کام مثبت ہونا چاہئے غلط اطلاعات سے اجتناب کرنا چاہئے اور مثبت تنقید کے ذریعہ حکومت اور اداروں کی کارکردگی کو بہتر بنانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کیلئے آزادی اظہار رائے بہت بڑی نعمت ہے۔

پیمرا کی سما ٹی وی کو واجبات کی ادائیگی کے بغیر علیم خان کی کمپنی کی ملکیت میں دینے کی منظوری - BBC News اردو PM Imran Khan's Interview to BBC World {With Urdu Subtitles} 22 09 2021 صحافی وارث رضا کی گھر واپسی: مبینہ اغواکاروں نے پوچھا ’کیا ہائبرڈ نظام واقعی اتنا خراب ہے؟‘ - BBC News اردو مزید پڑھ: Dunya News »

PM Imran Khan's Interview to BBC World 21 09 2021

#ptvnews #ptvnewshd #hdSubscribe: https://www.youtube.com/c/PTVNewsOfficialFacebook: https://www.facebook.com/PTVNewsOfficialTwitter: https://twitter.com/PTV...

ڈھیٹ حکمران کسی سے نہیں ڈرتے اور جھوٹ کرپشن کا دفاع کرتے ہیں ۔ کیا تم لوگوں نے حاجیوں کو پانی پلانے اور مسجدِ حرام کی مجاوری کرنے کو اس شخص کے کام کے برابر ٹھہرا لیا ہے جو ایمان لایا اللہ پر اور روزِ آخر پر اور جس نے جہاد کیا / جانفشانی کی اللہ کی راہ میں؟ اللہ کے نزدیک تو یہ دونوں برابر نہیں ہیں اور اللہ ظالموں کی رہنمائی نہیں کرتا )

اللہ تعالی کا فرمان ہے : اَجَعَلۡتُمۡ سِقَايَةَ الۡحَـآجِّ وَعِمَارَةَ الۡمَسۡجِدِ الۡحَـرَامِ كَمَنۡ اٰمَنَ بِاللّٰهِ وَالۡيَوۡمِ الۡاٰخِرِ وَجَاهَدَ فِىۡ سَبِيۡلِ اللّٰهِ‌ ؕ لَا يَسۡتَوٗنَ عِنۡدَ اللّٰهِ ‌ؕ وَ اللّٰهُ لَا يَهۡدِى الۡقَوۡمَ الظّٰلِمِيۡنَ‌ۘ ۞ تو بھی اس نے خیر نہیں کیا، اس نے اجر نہیں کمایا... اور وہ اچھا حکمران نہیں بلکہ بظاہر نیک شخص اور نااہل حکمران کہلائے گا!!! یہی حال آج عربوں اور باقی مسلم ممالک کے حکمرانوں کا ھے!!!

کشمیریوں کو بھارت کے رحم و کرم پر چھوڑ دے, مسجد اقصٰی پر یہودی قبضے اور معصوم مسلمانوں پر ظلم و بربریت دیکھتے ہوئے آنکھیں پھیر لے، اور حج پر حج اور عمرے پر عمرے کرے، حاجیوں کو زم زم پلاتا رہے، رات بھر تہجد وہ بھی مسجد نبویﷺ میں پڑھتا رہے وہاں اللّٰہﷻ کا دین غالب ہے یا نہیں؟ مظلوم کو protection حاصل ہے یا نہیں؟ اب اگر کوئی حاکم لوگوں کے معاملات کو بگاڑ دے، دین نافذ نہ کرے، سودی قرضے لے، ٹیکس سے غریب کو بھوکا ماردے، کفار کے حملوں سے مسلمانوں کو تحفظ نہ دے,

کیونکہ مسلم حکمرانوں کو معلوم تھا کہ مسلمانوں کے اجتماعی معاملات کا دفاع اپنی انفرادی عبادات سے پہلے آتا ہے. اسی لیے حکمران کو پرکھنے کا معیار یہ نہیں ہوتا کہ وہ تہجد کتنی پڑھتا ہے یا کعبے کے دروازے اس کیلیے کتنی بار کھولے گئے بلکہ معیار تو یہ ہے کہ حکمران کو جہاں اقتدار ملا ہے ایوبیؒ نے حاجیوں پر حملہ کرنے والے صلیبیوں کو ختم کرنے کا وقت تو نکال لیا لیکن اپنی خواہش کے باوجود کبھی جنگ اور کبھی فتنوں کی وجہ سے حاجی نہ بن سکے. یہ کوئی انوکھی بات نہیں تھی۔ کیونکہ مسلم حکمرانوں کو معلوم تھا

جنرل پرویز مشرف نے کبھی کعبے کا دروازہ اپنے ہاتھوں سے کھولا تو کبھی نواز شریف نے اور کبھی عمران خان ننگے پیر مدینے کی سڑکوں پر چلے .... مگر.... سلطان صلاح الدین ایوبیؒ حکومتی معاملات اور صلیبیوں کے مقابلے میں اتنا مشغول رہے کہ کبھی کعبہ نہ دیکھ سکے اسکا مطلب ہے کہ یہ خود بھی کرپٹ ہے کیونکہ آجکل میڈیا جتنا پابند اور درباری ہے,پہلے کبھی نہیں تھا.

بلکل

میڈیا اور عوام امن دشمنوں کی نشاندہی کرکے انہیں شکست دیں، آرمی چیف - ایکسپریس اردوآرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے 15 رکنی افغان میڈیا کے وفد کی جی ایچ کیو راولپنڈی میں ملاقات انٹیجلینس ایجنسیاں بھنگ گھوٹنے کے لئے رکھی ھوئ ہیں ۔ اگر یہ کام میڈیا اور عوام نے ہی کرنا ھے تو وزارت دفاع اپنا بجٹ غریب قوم کو واپس کردے ۔ نشاندہی تو کافی درصہ پہلے کررکھی مگر مسئلہ یہ ہے کہ آپ کو شکست کیسے دی جاۓ؟ 😂

Joke of the day 'Azad Media ' آزاد میڈیا کہیں نظر نہیں آتا سب آرمی کے غلام ہیں اس کا اندازہ اس بات سے لگا لیں کہ آج طلعت حسین مطیع نصرت جاوید رضوان رضی ڈاکٹر دانش ظفر نقوی حامد میر سمیت تقریباً درجنوں صحافی نیازی کے خلاف بات کرنے پر نا صرف بین ہیں بلکہ بےروزگار بھی کر دیے گئے ہیں اور گیلے تیتراور شاپرسمیت درجنوں بوٹ چاٹ جو صحافت کی اب نہیں جانتے کہاں ہیں اب

میڈیا پر تو اس کی حکومت میں پابندیاں لگی ہیں Lafafa یاد رہے کہ پاکستان میں سب سے زیادہ میڈیا پر پابندیاں اس دور میں لگی ہوئی ہے ۔۔ جو صحافی حکومت کے خلاف لکھے یا ٹی وی پر بات کریں اس کے خلاف ایف آئی اے،نیب یا انٹی کرپشن کے جھوٹے کیس بنائے جاتے ہیں اور ٹی وی مالکان پر پریشر ڈال کر نوکری سے بھی نکالتے ہیں ۔

Drama پلانٹڈ کال تھی، یہ حبیب تو شکل سے ہی دو نمبر بندہ لگتا ہے اوپر سے دنیا نیوز کا رپورٹر جس کا مالک دس نمبری ہے! ان جیسے صحافیوں نے سب کو نواز شریف سمجھ رکھا ھے عمران خان تمام دنیا میں مشہور ھے پاکستان کی تاریخ کا سب سے ایماندار شخص وزیر اعظم ھے عمران خان کے لئے چند اشہار تو اپنی خوبیاں ڈھونڈ خامیاں دیکھنے کے لیے لوگ ہیں نا اگر رکھنا ھے قدم تو آگے رکھ پیچھے دھکیلنے کے لیے لوگ ہیں نا

میڈیا اور عوام امن دشمنوں کی نشاندہی کرکے انہیں شکست دیں، آرمی چیف - ایکسپریس اردوآرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے 15 رکنی افغان میڈیا کے وفد کی جی ایچ کیو راولپنڈی میں ملاقات

اللہ کی شان کہہ کون رہا ہے؟؟؟ سب سے زیادہ میڈیا اور صحافیوں پر پابندی بھی اسی کرپٹ حکمران کے دور میں لگی ہے جو یہ دعوی کر رہا ہے HabibAkram Attn Seeker Anchors: آپکو نہیں لگتا کہ آپ نے ایک کال سے کسی ضرورت مند کی پریشانی کا حق مارا ہے؟آپ اس روڈ کے مسلے پے اپنے پروگرام میں رپورٹ پیش کر دیتے یا پی ایم پورٹل پے لکھ دیتے.تعجب ہوتا ہے آپ جیسے اٹنشن سیکر اینکرز پے fawadchaudhry FaisalJavedKhan

اسی لیے آج میڈیا زیر عتاب ھے عوام مہنگائی کی چکی میں پس چکی ہے لیکن خان صاحب کی نوٹنکیاں ختم نہیں ہوتی کاش عدالتیں ٹھیک ہوجاتیں توجسطرح یہ سیاستدان ایک دوسرےپرجھوٹےالزام لگاکردوسروں کیعزت تارتارکرتےہین۔ ایک ہی تاریخ پرجھوٹےپرکروڑوں روپے کاہرجانےکےساتھ عدالت کچھ٪age سرکاری خزانہ میں جمع کرواکرکم ازکم حکومتی خزانہ پربجھ بننےکےاپنی تنخواہ+مراعت سیاستدانوں سےنکلوالیتی ImranRiazKhan

Maan Gaya y daaku Hai saari Dunya ko Pata Pakistan k media ka is waqt Kiya haal hai

صدف کنول کے شوہر کی خدمت کے حوالے سے بیان نے سوشل میڈیا پر دھوم مچادی09:25 AM, 31 Jul, 2021, متفرق خبریں, انٹرٹینمینٹ, لاہور : شوہر کی خدمت کے حوالے سےاداکارہ صدف کنول کے بیان نے سوشل میڈیا پر دھوم مچادی ہے۔ ان کے بیان کو بہت

معمر خاتون کی ہیوی بائیک چلاتے ویڈیو نے سوشل میڈیا پردھوم مچا دیبھارت کی معمر خاتون کی ہیوی بائیک چلاتے ہوئے ویڈیو نے سوشل میڈیا پر تہلکہ مچا دیا اور سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے خوب داددی جارہی ہے۔

شلپا شیٹی کا 29 میڈیا ہاؤسز و شخصیات کیخلاف ہتک عزت کا دعویٰمیڈیا رپورٹس کے مطابق شلپا شیٹی ان افراد و میڈیا ہاؤسز کے خلاف بمبئی ہائی کورٹ میں ہتک عزت کا کیس دائر کردیا۔ لعنت جنگ گروپ پہ 🖐🏼🖐🏽🖐🖐🏿🖐🏻🖐🏿🖐🖐🏽🖐🏼🖐🏽🖐🖐🏿🖐🏻🖐🏿🖐🖐🏽🖐🏼🖐🏽🖐🖐🏿🖐🏻🖐🏿🖐🖐🏽🖐🏼🖐🏽🖐🖐🏿🖐🏻🖐🏿🖐🖐🏽🖐🏼 اسکی عزت بہی ہے کیا (سورة الفتح - آیت نمبر9) تاکہ اے لوگو ،تم اللہ اور اس کے رسول پر ایمان لاؤ اور اس کا ساتھ دو ،اس کی تعظیم و توقیر کرو اور صبح و شام اس کی تسبیح کرتے رہو۔

فیمنزم پر رد عمل، اداکارہ صدف کنول کے سوشل میڈیا پر چرچے