سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کیلئے حکومت کی اہم ہدایات -

سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کیلئے حکومت کی اہم ہدایات #arynewurdu

Arynewurdu

29/01/2022 7:25:00 AM

سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کیلئے حکومت کی اہم ہدایات arynewurdu

سعودی عرب میں اقامہ قوانین کے مطابق وہ غیر ملکی کارکن جو اپنے اہل خانہ کے ہمراہ مملکت میں مقیم ہیں ان کے ہر فرد کے لیے ماہانہ 400 ریال

مذکورہ فیس کو عربی میں ’رسوم المرافقین‘ کہا جاتا ہے۔ یہ فیس ادا کرنا لازمی ہے۔ فیس ادا کیے بغیر اقامہ تجدید نہیں کرایا جا سکتا۔رواں برس سعودی حکومت کی جانب سے اقامہ کی مدت میں اختیاری تجدید کی سہولت فراہم کی گئی ہے جس کے تحت اقامہ سہ ماہی و شش ماہی بنیاد پر بھی تجدید کرایا جا سکتا ہے۔

اس حوالے سے ایک شخص نے دریافت کیا کہ ’اقامہ چھ ماہ سے ایکسپائر ہے، کفیل نے تجدید کرانے کے لیے فیس جمع کرائی تو فیملی فیس کی مد میں 19 ہزار سے زائد رقم جمع کرانے کا کہا گیا، واضح رہے کہ فیملی مملکت میں نہیں ہے؟سعودی عرب میں اقامہ قوانین کے تحت ایسے تارکین جو اپنے اہل خانہ کے ہمراہ مقیم ہیں ان کے لیے لازمی ہے کہ وہ اپنے اہل خانہ پر عائد فیملی فیس ادا کریں۔

مزید پڑھ: ARY News Urdu »

PM Shehbaz Sharif Government Failed | Karachi Roads | Breaking News

PM Shehbaz Sharif Government Failed | Karachi Roads | Breaking News #pmshehbazsharif #karachiroads #breakingnews Breaking News | Latest News | Pakistan Break... مزید پڑھ >>

ARYNEWSOFFICIAL Please mention directions here for us to know. صرف امام المہدی جو اس غزوے کی امامت کریں گے وہ جان لیں گے کہ محترم محمد ﷺ ہمارے ساتھ موجود ہیں اور دونوں شاید ایک دوسرے سے ملیں گے

سعودی عرب میں سونے کی قیمتوں میں کمی -عالمی مارکیٹ میں سونے کے نرخوں میں کمی کے اثرات سعودی گولڈ مارکیٹ پربھی پڑے، ڈالر کی قدر میں اضافے اور امریکی سرکاری بانڈز کے منافع کی

پنجاب کے دو اضلاع کے سکولوں کے شیڈول میں توسیعنجاب کے دو ضلاع کے 'اسکولوں' کے یڈول میں وسیع

یورپ میں پناہ کے لیے 2021 میں ریکارڈ تعداد میں درخواستیں جمع

سعودی عرب میں داخلے کیلئے اہم شرائط کیا ہیں؟ -کورونا وائرس کی وبا پھیلنے کے تقریباً ڈیڑھ سال بعد سعودی عرب نے ان غیر ملکیوں کو عمرے کی اجازت دینے کا اعلان کیا تھا جنہوں نے ویکسین ARYNEWSOFFICIAL Aslam o alikum, My name is Mujtaba and i want to introduce you to an amazing business opportunity that can change your life!. I am helping others to earn money online upto 100k pkr monthly whithin three months, if you are interested msg me on Whats 00966565351326 Thank u

سعودی عرب : اقامہ قوانین پرعمل درآمد کے کیا فوائد ہیں؟ -اقامہ قوانین کے تحت غیرملکی کارکنوں کے لیے لازمی ہے کہ وہ قوانین کی سختی سے پابندی کریں، قانون پر عمل کرنا ہر ایک کی ذمہ داری ہے

سعودی عرب : سرکاری اداروں میں داخلے پر پابندی کا خدشہ -سعودی عرب میں سرکاری اور نجی اداروں میں جانے کے لیے بوسٹر ڈوز ضروری قرار دے دی گئی ہے منگل یکم فروری2022 سے فیصلے

کی فیس عائد کی جاتی ہے۔ مذکورہ فیس کو عربی میں ’رسوم المرافقین‘ کہا جاتا ہے۔ یہ فیس ادا کرنا لازمی ہے۔ فیس ادا کیے بغیر اقامہ تجدید نہیں کرایا جا سکتا۔ رواں برس سعودی حکومت کی جانب سے اقامہ کی مدت میں اختیاری تجدید کی سہولت فراہم کی گئی ہے جس کے تحت اقامہ سہ ماہی و شش ماہی بنیاد پر بھی تجدید کرایا جا سکتا ہے۔ اس حوالے سے ایک شخص نے دریافت کیا کہ ’اقامہ چھ ماہ سے ایکسپائر ہے، کفیل نے تجدید کرانے کے لیے فیس جمع کرائی تو فیملی فیس کی مد میں 19 ہزار سے زائد رقم جمع کرانے کا کہا گیا، واضح رہے کہ فیملی مملکت میں نہیں ہے؟ سعودی عرب میں اقامہ قوانین کے تحت ایسے تارکین جو اپنے اہل خانہ کے ہمراہ مقیم ہیں ان کے لیے لازمی ہے کہ وہ اپنے اہل خانہ پر عائد فیملی فیس ادا کریں۔ عائد فیملی فیس رواں برس چار سو ریال ماہانہ کی بنیاد پر وصول کی جا رہی ہے۔ فیس کی ادائیگی کے بغیر یہ ممکن نہیں کہ کسی غیرملکی کارکن کا اقامہ تجدید کرایا جا سکے۔ رواں برس سے فراہم کی جانے والی سہولت کے تحت یہ ممکن ہے کہ سہ ماہی بنیاد پر بھی فیملی فیس ادا کرنے کے بعد اتنی ہی مدت کے لیے اقامہ تجدید کرایا جا سکتا ہے۔ اقامہ قوانین کے تحت یہ لازمی ہے کہ تارکین اپنے اقامہ کی تجدید سے قبل اہل خانہ پر ماہانہ بنیاد پر عائد فیس ادا کریں جس کے بعد ہی اقامہ تجدید کرایا جا سکتا ہے۔ ایسے افراد جو اپنے اہل خانہ کو خروج و عودہ یعنی ایگزٹ ری انٹری ویزے پر بھیجتے ہیں اور واپس نہیں بلاتے وہ اس امر سے ناواقف ہوتے ہیں کہ جب تک اہل خانہ کا اقامہ کینسل نہ کرایا جائے ان کے حوالے سے عائد فیس جاری رہتی ہے۔ اہل خانہ پرعائد فیس اس وقت ختم ہوتی ہے جب جوازات کے سسٹم میں ان کے اقامے کو کینسل کر دیا جائے۔ موجودہ حالات میں جب کہ حکومت کی جانب سے مملکت سے باہر گئے ہوئے اقامہ ہولڈرز کے خروج و عودہ کی مدت میں مفت توسیع کی جا رہی ہے اس دوران اہل خانہ کے اقامے کی مدت میں بھی ازخود توسیع کر دی جاتی ہے تاہم ان پرعائد ماہانہ فیس برقرار رہتی ہے۔ وہ افراد جنہوں نے اپنے اہل خانہ کو خروج و عودہ پر بھیجا ہے اگروہ انہیں بلانا نہیں چاہتے تو انہیں چاہیے کہ وہ ان کے اقامے کینسل کرائیں۔ جس کے لیے ابشر سسٹم پر موجود ’خرج ولم یعد‘ کے آپشن کو استعمال کرتے ہوئے اقامہ کینسل کراسکتے ہیں۔ جس کے بعد ان پرعائد ماہانہ فیس ختم ہوسکتی ہے وگرنہ ماہانہ فیس اس وقت تک جاری رہے گی جب تک اقامہ کینسل نہیں ہو جاتا۔ ایک شخص نے استفسار کیا ہے کہ اقامہ اور خروج وعودہ کی مدت میں تاحال توسیع نہیں ہوئی۔ کیا خود کار طریقے سے توسیع کا انتظار کریں؟ سعودی حکومت کی جانب سے ایسےاقامہ ہولڈرز جو چھٹی پر اپنے وطن گئے ہوئے ہیں اور کورونا کی وجہ سے عائد ہونے والی سفری پابندی کے باعث مملکت نہیں آ سکے ان کے اقامے اور خروج و عودہ کی مدت میں 31جنوری 2022 تک توسیع کی جائے گی۔ حکومتی اعلان کے مطابق مفت توسیع مرحلہ وار طریقے سے کی جا رہی ہے جس کے لیے نیشنل ڈیٹا بیس سینٹر کے تعاون و اشتراک سے یہ عمل جاری ہے۔ وہ افراد جن کے اقاموں اور خروج و عودہ کی مدت میں مفت اور خودکار توسیع تاحال نہیں ہوئی انہیں چاہیے کہ وہ انتظار کریں کیونکہ حکومتی اعلان کے بعد اس پر عملدرآمد جاری ہے۔