شہید مظلوم سیّدنا عثمان غنی ذوالنورین ؓ - ایکسپریس اردو

مزید پڑھئے:

29/07/2021 2:59:00 PM

مزید پڑھئے:

اے لوگو! مجھے قتل نہ کرو اگر مجھ سے کوئی غلطی ہوئی ہو تو مجھ سے توبہ کرالو۔

یہ بزرگ تیسرے خلیفۂ راشد، سیّدنا عثمان ذوالنورینؓ تھے۔ آپؓ خاندان بنو امیہ سے تھے۔ سیّدنا عثمان بن عفانؓ کاتب وحی بھی تھے اور ناشر و حافظ قرآن بھی۔ آپؓ، نبی اکرمؐ پر ایمان لانے والے چوتھے فرد تھے۔ سیّدنا عثمانؓ نبی کریم ﷺ کے دہرے داماد تھے۔ نبیٔ رحمت ﷺ کی دوسری بیٹی سیّدہ رقیہؓ کا نکاح سیدنا عثمان ؓسے ہوا۔ سیّدہ رقیہؓ سے سیّدنا عثمانؓ کے فرزند حضرت عبداﷲ ؓ پیدا ہوئے اور انہی عبداﷲ ؓ کے نام پر سیّدنا عثمانؓ کی کنیت ’’ابو عبداﷲ‘‘ تھی۔ مروج الذہب کے مطابق ان عبداﷲ ؓ بن عثمانؓ کا انتقال 76سال کی عمر میں ہوا۔

انگلینڈ کرکٹ ٹیم کو پاکستان میں کوئی خطرہ نہیں تھا، برطانوی ہائی کمشنر - ایکسپریس اردو امریکی سرحدی محافظوں کی جانب سے پناہ گزینوں کا گھوڑوں پر پیچھا کرنے کی ’ہولناک‘ تصاویر پر ہنگامہ - BBC News اردو PM Imran Khan's Interview to BBC World 21 09 2021

غزوۂ بدر کے موقع پر سیّدنا عثمانؓ، نبی اکرم ﷺ کے حکم سے سیّدہ رقیہؓ جو کہ اس وقت بستر علالت پر تھیں، کی تیمارداری کے لیے رک گئے اور غزوۂ بدر میں شریک نہ ہوسکے۔ مگر بہ قول نبی کریم ﷺ، سیّدنا عثمانؓ کو اصحاب ِبدر کے مثل درجہ عطا ہوا۔ سیّدہ رقیہؓ کے انتقال پرُملال کے بعد نبی اکرم ﷺ نے اپنی بیٹی، سیّدہ ام کلثومؓ کا نکاح سیّدنا عثمانؓ سے کر دیا۔ جب وہ بھی وفات پاگئیں تو نبی کریم ﷺ نے فرمایا: اگر میری چالیس بیٹیاں بھی ہوتیں تو میں اسی طرح ایک کے بعد ایک، عثمان کے نکاح میں دیتا جاتا۔ خیال رہے کہ حضرت عثمانؓ وہ واحد ہستی ہیں جن کے نکاح میں کسی پیغمبرؑ کی دو بیٹیاں یکے بعد دیگرے آئی ہوں۔ اس صفت میں سیّدنا عثمانؓ کا کوئی شریک نہیں ہے۔ اسی وجہ سے سیّدنا عثمانؓ کا لقب ’’ذوالنورین‘‘ یعنی ’’دو نوروں (روشنیوں) والا‘‘ ہے۔

سیّدنا عثمان ذوالنورینؓ 12 سال تک امت ِمسلمہ کے خلیفہ رہے اور کئی ممالک فتح کرکے خلافت اسلامیہ میں شامل کیے۔ آذر بائیجان، آرمینیا، ہمدان کے علاقوں میں بغاوت ہوئی، جس کا قلع قمع امیرالمؤمنین سیدنا عثمانؓ کی خلافت میں ہی ہوا۔ اور اس بغاوت کا سدباب سیّدنا ابُوبکر صدیقؓ کے دور کی بغاوتوں کے سدباب کی طرح ہی اہم تھا۔ مزید یہ کہ ایران کے جو علاقے مثلاً بیہق، نیشاپور، شیراز، طوس، خراسان وغیرہ بھی خلافت عثمانی میں ہی فتح ہوئے اور قیصر روم بھی آپؓ کے دور میں ہی واصل نار ہوا۔ سیّدنا عثمانؓ کے دور خلافت میں ہی بحری جہاد کا آغاز ہوا۔ بحری جہاد کی ابتداء کرنے والے لشکر کے لیے جنّت کی خوش خبری نبی کریم ﷺ اپنی لسان مبارکہ سے ارشاد فرما چکے تھے۔ سیّدنا عثمانؓ شرم و حیا اور جود و سخا کے پیکر تھے۔ headtopics.com

آپ ؓ نے کبھی زنا نہیں کیا اور نہ ہی کبھی شراب نوشی کی۔ آپؓ انتہائی نرم خو اور سخی تھے۔ متعدد مرتبہ نادار اور مجبور مسلمانوں کے لیے اپنا مال بغیر کسی قیمت کے فی سبیل اﷲ خرچ کیا۔ اور کئی بار جہاد کے لیے مالی طور پر نبیؓ کی خدمت میں مال و زر پیش کیا۔ ایک مرتبہ نبیؓ کی پنڈلی مبارک سے کپڑا نسبتاً زیادہ اوپر اٹھا ہوا تھا، اسی اثنا میں علم ہوا کہ سیدنا عثمانؓ چلے آرہے ہیں تو رسول کریم ﷺ نے انتہائی عجلت میں کپڑا نیچے کر دیا۔ سیدنا عثمان ؓ کے جانے کے بعد ام المؤمنین سیدہ عائشہ صدیقہؓ نے اس ضمن میں استفسار فرمایا تو آنحضور ﷺ نے جواباً ارشاد فرمایا: کیا میں اُس سے حیا نہ کروں جس سے آسمان کے فرشتے بھی حیا کرتے ہیں۔

صلح حدیبیہ کے سال نبی کریمؐ اپنے صحابہ کرامؓ کی معیت میں عمرے کے ارادے سے جانب مکہ عازم سفر ہوئے، مگر معلوم ہوا کہ کفار مکہ آپؐ اور صحابہ کرامؓ کے عمرہ ادا کرنے میں رکاوٹ ڈال رہے ہیں تو آپؐ نے سیدنا عثمانؓ کو اپنا سفیر بنا کر مکہ بھیجا۔ جہاں کفار نے سیدنا عثمانؓ کی شہادت کی افواہ اڑا دی۔ اس پر حضور اکرم ﷺ کو انتہائی رنج و قلق ہوا اور آپؐ نے سیدنا عثمانؓ کے قتل ناحق کا انتقام لینے کے لیے اپنے ساتھ موجود تقریباً ڈیڑھ ہزار صحابہ کرامؓ سے فردا فردا بیعت لی، اسے بیعت رضوان کہا جاتا ہے۔ بیعت ِرضوان کے موقع پر نبی کریم ﷺ نے اپنے دست ِمبارک کو سیدنا عثمانؓ کا دست مبارک قرار دیتے ہوئے اُن کی طرف سے بیعت کی۔ اس موقع پر اﷲتعالیٰ نے سیدنا عثمان ؓ کی بہ دولت تقریباً ڈیڑھ ہزار مسلمانوں سے اپنی رضا کا اعلان فرمایا۔

نبی کریم ﷺ نے حضرت عثمانؓ سے فرمایا تھا کہ اﷲ آپ کو ایک قمیض پہنائے گا (یعنی خلافت عطا فرمائے گا) لوگ چاہیں گے کہ آ پ وہ قمیض اتار دیں (یعنی خلافت سے دست بردار ہو جائیں) اگر آپ لوگوں کی وجہ سے اس سے دست بردار ہوئے تو آپ کو جنت کی خوش بُو بھی نہیں ملے گی۔ یہی وجہ تھی کہ سیدنا عثمانؓ باغیوں کے پرُزور مطالبے کے باوجود بھی منصب ِخلافت سے دست بردار نہ ہوئے اور اپنے راہ بر و راہ نما ﷺ کے حکم پر جان نچھاور کردی۔ باغیوں کے محاصرہ کے دوران آپؓ نے اپنے گھر کے دریچے سے ظاہر ہوکر ان عاقبت نااندیش باغیوں کو تنبیہ کی۔ مگر اُن کی عقل ماؤف اور ضمیر مردہ ہو چکے تھے۔

اسی سازش کے نتیجے میں خلیفۂ وقت سیدنا عثمانؓ کے گھر کا محاصرہ کرلیا گیا اور وہ بھی ایسے وقت میں کہ اکثر صحابہ کرامؓ اور عام مسلمان بہ غرض حج مکہ مکرمہ میں تھے۔ سیدنا عثمانؓ کو خلافت سے دست بردار ہونے کو کہا گیا مگر بہ حکم نبوی ﷺ آپؓ نے یہ مطالبہ رَد کر دیا۔ اور چالیس دن بھوکے پیاسے روزے کی حالت میں ان باغیوں کے محاصرہ میں اپنے گھر میں ہی مقید رہے۔ دن رات نماز و تلاوت قرآن میں مشغول رہے۔ اور بالآخر 18ذی الحج، 35ہجری کو دوران تلاوت شہید کر دیے گئے۔ headtopics.com

شرح نمو زیادہ ہونا خوش آئند، مہنگائی دنیا کا مسئلہ ہے: شوکت ترین England team didn't abandon Pakistan tour over security reasons: British HC آک لینڈ: سخت لاک ڈاؤن کے دوران شہر میں ’کے ایف سی‘ کا کھانا سمگل کرنے والے دو افراد گرفتار - BBC News اردو مزید پڑھ: Express News »

Sawal with Ehtesham Amir-ud-Din | SAMAA TV | 12 Sep 2021

#NewsHeadlines #LatestUpdates #PakistanNewsLiveStay up-to-date on the major news making headlines across Pakistan on SAMAA TV’s top of the hour segment. For ...

😔 🤣🤣🤣 امیرالمؤمنین ،خلیفہ ثالث،دوہرےدامادپیغمبرﷺ،شہیدِمظلوم پیکرشرم وحیاء | حضرت سیدناعثمان غنیؓ یوم شہادت: 18 ذوالحجہ SyednaUsmanGhani_Rz JoinUs Mso Khanewal Pakistan اللہ تعالی کی رحمتیں ہوں حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالی عنہ I pray and wish one day Muslims will be able to gather the courage to tell the Ummah true reasons behind brutal murder of Ameer Ul Momineen Sayyyidna Usman (RA).

یوم شہادت امیر المؤمنین سیدنا حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ کے حوالے سے آج شام 6:30 بجے ٹرینڈ چلایا جائے گا احباب سے گزارش ہیکہ بھرپور تیاری فرمائیں - TeamJUItwitter جانور اپنے مالک کو پہچانتے ہیں لیکن بہت سے انسان ایسے ہیں جو اپنے رب کو نہیں پہچانتے۔ (حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالی عنہ) رسول اللہ صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا : ’’ یہ دین ہمیشہ قائم رہے گا ، مسلمانوں کی ایک جماعت اس کی خاطر قیامت تک لڑتی رہے گی ۔‘‘ رواہ مسلم ۔

جانور اپنے مالک کو پہچانتے ہیں لیکن بہت سے انسان ایسے ہیں جو اپنے رب کو نہیں پہچانتے۔ (حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالی عنہ)

منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائیگا آرمی چیفپاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔ تو بھنگ کیا محرم کے شربت میں ڈالنے کے لیے بنا رہے ہو؟ سر معاف کر دیں بیچارے منشیات فروش بھی تو اپنے ہی لوگ ہیں Ty apna wazeer e azam pakka nashai rakhya jy

پاکپتن: لڑکے اور لڑکی کا تشدد سے قتل، لاشیں نہر سے برآمدپنجاب کے ضلع پاکپتن میں نوجوان لڑکے اور لڑکی کو تشدد کر کے قتل کر دیا گیا، ملزمان نے نوجوان جوڑے کی لاشیں نہر میں بہا دیں۔

خیبرپختونخوا میں گھر گھر کورونا سے بچاؤ کی ویکسینیشن مہم کل سے شروع ہوگی

دبئی سے بھارت پہنچنے والے مسافروں سے پانچ لاکھ ڈالر مالیت کا سونا برآمددبئی سے بھارت پہنچنے والے مسافروں سے پانچ لاکھ ڈالر مالیت کاسونا برآمد کرلیا گیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق دبئی ایئرپورٹ سے مسافر مختلف پروازوں کے ذریعے بھارت کے

کراچی: کورنگی سے لاپتہ بچی مل گئی، والدین خوشی سے نہالکراچی: کورنگی سے لاپتہ بچی مل گئی، والدین خوشی سے نہال ARYNewsUrdu

نیوزی لینڈ کا داعش سے تعلق رکھنے والی خاتون سے متعلق بڑا فیصلہنیوزی لینڈ کا داعش سے تعلق رکھنے والی خاتون سے متعلق بڑا فیصلہ ARYNewsUrdu Koi bata faisla ni hy bs citizenship cancel ni kr rhy jo 2 din phle ki news hy