ایک پاکستانی ڈاکٹر نے خود ساختہ تنہائی کیسے کاٹی

کورونا وائرس: ایک پاکستانی ڈاکٹر نے سیلف آئسولیشن یا خود ساختہ تنہائی کیسے کاٹی؟

08/04/2020 4:29:00 AM

کورونا وائرس: ایک پاکستانی ڈاکٹر نے سیلف آئسولیشن یا خود ساختہ تنہائی کیسے کاٹی؟

کورونا وائرس ایک شخص سے دوسرے میں منتقل ہو سکتا ہے لہذا اگر کسی کو شک ہے کہ اُس کا رابطہ کورونا سے متاثر کسی شخص سے رہا ہے یا اُس میں وائرس کی علامات ہیں تو ضروری ہے کہ وہ سیلف آئسولیشن یا خود تنہائی میں چلا جائے۔

BBC News اردوتنہائی کے دنڈاکٹر عبداللہ سیلف آئسولیشن میں گئے تو انھوں نے اپنے آپ کو گھر کی بالائی منزل پر اپنے بیڈروم میں محدود کر لیا اور اہلیہ اور بچے کو میکے بھیج دیا۔ انھوں نے مکان کی نچلی منزل میں رہائش پذیر اپنے والدین سے بھی رابطہ منقطع کر لیا۔

مسجد نبوی اور مسجد اقصیٰ کو نمازیوں کے لیے کھول دیا گیا - ایکسپریس اردو مسجد نبویﷺ کو عام شہریوں کیلئے کھول دیا گیا، احتیاطی تدابیر کے ساتھ نماز فجر ادا نیپال انڈیا تنازع: نئے نقشے کی منظوری تعلقات پر کیسے اثر انداز ہوگی؟

’ڈاکٹرز کی روٹین عام افراد سے الگ ہوتی ہے۔ وہ اکثر شفٹوں میں کام کرتے ہیں اور کبھی کبھی ویک اینڈ پر بھی ہسپتال میں ہوتے ہیں۔ جب تمام دن مریضوں کے درمیان گزارنے والے ڈاکٹر کو خود تنہائی میں جانا پڑا تو وقت کاٹنا عذاب ہو گیا۔ ایسا لگنے لگا کہ کچھ کرنے کو ہی نہیں ہے۔ ایک وقت تھا جب میں فرصت کے لمحات گزارنے کے نت نئے آئیڈیاز سوچا کرتا تھا لیکن جب وقت ملا تو اُس کا کوئی مصرف ہی سمجھ نہیں آیا۔‘

مارننگ واکڈاکٹر عبداللہ بتاتے ہیں سیلف آئسولیشن میں فرصت کے لمحات ملے تو اںھوں نے سب سے پہلا کام یہ کیا کہ اپنی مارننگ واک کا روٹین بحال کیا۔’ہم سب جانتے ہیں کہ روزانہ ورزش صحت کے لیے کتنی مفید ہے۔ لیکن مجھے روزمرہ مصروفیات اور سستی کی وجہ سے اکثر ورزش کے لیے وقت نہیں ملتا تھا۔ سیلف آئسولیشن کا ایک فائدہ یہ ہوا کہ مجھے ایکسرسائز کے ذریعے اپنی صحت کا خیال رکھنے کا موقع مل گیا۔ کمرے سے باہر نکلنا تو ممکن نہیں تھا لہذا میں نے اپنے بیڈروم میں ہی مارننگ واک شروع کر دی۔‘

ڈاکٹر عبداللہ کے مطابق سیلف آئسولیشن میں اُنھیں باقاعدگی سے نماز ادا کرنے کا موقع بھی ملا جس سے اُنھیں روحانی سکون حاصل ہوا۔جو ملے کھا لوڈاکٹر عبداللہ کے بقول سیلف آئسولیشن کا مطلب مکمل تنہائی ہے۔ اِس کا سب سے تکلیف دہ تجربہ اُس وقت ہوا جب اُنھیں دن میں تین دفعہ اکیلے کھانا کھانا پڑا۔ وہ بتاتے ہیں کہ بچپن سے وہ اپنے اہلخانہ کے ساتھ اکھٹے کھانا کھاتے آئے ہیں تو یہ تجربہ کچھ عجیب سا لگا۔

’ایک مخصوص وقت پر گھر والے میرے کمرے کے باہر کھانا رکھ جاتے تھے جو میں اکیلے بیٹھ کر کھا لیا کرتا تھا۔ اِس طرح مجھے فرمائش کر کے والدہ سے من پسند کھانا بنوانے کا موقع نہیں مل سکا۔ گھر میں جو بھی پکا ہوتا تھا مجبوراً وہی کھانا پڑتا تھا۔‘سیلف آئسولیشن جیل نہیں

ڈاکٹر عبداللہ کا کہنا ہے کہ بحیثیت ایک ڈاکٹر اُنھیں اندازہ ہے کہ سیلف آئسولیشن کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے کتنی ضروری ہے لیکن اکثر لوگ اِس کے نام سے ہی خوف کھاتے ہیں۔’کچھ لوگ سمجھتے ہیں کہ سیلف آئسولیشن کا مطلب ہے کہ آپ کو پکڑ کر کمرے میں قید کر دیا جائے گا۔ یہ کوئی جیل نہیں ہے۔ یوں سمجھ لیں جیسے کچھ لوگ رمضان کے مہینے میں اعتکاف میں بیٹھتے ہیں اور باہر کی دنیا سے اپنا تعلق محدود کر لیتے ہیں، یہ بھی ایسا ہی ہے۔ لوگوں کو کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے میں اِس طریقہ کار کی اہمیت کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔‘

بیٹے کی یادڈاکٹر عبداللہ اقبال کہتے ہیں کہ سیلف آئسولیشن میں انھیں اپنا چار ماہ کا بیٹا ربانی بہت یاد آیا۔’میرا ایک ہی چھوٹا سا پیارا سا بیٹا ہے۔ چھوٹے بچے تو ہوتے ہی ایسے ہیں کہ آپ اُن سے دور نہیں رہ سکتے لیکن کیا کریں مجبوری تھی۔ ڈاکٹر نہ بھی ہو تو کون باپ چاہے گا کہ اُس کی وجہ سے اُس کی اولاد وائرس سے متاثر ہو۔ اِسی لیے دور رہنا پڑا۔‘

سیاہ فام کی ہلاکت: امریکہ کے مختلف شہروں میں کرفیو نافذ مگر مظاہرے جاری چینی سکینڈل: پیپلز پارٹی نے وزیراعظم عمران خان کی گرفتاری کا مطالبہ کردیا چینی بحران کے ذمہ داروں کے خلاف بلا امتیاز کارروائی ہوگی، وزیر خارجہ

پرانے مشغلےڈاکٹر عبداللہ بتاتے ہیں کہ سیلف آئسولیشن میں وقت ملا تو انھیں اپنے پرانے مشغلے دوبارہ شروع کرنے کا موقع مل گیا۔’میں چونکہ ڈاکٹر ہونے کے ساتھ ساتھ شوقیہ ویب ڈیویلپر اور ولاگر بھی ہوں تو خود تنہائی کے دوران انٹرنیٹ پر میرا وقت اچھا گزرا۔ اِس دوران میں اپنا یوٹیوب چینل چلاتا رہا اور اُس کے لیے کانٹینٹ تیار کرتا رہا۔‘

عبداللہ اقبال نے مزید بتایا کہ خود تنہائی کے دوران وہ ٹی وی چینلز دیکھ کر اور کمپیوٹر پر ویڈیو گیمز کھیل کر دل بہلاتے رہے۔مریض پیچھا نہیں چھوڑتےڈاکٹر عبداللہ اقبال بتاتے ہیں کہ اُن کا اپنے مریضوں کے ساتھ انتہائی قریبی تعلق ہے۔ یہی وجہ ہے کہ مریض اُن سے مسلسل رابطے میں رہتے ہیں اور معمولی بیماریوں کے لیے فون پر ہی مشورہ کر لیتے ہیں۔ پہلے اکثر وقت کی کمی کی وجہ سے اُنھیں مریضوں پر مکمل توجہ دینے کا وقت نہیں مل پاتا تھا لیکن سیلف آئسولیشن کے دوران اُنھیں مریضوں کی تفصیلی رہنمائی کا موقع ملا۔

’اِس کے علاوہ مجھے میڈیکل کے شعبے سے منسلک کُتب بھی پڑھنے کا موقع ملا۔ مجھے تجسس تھا کہ کورونا وائرس پر دنیا پھر میں کیا ریسرچ کی جا رہی ہے اور بین الاقومی صحت کا منظرنامہ کس طرح تبدیل ہو رہا ہے۔ انٹرنیٹ کے ذریعے مجھے یہ سب جاننے کا موقع ملا۔‘اپنا خیال رکھیں

ڈاکٹر عبداللہ اقبال کا کہنا ہے کہ سیلف آئسولیشن کے دوران سب سے مشکل مرحلہ ڈپریشن پر قابو پانا ہوتا ہے۔’اہم بات یہ ہے کہ جو شخص سیلف آئسولیشن میں ہے وہ کورونا وائرس کی تباہ کاریوں کی خبروں سے دور رہے۔ میں خود تنہائی کے دوران ٹی وی نیوز کم دیکھتا تھا اور اپنے آپ کو مصروف رکھنے کی کوشش کرتا تھا۔ میں نے بذریعہ فون دوستوں اور رشتہ داروں سے رابطہ قائم رکھا تاکہ دل لگا رہے۔‘

ڈاکٹر عبداللہ اقبال کا مشورہ ہے کہ سیلف آئسولیشن کے دوران بیماری کی علامات پر کڑی نطر رکھی جائے۔ اگر ہلکا بخار یا گلا خراب ہو تو اُس کے لیے ادویات استعمال کی جائیں تاکہ مرض پر قابو پایا جا سکے۔اُن کے مطابق ضروری ہے کہ متاثرہ شخص اپنی سانس پر نظر رکھے۔ اگر کسی بھی وقت سانس لینے میں دشواری پیش آئے تو ایسی صورت میں ڈاکٹر سے مشور کرنا چاہیے۔

مزید پڑھ: BBC News اردو »

❤️ Check out this amazing story of Fight against COVID19 by Dr. Hidayatullah BBC News Check out this amazing story of Fight against Coronavirus by Dr. Hidayatullah. BBCUrdu وباؤں ڈراؤنی ہواؤں کےدور میں سیلف آئیسولیش (خود تنہائی ) کا فائیدہ صرف سمجھ اور سہولیات رکھنےوالوں کو پہنچتاہے اگرچہ کئی اس کےشکار بھی ہوۓہیں تاہم فالتو تصور غریب آبادیوں کے مکین انسان کہاں تخلیہ میں رہیں اور بچوں کو کون کھلاۓ؟ دہائیوں سے دیکھتا ہوں کہ نشیب کو ہی ڈوبنا پڑتا ہے۔

mara salam pakistn ky dr ko

فرانس اور امریکا میں ایک دن میں کرونا سے 2820 افراد ہلاکواشنگٹن: وبائی مرض کروناوائرس نے امریکا اور فرانس میں شہریوں کی زندگی اجیرن کردی، ایک دن میں کرونا سے دونوں ممالک میں اموات کی تعداد 2820 ریکارڈ کی گئی۔ May Allah protected to all Muslims brother. All people want is to stay at home and protect themselves Ya Allah reham!

‘کابل میں دہشتگرد حملے سے پاکستان کوجوڑنے کی بھارتی کوشش شرانگیز ہے’'کابل میں دہشتگرد حملے سے پاکستان کوجوڑنے کی بھارتی کوشش شرانگیز ہے' مزیدپڑھیئے: AajNews AajUpdates

حکومت لاک ڈاؤن کی صورتحال میں عوام کی مشکلات سے بخوبی آگاہ ہے، علی امین گنڈاپورحکومت لاک ڈاؤن کی صورتحال میں عوام کی مشکلات سے بخوبی آگاہ ہے، علی امین گنڈاپور CoronavirusLockdown COVID19Pakistan StayHomeStaySafe StayHomeSaveLives CoronaFreePakistan آگاھ ئی ہوگی کریگی کچھ نہیں

بھارت میں مسلمان حاملہ خاتون کو اسپتال میں داخل کرنے سے انکار، نومولود دم توڑ گیاراجستھان کے ایک سرکاری اسپتال پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ اسپتال انتظامیہ نے ایک حاملہ خاتون کو مسلمان ہونے کی وجہ سے داخل کرنے سے منع کر دیا۔ Shame جب تک ہمارے اپنی ذات پے نہیں گزری گی ہم کو مسلمانوں کے ساتھ مظالم کا احساس نہیں ہوگا Its too sad

کروناوائرس: امریکا میں 10ہزار اموات، دنیا میں 73ہزار سے زائدہلاکتیںکروناوائرس: امریکا میں 10 ہزار اموات، دنیا میں 73 ہزار سے زائد ہلاکتیں SamaaTV CoronaVirusPakistan CoronaVirusUpdate CoronavirusOutbreak CoronavirusPandemic

کورونا: پاکستان میں کیسز کی تعداد تین ہزار سے بڑھ گئی، 50 ہلاک،دنیابھر میں 12 لاکھ سے زائد افراد متاثر،ہلاکتیں 65 ہزار سے زائد ریکارڈاسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد3277 ہو گئی ہے جب کہ50 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔دوسری جانب کورونا وائرس کے