انڈیا: ماسک نہ پہننے پر ’جارج فلائیڈ طرز‘ کا مبینہ پولیس تشدد

ماسک نہ پہننے کی سزا: گھٹنا تو رکھا پر مارا نہیں

06/06/2020 5:58:00 PM

ماسک نہ پہننے کی سزا: گھٹنا تو رکھا پر مارا نہیں

انڈین ریاست راجھستان کے شہر جودھپور سے سامنے آنے والی مبینہ پولیس تشدد کی ایک ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک پولیس اہلکار ماسک نہ پہننے پر ایک شہری کی گردن کو گھٹنے سے دبا رہا ہے، لگ بھگ اسی طرح جیسے امریکی شہری جارج فلائیڈ کی گردن دبائی گئی تھی۔

جودھپور کے پولیس کمشنر پرپھل کمار نے بی بی سی کو بتایا کہ ’دو پولیس اہلکار اپنی ڈیوٹی کر رہے تھے جس دوران یہ واقعہ پیش آیا۔ پولیس اہلکار کی رپورٹ کے مطابق ملزم نے کارِ سرکار میں مداخلت کی اور اب وہ عدالتی تحویل میں ہے۔‘انڈیا میں سوشل میڈیا صارفین جودھپور سے سامنے آنے والی ویڈیو کو جارج فلائیڈ کی طرز کا ایک واقعہ قرار دے رہے ہیں۔

سربرینیکا میں مسلمانوں کی نسل کشی، شہدا کو بھولے اور نہ ہی بھولیں گے: اردوان پی آئی اے کی دبئی، شارجہ اور ابوظہبی کے لیے پروازیں شروع - ایکسپریس اردو دس سال میں پاکستان کو ٹیکنالوجی سپر پاور بنانا اصل منزل ہے: فواد چودھری

ویوک مادان نامی صارف نے لکھا کہ ’کیا ہماری پولیس امریکی پولیس سے کم ہے۔ جودھپور پولیس کا اہلکار ماسک نہ پہننے پر شہری کی گردن کو اپنے گھٹنے سے دبا رہا ہے۔ مگر ہماری اہلیت دیکھیے، یہ شخص جارج فلائیڈ کی طرح ہلاک نہیں ہوا۔‘@tweetvekتشدد کا نشانہ بننے والا شہری کون ہے؟

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں جس شخص پر تشدد کیا جا رہا ہے وہ پیلی رنگ کی شرٹ پہنے ہوئے ہے۔ اس شخص کا نام مکیش کمار پرجاپت بتایا جا رہا ہے۔تین بچوں کے والد مکیش پرجاپت مزدوری کرتے ہیں اور جمعرات کے روز بھی وہ مزدوری کرنے کے غرض سے گھر سے نکلے جس کے بعد مبینہ طور پر ماسک نہ پہننے کے معاملے پر پولیس اہلکاروں اور ان کے درمیان تکرار ہو گئی۔

مکیش کے بڑے بیٹے رشی نے بی بی سی کو بتایا کہ لاک ڈاؤن کے باعث ان کے اہلخانہ کہ پاس آمدن کا کوئی ذریعہ نہیں ہے اور اسی لیے ان کے والد کچھ پیسے کمانے کے لیے گھر سے باہر نکلے تھے۔اس ویڈیو نے پولیس اہلکاروں کے اس عمل پر کافی سوالات اٹھائے ہیں اور متعدد صارفین اسے ’پولیس تشدد‘ بھی قرار دے رہے ہیں۔

نندا کمار نامی ایک صارف نے اس واقعے کی ویڈیو شیئر کرتے ہوئے سوال کیا کہ کیا یہ مغرب (ویسٹ) کا اثر تو نہیں؟@nandu0910پولیس اہلکار کا موقفاس پورے معاملے پر بی بی سی نے واقعے میں ملوث کانسٹیبل ہنومان گودارا سے بات کی جن کے مطابق یہ واقعہ جمعرات کو دن 12 بجے کے لگ بھگ پیش آیا تھا۔

کانسٹیبل گودارا کے مطابق ملزم مکیش پرجاپت ماسک کے بغیر ٹہل رہے تھے جب انھوں نے ملزم کی اپنے فون سے تصویر لی۔کانسٹیبل گودارا بتاتے ہیں کہ ’مکیش پرجاپت میرے سے بحث کرنے لگے جس پر میں نے ان کی ویڈیو بنانا شروع کر دی۔‘ ہنومان گودارا کے بقول مکیش پرجاپت نے ان کا فون چھیننے کی کوشش کی اور اس دوران ان کا گریبان بھی پکڑا۔

البتہ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر چند صارفین نے ان تصاویر کی جانب بھی اشارہ کیا جن میں مکیش کو ماسک پہنے دیکھا جا سکتا ہے۔’میرے بیٹے کے کپڑے خون میں لت پت اور ہاتھ فریکچر تھا‘تصویر کے کاپی رائٹSocial MediaImage captionپولیس نے دعوی کیا ہے کہ ملزم مکیش پرجاپت نے ویڈیو بنانے پر ان کا فون چھیننے کی کوشش کی اور اس دوران ان کا گریبان بھی پکڑا

اس حکومت کو لانے والے بھی جرم کے ذمہ دار ہیں، مولانا فضل الرحمان - ایکسپریس اردو آیا صوفیہ، نیا جنگ کا میدان؟ چین نے کار بنانے والی دنیا کی بڑی کمپنیوں کو پیچھے چھوڑ دیا

مکیش پرجاپت کے والد ماہادیو پرجاپت نے بتایا کہ پولیس نے اس واقعے کی اطلاع دی تو وہ تھانے پہنچے۔انھوں نے کہا ’میرے بیٹے کے کپڑے خون میں لت پت اور ہاتھ فریکچر تھا، میں نے پولیس سے فریاد کی مگر انھوں نے ایکسرے تک نہیں کرایا۔‘ماہادیو پرجاپت کے مطابق ’ہم تو اب سکون سے بیٹھے ہیں، خاموشی سے بیٹھے ہیں ہمارے پاس تو کھانے کے بھی پیسے نہیں، ہم اور کر بھی کیا کر سکتے ہیں۔‘

مکیش پرجاپت کے والد ماہادیو کا موقف ہے کہ مکیش نے ماسک پہننا ہوا تھا، اس کے باوجود بھی پولیس اہلکار نے مکیش سے پیسے مانگے اور نہ دینے پر انھیں خوب پیٹا۔سوشل میڈیا پر اس واقعے سے جڑے حقائق پر صارفین میں اب بھی اضطراب پایا جاتا ہے۔ایک طرف کچھ صارفین وہ ویڈیو شیئر کر رہے ہیں جہاں مکیش کو پولیس اہلکار پر ہاتھ اٹھاتے اور ان کا گریبان پکڑتے دیکھا جا سکتا ہے۔

ایک صارف نے پولیس کے موقف کی تائید کی اور لکھا کہ ملزم نے پہلے پولیس اہلکاروں پر حملہ کیا۔@Bap_indiaaاس واقعے کی مکمل تحقیقات کے بعد ہی حقائق معلوم ہو پائیں گے لیکن فی الوقت صارفین راجھستان پولیس کا امریکہ کی پولیس سے موازنہ کرنے میں مصروف ہیں اور پولیس تشدد کے واقعات کی مذمت کرتے بھی نظر آ رہے ہیں۔

مزید پڑھ: BBC News اردو »

India key pitto, is khabar main bhee india ko bachraha hai Ohh stupid India Shame on India. یقیننًایہ شخص مسلمان ہو گا کیا میرج ہال سے جڑے لاکھوں لوگ پاکستان کے شہری نہیں ہیں ۔ ہم ایس او پیز کے تحت اپنا رقزگار چلانا چاہتے پیں ہماری سفید پوشی کا بھرم رہنے دیا جائے۔ ہماری عزت نفس کا جنازہ نہ نکالا جائے۔ ہمیں خداراکاروبار کرنے کی اجازت دی جائے۔

💔🥺 ماسک نہ پہنے کی یہ سزا بالکل ٹھیک ہے ایسے گدھوں کا یہی علاج ہے انڈین پولیس بہت زیادہ گندی غلیظ ہے اسکی جیب میں جو پیسہ ڈالا وہ اس مزدور غریب کا تھا White supremacists and hindu nationals are similar and they are replacing Old Hitler's ideology.. کرونا سے مرے گا یا نہیں لیکن اس طرح گٹھنا رکھنے سے ضرور مرے گا انشاءاللہ

Sab niklo or police ko sabak sikha do وہ جو چھتر اور ڈانگوں سے تواضع کرتے ہیں ہر روز اپنے شہریوں کی، اس سے تو بہتر ہی ہے یہ طریقہ۔ جاہلوں کے نذدیک یہی طریقہ ہے عقلمند ہوتے تواسے ماسک پہناتے نا کے تشدد کرتے۔ Ain't there humanity?

وزیراعلیٰ پنجاب کی صوبے میں ماسک پہننے کی پابندی پر سختی سے عمل کی ہدایتوزیراعلیٰ پنجاب کی صوبے میں ماسک پہننے کی پابندی پر سختی سے عمل کی ہدایت ARYNewsUrdu Khud isne kisi video mai nahi pehna hota mask حکومت پاکستان میرج ہال ورکرز پہ رحم کرے۔ سفید پوش طبقہ ہیں کسی کے سامنے ہاتھ بھی نہیں پھیلا سکتے۔ ہماری گھروں کے چولہے پچھلے تین ماہ سے بند ہیں ۔ ایس او پیز کے تحت ہمیں کام کرنے دیا جائے۔ سب شعبہ جات کھول دئیے ہیں آپ نے ہم کیوں بھوکے مریں ۔

میکسیکو: ماسک نہ پہننے پر پولیس کی بھیانک سزا، شہری ہلاکمیکسیکو: ماسک نہ پہننے پر پولیس کی بھیانک سزا، شہری ہلاک ARYNewsUrdu

لاہور پولیس کا ایک اور افسر کورونا کیخلاف لڑائی میں جان کی بازی ہار گیالاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور میں کورونا وائرس کے خلاف فرنٹ لائن پر لڑنے والا ایک اور پولیس اہلکار جان کی بازی کا ہار گیا۔ پاکستان پولیس نامی ایک ٹویٹر

جارج فلائیڈ ہلاکت: احتجاج اور کرفیو کے دوران پولیس کی بربریت کی مزید ویڈیوزسیاہ فام امریکی شہری جارج فلائیڈ کی پولیس کے ہاتھوں موت کے بعد سے جاری ملک گیر احتجاجی مظاہروں کے دوران پولیس کی بربریت کی بہت سی ویڈیوز سامنے آئی ہیں۔ Please raise your voice for the rights of university students please we cant afford online education system we want smester break please SayNoToOnlineClasses SayNoToOnlineExams Latest Situation in America . امریکہ میں لوٹ مار کے منظر۔ ایک سیاہ فام نے بینک لوٹ کر پیسہ عوام میں لٹا دیا ۔ کہاں ہیں وہ لبرل جو کہتے تھے انگریز بہت مہذب ہیں

امریکا، پولیس کی مظاہرین پر تشدد کی ویڈیو وائرل، 2 افسران معطلامریکا میں پولیس کے ہاتھوں سیاہ فام شخص جارج فلائیڈ کی ہلاکت کے بعد جاری احتجاجی

امریکا، مینیاپلیس کی پولیس میں فوری اصلاحات کی منظوریامریکا کے شہر مینیاپلیس کی سٹی کونسل نےپولیس میں فوری اصلاحات کی منظوری دے دی۔میڈیارپورٹس کے مطابق سیاہ فام شہری جارج فلائیڈ کی موت کے بعد مینیاپلیس میں قانون