امریکا کا اپنے شہریوں کو یوکرین چھوڑنے کا مشورہ

26/01/2022 9:49:00 PM

امریکا کا اپنے شہریوں کو یوکرین چھوڑنے کا مشورہ

امریکا کا اپنے شہریوں کو یوکرین چھوڑنے کا مشورہ

11:49 PM, 26 Jan, 2022, بین الاقوامی, واشنگٹن: یوکرین میں امریکی سفارتخانے نے اپنے شہریوں کو یوکرین چھوڑنے کا مشورہ دے دیا۔ امریکی سفارت خانے سے جاری

واشنگٹن: یوکرین میں امریکی سفارتخانے نے اپنے شہریوں کو یوکرین چھوڑنے کا مشورہ دے دیا۔امریکی سفارت خانے سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یوکرین کی سیکیورٹی صورتحال غیر متوقع ہے۔ یوکرین کی سیکیورٹی صورتحال کسی وقت بھی خراب ہوسکتی ہے لہٰذا امریکی شہری یوکرین سے جانے پر غور کریں۔

دوسری جانب فرانس نے روس اور یوکرین کے درمیان جاری کشیدگی کم کروانے کی کوششیں شروع کردیں۔خبر ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق روس اور یوکرین کے وفد کی پیرس میں ملاقات ہوئی۔ روسی وفد کی نمائندگی نائب وزیراعظم دیمتری کوزک نے کی جبکہ یوکرین وفد کی نمائندگی یوکرینی صدر کے مشیر نے کی۔ اس ملاقات میں فرانس اور جرمنی کے نمائندے بھی شریک تھے۔

مزید پڑھ: Neo News Urdu »

وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے لاہور ائیرپورٹ پر صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا استقبال کیا

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی لاہور آمد وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے لاہور ائیرپورٹ پر صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا استقبال کیا صوبائی وزراء میاں اسلم مزید پڑھ >>

روس کی جانب سے حملے کا خطرہ برطانوی سفارتی عملے کا یوکرین سے انخلابرطانیہ نے روس کی جانب سے ممکنہ حملے کے پیش نظر یوکرین سے اپنے سفارتی عملے کا انخلا شروع کردیا ہے۔برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق برطانوی حکام کا کہنا

پی ڈی ایم کا 23 مارچ کو مہنگائی مارچ کرنے کا فیصلہ - ایکسپریس اردوپی ڈی ایم کا غیرملکی (فارن) فنڈنگ کیس کی روزانہ کی بنیاد پر سماعت کرنے کا مطالبہ مہنگائی مارچ 😆 وہ بھی اِن کا ،👇 ابھی ٹھنڈ بھت ہے🤪

کراچی پولیس کا اسٹریٹ کرائم میں گرفتار ملزمان کا میڈیکل ٹیسٹ کرانےکا فیصلہمیڈیکل ٹیسٹ کے ذریعے ملزمان کے نشے کی لت میں مبتلا ہونےکا پتہ لگایا جائےگا

وزیراعظم کا تین فروری کو دورہ چین کا امکان - ایکسپریس اردووزیراعظم کا تین فروری کو دورہ چین کا امکان مزید پڑھیں: ExpressNews

عاصمہ شیرازی کا کالم: آخری قہقہہ کس کا؟ - BBC News اردواحتساب کا بیانیہ کبھی چین کی طرح پھانسی گھاٹ پر لٹکتے بدعنوانوں، کبھی سعودی عرب کے بدعنوانی کے خلاف سفاکانہ نظام اور کبھی ملائیشیا اور ترکی کی مثالوں کو کارآمد بنا کر پیش کیا گیا۔ نہیں آزمایا گیا تو صرف انصاف، آئین اور جمہوریت کا نظام: عاصمہ شیرازی کا کالم The way Asma is bad mouthing about Imran Khan in her columns since last many months tells you that journalists have openly declared which parties they belong to. Asma is obviously missing all those government funded recreational activities that she use to enjoy in PMLN time. عاصمہ شیرازی کی کالم پڑھنے میں کوئی دلچسپی نہیں ہے وہ ایک کرپٹ قلم فروش بے ایمان صحافی ہے جو پیسے کی خاطر کچھ بھی کر سکتی ہے انتہائی گراہوا معیار ہے عاصمہ شیرازی کے قہقہ کا۔بی بی سی کامعیار اتنا گرا ہوا ہے معلوم نہیں تھا اس جاہل خاتون کے ذاتی حملےجو کہ سرکاری عیاشیاں ختم ہونے پر ہے آپ لوگوں کے پاس اچھے معیاری لکھاری مر گئے ہیں جوان ٹکے ٹوکری کالموں کوچھاپ کر خوش ہوتےہو انسے انگلینڈ کے لیے کالم لکھواو

ٹھٹھہ میں کشتی الٹنے کا واقعہ: پاک نیوی کا چوتھے روز بھی آپریشن جاریٹھٹھہ میں کشتی الٹنے کا واقعہ: پاک نیوی کا چوتھے روز بھی آپریشن جاری arynewsurdu

فائل فوٹو واشنگٹن: یوکرین میں امریکی سفارتخانے نے اپنے شہریوں کو یوکرین چھوڑنے کا مشورہ دے دیا۔ امریکی سفارت خانے سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یوکرین کی سیکیورٹی صورتحال غیر متوقع ہے۔ یوکرین کی سیکیورٹی صورتحال کسی وقت بھی خراب ہوسکتی ہے لہٰذا امریکی شہری یوکرین سے جانے پر غور کریں۔ دوسری جانب فرانس نے روس اور یوکرین کے درمیان جاری کشیدگی کم کروانے کی کوششیں شروع کردیں۔ خبر ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق روس اور یوکرین کے وفد کی پیرس میں ملاقات ہوئی۔ روسی وفد کی نمائندگی نائب وزیراعظم دیمتری کوزک نے کی جبکہ یوکرین وفد کی نمائندگی یوکرینی صدر کے مشیر نے کی۔ اس ملاقات میں فرانس اور جرمنی کے نمائندے بھی شریک تھے۔ ایم کیو ایم کے کارکنوں پرر لاٹھی چارج،متحدہ کا یوم سیاہ کا اعلان فرانسیسی حکام کا کہنا ہے کہ کشیدگی میں کمی لانے کے لیے روس کا سفارتی طریقہ کار میں شامل ہونا امید افزا ہے۔ خبر ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق فرانس دونوں فریقین کو تشدد میں کمی کی راہ پر لانے کی کوشش کر رہا ہے۔ مصنف کے بارے میں .ہے کہ برطانوی سفارتکاروں کو کوئی خاص خطرہ نہیں ہے پھر بھی کیف میں تعینات عملے میں سے نصف کو واپس بلایا جارہا ہے۔ شیئر کریں:.پیپلزپارٹی اگر لانگ مارچ میں شرکت کرنا چاہے تو اُسے اجازت ہوگی، پی ڈی ایم (فوٹو : فائل) اسلام آباد: اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم نے حکومت کے خلاف 23 مارچ کو ہرصورت مہنگائی مارچ کرنے کا اعلان کردیا۔ ایکسپریس نیوز کے مطابق مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کی اسٹیئرنگ کمیٹی کا اجلاس ہوا، جس میں اپوزیشن جماعتوں کے قائدین اور رہنماؤں نے شرکت کی۔ مسلم لیگ ن کے نائب صدر اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں 8 سفارشات پیش کیں۔ جس میں لانگ مارچ کی تاریخ 23 مارچ سے تبدیل نہ کرنے، پیپلزپارٹی کو لانگ مارچ میں شرکت کی اجازت دینے کی تجویز کی گئی۔ ذرائع کے مطابق پی ڈی ایم نے لانگ مارچ کی تاریخ تبدیل نہ کرنے پراتفاق کیا اور ہر صورت 23 مارچ کو مختلف شہروں سے اسلام آباد پہنچنے کا فیصلہ کیا۔ پی ڈی ایم نے غیرملکی (فارن) فنڈنگ کیس کی روزانہ کی بنیاد پر سماعت کرنے اور عمران خان کو نااہل قرار دینے کا مطالبہ بھی کیا۔ اجلاس کے دوران پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمان نے تجویز دی کہ اگر اتحادی ایوان میں اپوزیشن کے موقف کی حمایت کرتے ہیں تو عدم اعتماد کی بھی ضرورت نہیں رہے گی۔ میاں نواز شریف نے مولانا فضل الرحمان کی تجویز کی حمایت کرتے ہوئے حکومت کی اتحادی جماعتوں سے فوری رابطے کرنے کی ہدایت بھی کی۔ ہم 23 مارچ کو اسلام آباد کا رخ کریں گے، مولانا فضل الرحمان اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ 23مارچ کو مہنگائی مارچ ہوگا اور ہم اسلام آباد کا رخ کریں گے، پی ڈی ایم نےمنی بجٹ کومسترد کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح یہ خود کھلونا ہے انہوں نے ملکی معیشت کو بھی کھلونا بنا دیا ہے، قوم بیدار ہے انشاء اللہ دودھ میں سے مکھی کی طرح انہیں اقتدار سے باہر کرے گی۔ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نےان کی مصنوعی ایمانداری کا آئینہ قوم کودکھا دیا کیونکہ درجہ بندی میں پاکستان 117سے140پرچلا گیا، اس حکومت نے ہر سیاست دان کو چور کہا اور اپنی کارکردگی پر کوئی توجہ نہیں دی۔ اُن کا کہنا تھا کہ مہنگائی نے عام آدمی کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے، حکمرانوں کوعوام کی چیخیں سنائی نہیں دے رہیں، نااہل حکومت کی وجہ سے کھاد کا بحران پیدا ہوا جس کی ماضی میں کبھی مثال نہیں ملی، کسان قطار میں لگ کر در در ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہے، پی ڈی ایم کسانوں کے مسائل کو ہر فورم پر اجاگر کرے گی۔ ’ای وی ایم اور صدارتی نظام کو مسترد کرتے ہیں‘ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم اس سے پہلے بھی ای وی ایم کو مسترد کرچکی ہے اور آج بھی واضح الفاظ میں اسے مسترد کرتی ہے کیونکہ یہ آر ٹی ایس کا دوسرا نام ہے، ایک خلائی تجویز صدارتی طرز حکومت کی باز گشت ہے، صدارتی نظام ملک میں آمریت کا دوسرا نام رہا ہے چاہے وہ ایوب ہو، یحیی ہو، ضیا ہو یا مشرف کے دور کا ہو، ہم اس ناپاک خواہش کو پورا نہیں ہونے دیں گے اور ہم آئین کے لئے اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔ ’تحریک عدم اعتماد سیاست کا حصہ ہے‘ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ تحریک عدم اعتماد سیاست کا حصہ ہے تاہم ابھی اس پر کوئی غور نہیں کیا گیا، موجودہ صورتحال میں اس حکومت کا خاتمہ لازمی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سانحہ مری پر عمران خان اور عثمان بزدار کو عہدوں سے مستعفیٰ ہونا چاہیے۔ انہوں نے ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ 23مارچ کے مہنگائی مارچ کے بعد کسی اور لانگ مارچ کی بات نہیں ہونی چاہیے۔ ’فارن فنڈنگ کیس میں الیکشن کمیشن پی ٹی آئی کو کالعدم اور عمران خان کو نااہل قرار دے‘ پی ڈی ایم سربراہ کا کہنا تھا کہ فارن فنڈنگ کیس میں عمران خان مجرم قرار پا چکے ہیں، عمران خان نے 22 کے قریب اکاؤنٹ چھپائے ہیں، تنخواہ چھپانے والے کو تو اقتدار سے باہر کیا گیا مگر اکاؤنٹ چھپانے والے کو تحفظ دیا جا رہا ہے، الیکشن کمیشن پی ٹی آئی کو کالعدم عمران خان کو نااہل قرار دے۔ واضح رہے کہ وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے اپوزیشن اتحاد سے اپیل کی ہے کہ وہ لانگ مارچ کی تاریخ 23 سے بڑھا کر 27 کردیں کیونکہ اسلام آباد میں او آئی سی کا اہم اجلاس اور یومِ پاکستان کی پریڈ ہوگی۔.۔ کراچی پولیس چیف کا کہنا ہےکہ شہر میں اسٹریٹ کرائم میں ملوث ملزمان کی بڑی تعداد نشےکی عادی ہے۔ مزید خبریں :.