اسلام آباد ہائیکورٹ کی ساکھ متاثر کرنے کی کوشش کی گئی: شاہ محمود قریشی

21/01/2022 12:34:00 PM

#DailyJang

Shah Mehmood Qureshi, Daily Jang

DailyJang

وزیرِ خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ کی ساکھ متاثر کرنے کی کوشش کی گئی، ایک آڈیو ٹیپ کئی دن موضوعِ بحث بنی، جب اس کا فرانزک کیا گیا تو وہ جعلی ثابت ہوئی۔

وزیرِ خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا قومی اسمبلی میں اظہارِ خیالوزیرِ خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ کی ساکھ متاثر کرنے کی کوشش کی گئی، ایک آڈیو ٹیپ کئی دن میڈیا کی زینت اور موضوعِ بحث بنی، جب اس کا فرانزک کیا گیا تو وہ جعلی ثابت ہوئی۔

قومی اسمبلی میں شاہ محمود قریشی نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ حلف نامے میں بتایا گیا کہ سابق چیف جسٹس ثاقب نثار نے ماتحت ججز کو احکامات جاری کیے، 3 سال پہلے واقعہ ہوتا ہے اور 3 سال تک کوئی بات، کوئی اظہار نہیں ہوتا۔ان کا کہنا ہے کہ 3 سال بعد یہ معاملہ سامنے آتا ہے، حلف نامہ آتا ہے اور اسٹوری بریک ہوتی ہے۔

مزید پڑھ: Daily Jang »

Qutb online with Bilal Qutb | 10 August 2022

#qutbonline #bilalqutb ➽ Subscribe to Samaa News ➽ https://bit.ly/2Wh8Sp8➽ Watch Samaa News Live ➽ https://bit.ly/3oUSwAPStay up-to-date on the major news ma... مزید پڑھ >>

اسلام آباد: سرکاری تعلیمی اداروں میں اسکول بیگ لانے کی جھنجھٹ ختمبچوں کے لیے اسکول بیگ کندھے پر اٹھا کر تعلیمی اداروں میں لیکر جانا ایک مشکل کام تصور کیا جاتا ہے ، پڑھیےafr12336 کی رپورٹSamaaTV

فیملی کی جانب سے ملک فیصل اکرم کی حرکتوں کی مذمت، سوالات بھی اٹھا دئیےامریکا میں یہودی عبادت گاہ میں چار افراد کو یرغمال بنانے والے بلیک برن کے رہائشی ملک فیصل اکرم کے بڑے بھائی نے اپنے بھائی کی حرکتوں کی مذمت کی ہے۔ تفصیلات جانیے: DailyJang

اسلام آباد: ان ڈور عوامی اجتماع پر 24 جنوری سے مکمل پابندی عائداسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی انتظامیہ نے ان ڈور عوامی اجتماع پر 24 جنوری سے مکمل طور پر پابندی عائد کردی ہے۔ اس سلسلے میں نوٹی فکیشن بھی جاری

اسلام آباد ہائیکورٹ: رانا شمیم پر فردِ جرم عائداسلام آباد ہائی کورٹ نے گلگت بلتستان کے سابق چیف جج رانا شمیم پر توہینِ عدالت کیس میں فردِ جرم عائد کر دی جبکہ صحافیوں کے خلاف کارروائی مؤخر کر دی۔

اسلام آباد میں کورونا کیسز میں اضافہ انڈور ڈائننگ پر پابندی عائدوفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں عالمی وبا کورونا وائرس کی شدت میں اضافے کے باعث انتظامیہ نے تمام طرح کی انڈور ڈائننگ پر پابندی عائد کر دی۔اس ضمن میں جاری نوٹی

اسلام آباد میں کورونا کیسز میں اضافہ انڈور ڈائننگ پر پابندی عائدوفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں عالمی وبا کورونا وائرس کی شدت میں اضافے کے باعث انتظامیہ نے تمام طرح کی انڈور ڈائننگ پر پابندی عائد کر دی۔اس ضمن میں جاری نوٹی

خاص رپورٹ وزیرِ خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا قومی اسمبلی میں اظہارِ خیال وزیرِ خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ کی ساکھ متاثر کرنے کی کوشش کی گئی، ایک آڈیو ٹیپ کئی دن میڈیا کی زینت اور موضوعِ بحث بنی، جب اس کا فرانزک کیا گیا تو وہ جعلی ثابت ہوئی۔ قومی اسمبلی میں شاہ محمود قریشی نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ حلف نامے میں بتایا گیا کہ سابق چیف جسٹس ثاقب نثار نے ماتحت ججز کو احکامات جاری کیے، 3 سال پہلے واقعہ ہوتا ہے اور 3 سال تک کوئی بات، کوئی اظہار نہیں ہوتا۔ ان کا کہنا ہے کہ 3 سال بعد یہ معاملہ سامنے آتا ہے، حلف نامہ آتا ہے اور اسٹوری بریک ہوتی ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حیرانی ہے کہ جس جج پر یہ الزام لگایا گیا وہ اس بینچ کے ممبر ہی نہیں ہیں، اس سے اس کی صداقت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔ وزیرِ خارجہ نے کہا کہ یہ بھی واضح ہوا کہ کس شہر میں کس کے سامنے یہ حلف نامہ ہوا، ہم سب کو اپنے ماضی سے سبق سیکھنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف سب عدلیہ کی آزادی کے دعوے دار ہیں، مگر ہم کہتے کچھ اور کرتے کیا ہیں؟ وزیرِ خارجہ کا کہنا ہے کہ ہم سب کو اپنے ماضی سے سبق سیکھنے کی ضرورت ہے، ہمارے قول و فعل میں تصادم ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ سپریم کورٹ پر حملے ہوئے، جسٹس قیوم سے فیصلے لینے کی کوشش کی گئی مگر وہ سب فائدہ مند ثابت نہیں ہوا۔ ان کا کہنا ہے کہ رانا شمیم کا معاملہ فی الحال زیرِ سماعت ہے، اس پر مزید بات نہیں کر سکتا، اس سب کا ہم سب کو نوٹس لینا چاہیے، یہ خطرناک معاملہ ہے۔ وزیرِ خارجہ نے کہا کہ ہم اپوزیشن کی تنقید سے مثبت پہلو لیتے ہیں مگر تنقید برائے تنقید درست نہیں، حکومتیں آتی جاتی رہتی ہیں، مایوسی مت پھیلائیں۔ شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ اپوزیشن ہمارا چیلنج نہیں، مہنگائی ہے، ہم نے گزشتہ برسوں میں مشکل فیصلے کیے، کڑوی گولی کھائی، اب ہم استحکام سے ریکوری کی جانب بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ یہ کہہ دینا کہ جو خرابی ہے وہ ایک نااہل معیشت کی وجہ سے ہے، حقائق کے برعکس ہے، ہماری معیشت اب مشکل صورتِ حال سے بہتری کی جانب گامزن ہے۔ قومی خبریں سے مزید .SAMAA | - Posted: Jan 20, 2022 | Last Updated: 1 hour ago SAMAA | Posted: Jan 20, 2022 | Last Updated: 1 hour ago فائل فوٹو اسلام آباد کے وفاقی سرکاری تعلیمی اداروں میں اسکول بیگ لانے کی جھنجھٹ ختم کر دی گئی۔ ایک تقریب سے خطاب میں ڈی جی وفاقی نظامت تعلیمات اکرام علی ملک نے اعلان کیا کہ پرائمری کلاسز تک کے بچے اسکول بیگ نہیں لائیں گے۔ ڈی جی کا کہنا تھا کہ نئے تعلیمی سال میں اسلام آباد کے تعلیمی اداروں میں یہ سسٹم لائیں گے، جس کے تحت کتابوں کا ایک سیٹ گھر اور ایک اسکول میں رکھا جائے گا۔ یاد رہے کہ بچوں کے لیے اسکول بیگ کندھے پر اٹھا کر تعلیمی اداروں میں لیکر جانا ایک مشکل کام تصور کیا جاتا ہے اور اسکی وجہ سے بچوں کو پھٹوں میں شکایت بھی رہتی ہے۔ تازہ ترین.مراسلات فوٹو بشکریہ نیویارک پوسٹ لندن ( مرتضیٰ علی شاہ ) امریکا میں یہودی عبادت گاہ میں چار افراد کو یرغمال بنانے والے بلیک برن کے رہائشی ملک فیصل اکرم کے بڑے بھائی نے اپنے بھائی کی حرکتوں کی مذمت کی ہے، تاہم انہوں نے اس بارے میں جواب طلب کیا ہے کہ اسےکس طرح سے امریکہ جانے کی اجازت دی گئی۔ جیو اور دی نیوز کو ایک خصوصی بیان دیتے ہوئے ملک گلبر اکرم نے وضاحت کی کہ انہوں نے اپنے بھائی کو لوگوں کو یرغمال بنانے سے روکنے اور سانحہ کو ختم کرنے کیلئے قائل کرنے کی پوری کوشش کی لیکن جلد ہی یہ واضح ہو گیا کہ فیصل اکرم نے اپنی زندگی ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ واضح رہے کہ ہفتے کے روز،44سالہ ملک فیصل اکرم کو کنگریگیشن بیت اسرائیل میں11گھنٹے کے تعطل کے بعد گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا۔ تمام یرغمالیوں کو بغیر کسی جسمانی نقصان کے بچا لیا گیا۔ ملک گلبر اکرم کو اس اندوہناک واقعے کا علم اس وقت ہوا جب انہیں اپنے نوعمر بھتیجے کا فون آیا کہ ان کے والد امریکہ میں پولیس کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں ملوث ہیں۔ ملک گلبر اکرم نے فوری طور پر پولیس کو اطلاع دی اور چند ہی منٹوں بعد انہوں نے اپنی گاڑی اور پولیس سٹیشن سےاپنے بھائی سے مذاکرات کئے، اوراس سے کارروائی روک دینے کی دلی التجا کی ۔ وائٹ ہاؤس میں اس آپریشن کو براہ راست دیکھا گیا۔ملک گلبر اکرم نے اپنے بھائی سے مطالبہ کیا کہ وہ لوگوں کو یرغمال بنانے کا خیال ختم کریں، اپنے خاندان کا سوچیں اور گھر آئیں لیکن ان کی درخواستوں کو نظر انداز کر دیا گیا۔ جیو نیوز کو خاندان کے معتبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ملک گلبر اکرم نے تقریباً آدھے گھنٹے تک اپنے بھائی سے بات کی اور انہیں مسلسل اپنے خاندان کی یاد دلاتے رہے۔ ملک گلبر اکرم نے اپنے بیان میں کہا کہ گزشتہ چند دنوں کے واقعات سے ہمیں بہت دکھ ہوا ہے۔ہم اپنے بارے میں ایسا نہیں کرنا چاہتے۔ ہم سوچتے ہیں کہ متاثرین پرکیا گزر رہی ہے۔وہاں لوگ اپنی جان کے لیے خوفزدہ تھے۔ ہمیں ان لوگوں کے لئے بہت تکلیف محسوس ہوئی جو اس کرب سے گزرے ہیں۔ ہم امید کرتے ہیں کہ مستقبل میں دوبارہ ایسا کچھ نہ ہو۔ ایک خاندان کے طور پر یہ تکلیف دہ اور تباہ کن رہا ہے۔ ملک گلبر اکرم کے بیان میں کہا گیا ہے کہ جب انہیں اپنے بھتیجے کا فون موصول ہوا تو معلوم ہوا کہ کچھ خوفناک واقعہ پیش آیا ہے۔ جب گلبر نے فیصل سے پوچھا کہ وہ امریکہ میں کیا کر رہے ہیں تو اس نے جواب دیا ’’ میں امریکہ میں ہوں اور میں ایک عبادت گاہ میں ہوں، میرے ساتھ چار خوبصورت یہودی لوگ ہیں ‘‘۔ اس وقت گلبر نے اس بات کو ذہن میں رکھتے ہوئے بات چیت ریکارڈ کرنا شروع کی کہ یہ اپنے بھائی سے آخری گفتگو ہو سکتی ہے۔ فون کال کے دوران، فیصل نے گلبر کو بتایا کہ اس نے پاکستانی شہری ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی مسلسل قید کو اجاگر کرنے کے لیے لوگوں کو یرغمال بنایا ہے۔ فیصل نے گلبر کو بتایا کہ ’’میں چاہتا تھا کہ حکام عافیہ صدیقی کو قید سے رہا کریں ۔ گفتگو میں گلبر کو اپنے بھائی سے بات کرتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ وہ اپنے خاندان کے بارے میں سوچے۔گلبر نے کہا کہ ’’میں نے اسے قائل کرنے اوراسے اپنے بچوں کے بارے میں سوچنے کی ترغیب دینے کی کوشش کی۔ میں نے اس سے کہا ʼاسے ختم کریں مگر اس کا ذہن بنا ہوا تھا۔اس نے کسی موقع پر یہ نہیں کہا کہ وہ ان لوگوں کو نقصان پہنچائے گا۔ میں جانتا تھا کہ اس کے پاس کوئی بم نہیں ہے ،اس کے پاس ہینڈ گن تھی۔میرے اس وقت آنسو بہہ رہے تھے۔ اس کے بعد اس نے کہا ’’ ʼاگر میں نے آپ کے ساتھ کبھی کوئی برا کیا ہے تو براہ کرم مجھے معاف کر دیں۔‘‘ مجھے یقین ہے کہ انہیں اسے مارنے کی ضرورت نہیں تھی۔ میں نے گولیوں کی آوازیں سنی جنہوں نے آخر کار اسے مار ڈالا۔مجھے غصہ محسوس ہوتا ہے۔ انہیں اسے مارنے کی ضرورت نہیں تھی۔ ایک بار یرغمالیوں کے باہر جانے کے بعد اندر جانے اور اسے مارنے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔ گلبر نے کہا کہ فیصل اکرم نے اس وقت تک عافیہ صدیقی کے بارے میں کبھی کچھ نہیں کہا اور کوئی سوچ بھی نہیں سکتا تھا کہ وہ اتنا بڑا قدم اٹھائیں گے۔ گلبر اکرم نے سوال کیا کہ فیصل اکرم کو بغیر کسی سخت جانچ کے جہاز پر جانے کی اجازت کیوں دی گئی جب کہ ان کے پاس کووِیڈ ویکسینیشن کے ثبوت نہیں تھے اور انہیں پہلے ہی قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ مسائل کا سامنا تھا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ پہنچنے کے فوراً بعد فیصل اکرم بغیر کسی مسئلے کے ایک سم کارڈ اور بندوق خریدنے میں کامیاب ہو گیا اور دوسری ریاست میں عبادت گاہ میں یرغمال بنانے سے پہلے وہ دو ہفتے تک ایک بے گھر لوگوں کی عارضی رہائش گاہ میں رہا۔ گلبر اکرم نے کہا کہ"میرا بھائی منصوبہ ساز نہیں تھا ۔انہوں نے سوال کیا کہ بلیک برن کا رہائشی ایک لڑکا ہوائی جہاز میں سوار ہوتا ہے اور اس سے پوچھ گچھ نہیں ہوتی ہے۔ اس نے ویکسی نیشن بھی نہیں کرائی تو اسے ویزا کیسے ملا۔اگر میرے بھائی کو کبھی دماغی صحت کے مسائل نہ ہوتے تو وہ اس میں کبھی ملوث نہ ہوتا۔ گلبر نے اس واقعے کی مکمل تحقیقات کا مطالبہ کیا جس نے اس کے خاندان اور برادریوں کو توڑ کر رکھ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم تحقیقات کا حصہ بننا چاہتے ہیں اور جتنا ہو سکے مدد کرنا چاہتے ہیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ ہم سے کوئی چیز چھپی نہ رہے ۔اس کے ساتھ ساتھ ہم اپنے بھائی کو واپس لانا چاہتے ہیں تاکہ ہم تدفین کر سکیں۔ہم شدت سے محسوس کرتے ہیں کہ اگر اسے ملک میں جانے کی اجازت نہ دی جاتی تو اس کو روکا جا سکتا تھا۔ یورپ سے سے مزید.کردیا گیا ہے۔ اسلام آباد کی انتظامیہ نے این سی او سی کی جانب سے اعلان کردہ فیصلوں کے تحت ایس او پیز جاری کردیے ہیں۔ جاری کردہ نوٹی فکیشن کے تحت آوٹ ڈوراجتماع میں مکمل ویکسی نیشن والے 300 افراد کے شرکت کی اجازت ہو گی جب کہ اسلام آباد میں ان ڈور شادیوں پر 24 جنوری سے مکمل طور پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ شیئر کریں:.