منی لانڈنگ کیس شہبازشریف کورونا کا شکار لیکن عدالت میں حاضری دینے کیلئے کس طرح پیش ہوئے ؟ جانئے

27/01/2022 1:00:00 PM
منی لانڈنگ کیس شہبازشریف کورونا کا شکار لیکن عدالت میں حاضری دینے کیلئے کس طرح پیش ہوئے ؟ جانئے

منی لانڈنگ کیس، شہبازشریف کورونا کا شکار لیکن عدالت میں حاضری دینے کیلئے کس طرح پیش ہوئے ؟ جانئے

منی لانڈنگ کیس، شہبازشریف کورونا کا شکار لیکن عدالت میں حاضری دینے کیلئے کس طرح پیش ہوئے ؟ جانئے

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سپیشل کورٹ سینٹرل نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی منی لانڈرنگ مقدمے میں عبوری ضمانت منظور کر لی ۔ تفصیلات کے

منی لانڈنگ کیس، شہبازشریف کورونا کا شکار لیکن عدالت میں حاضری دینے کیلئے کس ...Jan 27, 2022 | 10:57:AMلاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سپیشل کورٹ سینٹرل نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی منی لانڈرنگ مقدمے میں عبوری ضمانت منظور کر لی ۔تفصیلات کے مطابق سپیشل کورٹ سینٹرل نے شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی عبوری ضمانت کی درخواست منظور کرتے ہوئے ایف آئی اے کو گرفتاری سے روک دیاہے ، شہبازشریف بھی حاضری مکمل کروانے کیلئے سپیشل کورٹ پہنچے جہاں انہوں نے گاڑی میں بیٹھ کر حاضری مکمل کروائی ۔درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ ایف آئی اے نے بےبنیاد مقدمہ درج کیا ہے،عدالت عبوری ضمانت منظور کرکے ایف آئی اے کو گرفتاری سے روکے۔

مزید پڑھ: Daily Pakistan »

Pukaar with Zohaib Saleem Butt | SAMAA TV | 6 Aug 2022

#SAMAATV➽ Subscribe to Samaa News ➽ https://bit.ly/2Wh8Sp8➽ Watch Samaa News Live ➽ https://bit.ly/3oUSwAPStay up-to-date on the major news making headlines ... مزید پڑھ >>

فیصل آباد میں کورونا کیسز میں تیزی 24گھنٹوں میں مزید56 کیسزرپورٹفیصل آباد میں کورونا کیسز میں تیزی، 24گھنٹوں میں مزید56 کیسزرپورٹ Faisalabad CoronavirusUpdates CoronaPositive Patients Infected Report GovtofPunjabPK CMPunjabPK OfficialNcoc Dr_YasminRashid UsmanAKBuzdar DCFaisalabad

پشاور زلمی کے مزید دو کھلاڑیوں کو کورونا ہو گیاکراچی کنگز کے صدر وسیم اکرم بھی کورونا وائرس کا شکار ہو گئے ہیں۔ مزید پڑھیں :GeoNews PSL7

ناظم جوکھیو قتل کیس میں پولیس چالان کے مطابق ان کی موت ’تشدد سے ہوئی‘ - BBC News اردو

ناظم جوکھیو قتل کیس میں پولیس چالان کے مطابق ان کی موت ’تشدد سے ہوئی‘ - BBC News اردوپولیس کے مطابق ناظم جوکھیو کو عرب شکاری کی ویڈیو فیس بک پر اپ لوڈ کرنے کی وجہ سے قتل کیا گیا اور موت کی وجہ ملزم جام اویس عرف گہرام اور دیگر ساتھیوں کا بہیمانہ تشدد تھا۔ بس بھائ بس چند دنوں کی بات ہے جب گرد بیٹھ جائے گی تو نتیجہ ہمیشہ کی طرح چند ملازمین کو سزا ہوگی چند ایک سال کی اور باقی اپنی زندگی جئیں گے اور میڈیا کسی اور کی موت پر کہانی سنا رہا ہوگا یہ سلسلہ چلتا رہے گا سندھ میں لاقانونیت کی وجہ مجرموں کو پروٹوکول دیا جاتاہے انسان کی جان پرندوں کے شکار سے ارزاں!!!!

بہت بہانے ہوگئے، اب نور کو انصاف مل جانا چاہیے، حدیقہ کیانی

بہت بہانے ہوگئے، اب نور کو انصاف مل جانا چاہیے، حدیقہ کیانیگلوکارہ و اداکارہ حدیقہ کیانی نور مقدم کیس کے فیصلے میں تاخیر پر الجھن کا شکار دکھائی دے رہی ہیں۔ ان وکیلوں کا بھی احتسابِ ھونا چائیے جو اس قڈم کے بھاری فیس لے کر اتنے صاف کیسیز کو خراب کرتے ھیں ۔میڈیا کو چائیے ان وکیلوں کے خلاف بھی ٹرینڈ چلائے اور ان کو شرم دلائے

بھارت میں دل دہلا دینے والا واقعہ 11 سالہ دو لڑکوں نے 8 سالہ بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا دیا والدہ کو کس طرح علم ہوا؟نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن )بھارتی دارلحکومت نئی دہلی کے علاقے عثمان پور میں دو 11 سالہ لڑکوں نے 8 سالہ بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ، لڑکی کو

مردان: عاصمہ قتل و زیادتی کیس، مجرم کی عمر قید بھگتنا ہوگیمردان میں چائلڈ پروٹیکشن کورٹ نے عاصمہ قتل و زیادتی کیس کا فیصلہ سنادیا۔ تفصیلات جانیے: DailyJang

منی لانڈنگ کیس، شہبازشریف کورونا کا شکار لیکن عدالت میں حاضری دینے کیلئے کس طرح پیش ہوئے ؟ جانئے منی لانڈنگ کیس، شہبازشریف کورونا کا شکار لیکن عدالت میں حاضری دینے کیلئے کس .جبکہ فیصل آباد میں اب تک کووڈ۔19سے جاں بحق افراد کی کل تعداد1056اور ایکٹو کیسز کی تعداد563 ہو گئی ہے نیزالائیڈہسپتال میں اس وقت کووڈ۔19کے27،ڈی ایچ کیو ہسپتال میں 5اور گورنمنٹ جنرل ہسپتال غلام محمد آبادفیصل آبادمیں 6مریض داخل ہیں اسی طرح525کنفرم مریض گھروں پر آئسولیشن میں ہیں۔ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی فیصل آباد کے سی ای او ڈاکٹر بلال احمد نے بتایا کہ فیصل آباد کی تمام سرکاری اور پرائیویٹ لیبارٹریز میں گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران914افراد کے کورونا وائرس ٹیسٹ کئے گئے جن میں سے858افرادکے ٹیسٹ نیگیٹواور56 افراد کے ٹیسٹ پازیٹو آئے۔انہوں نے بتایاکہ فیصل آباد میں اب تک کووڈ19سے جاں بحق ہونے والے افراد کی کل تعداد1056 اور ایکٹو کیسز کی تعداد563 ہو گئی ہے۔انہوں نے بتایاکہ ابتک کووڈ۔19کے26082مریض صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ اس وقت الائیڈ ہسپتال میں کووڈ۔19کے27، ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال میں 5اور گورنمنٹ جنرل ہسپتال غلام محمد آبادفیصل آبادمیں 6مریض داخل ہیں۔انہوں نے بتایاکہ اس وقت کووڈ کے کنفرم525مریض گھروں پر آئسولیشن میں ہیں۔انہوں نے بتایا کہ فیصل آباد میں کووڈ۔ 19کے مریضوں کیلئے مخصوص کئے گئے تینوں ہسپتالوں میں کل 321 بیڈز مختص ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ الائیڈ ہسپتال فیصل آبادمیں 119، ڈی ایچ کیو ہسپتال میں 52اور گورنمنٹ جنرل ہسپتال غلام محمد آباد فیصل آباد میں 150بیڈزکووڈ۔19کے سلسلہ میں مخصوص ہیں۔انہوں نے بتا یا کہ الائیڈہسپتال میں 26 وینٹی لیٹرز سمیت شہر کے ڈی ایچ کیو اور غلام محمد آباد ہسپتالوں میں مجموعی طور پر47وینٹی لیٹرزموجود ہیں جنہیں بوقت ضرورت زیر استعمال لایا جا سکتا ہے۔انہوں نے بتایا کہ اگرچہ الائیڈ،ڈی ایچ کیو و جنرل ہسپتال غلام محمد آباد میں کووڈ۔19 کے ممکنہ مریضوں کیلئے آکسیجن کی سہولت والے بیڈز وادویات وافرمقدار میں دستیاب ہیں تاہم پھر بھی احتیاطی تدابیرپرعمل درآمد ضروری ہے.مزید خبریں :.ناظم جوکھیو کیس: ملزم رکنِ سندھ اسمبلی عدالت میں پیش، ریمانڈ میں توسیع جام عبدالکریم اور جام اویس کی دھمکیاں پولیس کے مطابق اسی دوران غیر ملکی شہری کے مقامی ساتھی اپنی گاڑی میں وہاں پہنچ گئے۔ چالان کے مطابق عربی شیخ نے موبائل فون غلام حیدر جوکھیو اور میر حسن بروہی کے حوالے کرتے ہوئے اشارہ کیا کہ وہ اسے ناظم جوکھیو کے حوالے کردیں۔ ناظم جوکھیو کو فون واپس کر دیا گیا اور دونوں گاڑیاں وہاں سے روانہ ہوگئیں۔ چالان میں بتایا گیا ہے کہ اس واقعے کی اطلاع جب ملزم جام عبدالکریم اور ان کے بھائی جام اویس عرف گہرام کو ہوئی تو انھوں نے مقتول ناظم جوکھیو کے بھائی افضل جوکھیو سے احمد جمال نامی شخص کے موبائل نمبر سے رابطہ کیا اور مذکورہ ویڈیو ڈیلیٹ کرنے، شیخ سے معافی مانگنے کے لیے دباؤ ڈالا اور جان سے مارنے کی دھمکیاں بھی دیں۔ چالان کے مطابق ملزم نیاز سالار، جو رکن قومی اسمبلی اور کیس میں نامزد ملزم جام عبدالکریم کا پی آر او ہے، نے بھی ویڈیو ڈیلیٹ کرنے کے لیے رابطہ کیا لیکن متوفی ناظم جوکھیو نے ایک اور ویڈیو فیس بک پر شیئر کی جس میں ملزمان کی جانب سے دباو ڈالے جانے کا تذکرہ کیا۔ پولیس چالان کے مطابق ملزم جام عبدالکریم نے اپنے پی آر او نیاز سالار کو ہدایت دی کہ وہ مدعی افضل جوکھیو اور متوفی ناظم جوکھیو کو ان کے بنگلے جام ہاؤس جام گوٹھ نزد میمن گوٹھ لے کر آئے۔ نیاز سالار نے محمد سومار سالار اور اپنے برادرِ نسبتی دودو سالار کو ہمراہ لیا اور اپنی (کلٹس) کار میں رات تقریباً گیارہ بجے گاؤں آچار سالار پہنچے جہاں سے مدعی افضل جوکھیو اور متوفی ناظم جوکھیو رضامندی سے ان کے ساتھ روانہ ہوئے۔ اسی دوران متوفی ناظم جوکھیو گاڑی سے اتر کر گھر گئے اور اپنے ایک دوست مظہر الدین جونیجو ایڈوکیٹ کو واٹس ایپ وائس میسج کے ذریعے آگاہ کیا کہ وہ جام عبدالکریم کے لوگوں کے ساتھ جا رہے ہیں۔ چالان: ناظم جوکھیو کی موت تشدد سے ہوئی پولیس چالان کے مطابق جام ہاؤس پہنچنے پر جام عبدالکریم نے متوفی ناظم جوکھیو کو تھپڑ مارے اور موبائل فون سے واقعہ کی ویڈیوز ڈیلیٹ کر دیں۔ اس کے بعد ناظم جوکھیو کو میر علی اور حیدر علی کے حوالے کر دیا گیا جنھوں نے ناظم جوکھیو کو گارڈ روم میں قید کر دیا۔ دوسری جانب ناظم جوکھیو کے بڑے بھائی افضل جوکھیو کو ان کے گھر واپس بھیج دیا گیا۔ پولیس کے مطابق جام عبدالکریم بھی جام ہاؤس سے روانہ ہوئے تو ان کے چھوٹے بھائی اور رکن صوبائی اسمبلی سندھ ملزم جام اویس عرف گہرام گارڈ روم میں گھسے جہاں انھوں نے ناظم جوکھیو پر خود اور گارڈز کے ذریعے ڈنڈوں، لاتوں اور مکوں سے تشدد کیا اور پھر انھیں زخمی حالت میں وہیں چھوڑ دیا گیا۔ ،تصویر کا ذریعہ SOCIAL MEDIA ،تصویر کا کیپشن جام اویس گہرام کے والد بجار خان قبیلے کے سردار ہیں اور ان کے بڑے بھائی جام کریم رکن قومی اسمبلی ہیں پولیس کے مطابق اس تشدد کی نتیجے میں ناظم جوکھیو کی موت واقع ہو گئی۔ اگلی صبح جب جام عبدالکریم کو ناظم جوکھیو کی موت کا علم ہوا تو سب سے پہلے نیاز سالار اور بعد میں سلیم سالار کو بتایا گیا۔ سلیم سالار کے ذریعے ناظم جوکھیو کے بھائی افضل جوکھیو اور ان کے ماموں در محمد کو جام ہاؤس گاڑی پر بلوایا گیا جہاں انہیں بھی ناظم کی موت کی اطلاع دی گئی۔ یہ سنتے ہی مدعی افضل جوکھیو اور درمحمد جام ہاؤس سے روتے ہوئے باہر نکلے۔ انھوں نے سوشل میڈیا پر بھی یہ بات پھیلائی اور سلیم سالار کو کہا کہ انھیں پریس کلب ملیر چھوڑ آئیں۔ اس دوران جام عبدالکریم نے اپنے ملازم ملزم معراج کے ذریعے پولیس کو وقوعہ کی اطلاع کروائی اور یہ ظاہر کیا گیا کہ ایک جھگڑے کے دوران متوفی ناظم جوکھیو کی موت ہو گئی ہے۔ تھانہ میمن گوٹھ کی پولیس نے جائے وقوعہ سے ناظم جوکھیو کی نعش قبضے میں لی اور چھیپا ایمبولنس سروس کے ذریعے جناح ہسپتال پہنچائی گئی جہاں پوسٹ مارٹم کروایا گیا۔ واضح رہے کہ ایف آئی آر سے قبل میمن گوٹھ پولیس کی جانب سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ میمن گوٹھ میں دو گروہوں میں تصادم ہوا ہے جس کے نتیجے میں ناظم جوکھیو نامی شخص ڈنڈے لگنے سے ہلاک ہو گیا ہے۔ اس دوران متوفی کے رشتہ داروں نے احتجاجاً نیشنل ہائی وے بلاک کر دی تھی اور بعد ازاں مقدمہ درج کروایا۔ اغوا کا جرم ثابت نہیں ہوا پولیس کے مطابق اب تک کی تفتیش میں ناظم الدین جوکھیو کو اس کے گھر گاؤں آچار سالار سے اغوا کرنے اور اعانت جرم کی کوئی شہادت نہیں پائی گئی لہذا دفعہ 365,109 پی پی سی کو غیر متعلقہ ہونے کے سبب خارج کیا جاتا ہے۔ پولیس چالان کے مطابق متوفی ناظم الدین جوکھیو کو عربی شیخ کے ساتھ تلخ کلامی کرنے اور اس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کرنے کی وجہ سے قتل کیا گیا جس میں ملزمان جام عبدالکریم، جام اویس عرف گہرام، میر علی جوکھیو، حیدر علی خاصخیلی اور نیاز سالار ملوث پائے گئے ہیں۔ متعلقہ عنوانات.

.. Jan 27, 2022 | 10:57:AM لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سپیشل کورٹ سینٹرل نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی منی لانڈرنگ مقدمے میں عبوری ضمانت منظور کر لی ۔ تفصیلات کے مطابق سپیشل کورٹ سینٹرل نے شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی عبوری ضمانت کی درخواست منظور کرتے ہوئے ایف آئی اے کو گرفتاری سے روک دیاہے ، شہبازشریف بھی حاضری مکمل کروانے کیلئے سپیشل کورٹ پہنچے جہاں انہوں نے گاڑی میں بیٹھ کر حاضری مکمل کروائی ۔درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ ایف آئی اے نے بےبنیاد مقدمہ درج کیا ہے،عدالت عبوری ضمانت منظور کرکے ایف آئی اے کو گرفتاری سے روکے۔ یاد رہے کہ 19 جنوری کو شہبازشریف کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا تھا جس کے بعد انہوں نے خود کو قرنطینہ کر لیا تھا ، شہبازشریف کو ڈاکٹروں کی جانب سے آرام کا مشورہ دیا گیاہے ۔ مزید : .