ابھینندن کے معاملے پر ایک بیان کے ذریعے تاریخ کو مسخ کرنے کی کوشش کی گئی: آئی ایس پی آر - BBC News اردو

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے سربراہ میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا ہے کہ گذشتہ روز ایک ایسا بیان دیا گیا جس کے ذریعے قومی سلامتی سے منسلک ملکی تاریخ کو مسخ کرنے کی کوشش کی گئی۔

29/10/2020 2:59:00 PM

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے سربراہ میجر جنرل بابر افتخار نے کہا ہے کہ ’حکومت پاکستان نے ایک ذمہ دار ریاست کے طور پر امن کو ایک اور موقعہ دیتے ہوئے انڈین جنگی قیدی ابھینندن کو رہا کرنے کا فیصلہ کیا اور اس ذمہ دارانہ فیصلے کو پوری دنیا نے سراہا۔‘

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے سربراہ میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا ہے کہ گذشتہ روز ایک ایسا بیان دیا گیا جس کے ذریعے قومی سلامتی سے منسلک ملکی تاریخ کو مسخ کرنے کی کوشش کی گئی۔

انھوں نے کہا کہ پاکستان نے اعلانیہ اور دن کی روشنی میں دشمن کو جواب دیا۔ ’ہم نے نہ صرف جواب دیا بلکہ دشمن کے دو جہاز مار گرائے اور ونگ کمانڈر ابھینندن کو گرفتار کیا گیا۔ ہماری اس کامیابی سے دشمن اتنا خوفزدہ ہوا کہ اپنا ہی ایک ہیلی کاپٹر گرا دیا۔‘بابر افتخار کا کہنا تھا کہ ہمیں اس معاملے میں واضح فتح نصیب ہوئی۔ پاکستان کی فتح کو ناصرف پوری دنیا نے تسلیم کیا بلکہ انڈیا کی قیادت نے رفال طیاروں کی عدم دستیابی کو اس کا ذمہ دار قرار دیا۔

Sawal with Ehtesham Amir-ud-Din | SAMAA TV | 27 November 2020 Think Tank-part All-ep-24692-2020-11-27-Think Tank: 27 Nov 2 | Dunya News ’میڈیکل کالجوں کے داخلہ ٹیسٹ کی تاریخ بار بار بدلنا تعلیمی دہشت گردی ہے‘ - BBC News اردو

’حکومت پاکستان نے ایک ذمہ دار ریاست کے طور پر امن کو ایک اور موقعہ دیتے ہوئے انڈین جنگی قیدی ابھینندن کو رہا کرنے کا فیصلہ کیا۔ اس ذمہ دارانہ فیصلے کو پوری دنیا نے سراہا۔‘’انھیں منھ کی کھانی پڑی اور یہ بات انھیں اب تک تکلیف میں مبتلا کیے ہوئے ہے۔ اس معاملے کو کسی اور طرح جوڑنا افسوسناک اور گمراہ کن ہے۔ یہ پاکستان کی انڈیا پر واضح فتح کو متنازع بنانے کے مترادف ہے، اور ایسا عمل کسی بھی پاکستانی کے لیے قابل قبول نہیں ہے۔‘

انھوں نے کہا کہ ایسے منفی بیانیے کہ قومی سلامتی پر براہ راست اثرات ہوتے ہیں۔ یہی بیانیہ دشمن قوتیں استعمال کر رہی ہیں۔،تصویر کا ذریعہGetty Imagesایاز صادق کی وضاحت’ابھینندن کی تو بات ہی نہ کریں۔ مجھے یاد ہے شاہ محمود قریشی صاحب بھی اس میٹنگ میں تھے، جس میں وزیرِ اعظم نے آنے سے انکار کر دیا اور فوج کے سربراہ تشریف لائے۔ پیر کانپ رہے تھے، ماتھے پر پسینہ تھا، اور ہم سے شاہ محمود صاحب نے کہا کہ خدا کا واسطہ ہے، اب اس (ابھینندن) کو واپس جانے دیں کیونکہ اگر ایسا نہ ہوا تو رات نو بجے ہندوستان پاکستان پر حملہ کرنے والا ہے۔ ہندوستان نے کوئی حملہ نہیں کرنا تھا، صرف گھٹنے ٹیک کر ابھینندن کو واپس بھیجنا تھا۔‘

پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کی گذشتہ روز کی گئی اس بظاہر معمول کی تقریر میں سے لیے گئے یہ الفاظ پاکستان اور انڈیا دونوں ہی جانب موضوعِ بحث بنے ہوئے ہیں۔گذشتہ روز قومی اسمبلی میں کی گئی اس تقریر کا پاکستان کے سوشل میڈیا پر فوری ردِ عمل سامنے نہیں آیا، تاہم جیسے ہی ٹوئٹر پر موجود انڈین تجزیہ نگاروں اور انڈین میڈیا کی جانب سے اس بیان کی ’اہمیت‘ پر روشنی ڈالی گئی تو پاکستان میں بھی صارفین غصے سے لال پیلے ہونے لگے۔

انڈیا سے آنے والے ردعمل کو دیکھتے ہوئے جمعرات کی دوپہر اپنے ایک ویڈیو پیغام میں ایاز صادق نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ ان کے گذشتہ روز کے بیان کے حوالے سے انڈین میڈیا میں جو کچھ نشر کیا جا رہا ہے وہ سیاق و سباق سے ہٹ کر اور اس کے بالکل برعکس ہے جو انھوں نے درحقیقت کہا تھا۔

ان کا کہنا ہے کہ ’ابھینندن جب پاکستان آئے تھے تو وہ کوئی مٹھائی بانٹنے نہیں آئے تھے، انھوں نے پاکستان پر حملہ کیا تھا اور ان کا طیارہ گرانا پاکستان کی فتح تھی۔‘انھوں نے کہا ’مگر جب عمران خان نے پارلیمانی رہنماؤں کی میٹنگ بلائی تو شاہ محمود اس میں آئے، ماتھے پر اتنا پسینہ تھا اور وہ کافی پریشان تھے۔ وہ کس کے کہنے پر یہ کر رہے تھے، ان پر کیا دباؤ تھا، وزیر اعظم نے ہم سے شیئر کرنا مناسب نہیں سمجھا کیونکہ وہ میٹنگ میں تشریف نہیں لائے۔‘

ان کا کہنا تھا ’شاہ محمود قریشی نے آ کر کہا کہ ہم ابھینندن کو واپس کرنا چاہ رہے ہیں۔ ہم نے نیشنل انٹرسٹ کی خاطر یہ کیا اور یہ فیصلہ سول لیڈرشپ کا تھا۔ ہم اس فیصلے سے متفق نہیں تھے کیونکہ ابھینندن کو واپس کرنے کی کوئی جلدی نہیں تھی اور ذرا سا انتظار کر لیتے۔‘

کیا بختاور کا عروسی جوڑا بھی بے نظیر بھٹو کا جوڑا بنانے والی ڈیزائنر تیار کریں گی؟ - BBC News اردو 'ایرانی سائنسدان کے قتل میں اسرائیل ملوث' قائداعظم یونیورسٹی: ایشیا کی بہترین جامعات کی فہرست میں پوزیشن بہتر

،تصویر کا ذریعہiSPRان کا کہنا تھا یہ فیصلہ قومی مفاد میں کیا گیا مگر اس میں سول لیڈرشپ کی کمزروی نظر آئی۔دوسری جانب پارلیمان کے ایوان بالا میں خطاب کرتے ہوئے وزیر اطلاعات شبلی فراز کا کہنا تھا کہ اپوزیشن رہنماؤں کی جانب سے اس قسم کی باتیں کی جا رہی ہیں جن سے دشمن کے ایجنڈے کو شہ ملتی ہے۔

ایاز صادق کے وائرل بیان کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ’27 فروری 2019 کو پاکستان کی بہادر ایئر فورس نے انڈیا کے جہاز کو گرایا تھا، لیکن آج میں نے خبروں میں پڑھا کہ اسے بھی متنازع بنا دیا گیا ہے۔‘ان کا کہنا تھا کہ ’ملکی مفاد کے خلاف ایسی بات کرتے ہوئے آپ کو شرم آنی چاہیے۔‘

شبلی فراز نے کہا کہ ہم نے دنیا کو اپنی فراغ دلی دکھانے کے لیے ابھینندن کو رہا کیا تھا لیکن انھوں نے ہماری جیت کو بھی شکست قرار دینے کی کوشش کی ہے اور اسے بھی متانازع بنایا ہے۔یاد رہے کہ 27 فروری 2019 کو پاکستانی علاقے بالاکوٹ کے گاؤں جابہ پر انڈین طیاروں کی بمباری کے ایک دن بعد لائن آف کنٹرول کے قریبی علاقے ہوڑاں میں پاکستان کی فضائیہ نے انڈین جیٹ گرا کر فائٹر پائلٹ وِنگ کمانڈر ابھینندن ورتمان کو گرفتار کر لیا تھا۔

تاہم تحویل میں لیے جانے کے 60 گھنٹے بعد ہی انھیں انڈین حکام کے حوالے کر دیا گیا تھا۔ایاز صادق کے بیان پر سوشل میڈیا ردعملایک جانب تو انڈیا میں صارفین اور تجزیہ نگار ان الفاظ کے ذریعے فروری 2019 میں پاکستان کے ساتھ ہونے والی کشیدگی میں اپنی فتح کا اعلان کر رہے تھے، تو دوسری جانب پاکستانی صارفین رکنِ قومی اسمبلی کو ’غدار‘ اور طرح طرح کے القابات سے نوازتے ہوئے اُن کے خلاف کارروائی کا مطالبہ بھی کر رہے تھے۔

سوشل میڈیا دیکھ کر بظاہر ایسا محسوس ہو رہا ہے کہ تقریباً 20 ماہ قبل ہونے والی اس کشیدگی کی پاکستانی اور انڈین عوام کے لیے آج بھی ویسی ہی اہمیت ہے جیسی دونوں ملکوں کے درمیان ہونے والے کسی کرکٹ میچ کی ہوتی ہے۔فرق شاید صرف اتنا ہے کہ اس حوالے سے دونوں ہی کا یہ خیال ہے کہ فتح ان کے حصے میں آئی تھی۔

انڈیا میں میڈیا اور اکثر صارفین یہ تبصرہ بھی کرتے دکھائی دیے کہ ایاز صادق کے یہ الفاظ کہ ’پیر کانپ رہے تھے، پسینہ ماتھے پر تھا‘ دراصل پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل باجوہ کے لیے استعمال کیے گئے تھے تاہم تقریر غور سے سننے پر علم ہوتا ہے کہ یہ الفاظ وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی کے لیے استعمال ہوئے۔

ایران کے سینیئر جوہری سائنسدان محسن فخری زادے حملے میں ہلاک - BBC News اردو ملازمت سے برطرفی کی خبر سن کر پاکستان اسٹیل کا ملازم چل بسا - ایکسپریس اردو آصفہ بھٹو کی قومی سیاست میں انٹری، 30 نومبر کو ملتان جلسے سے خطاب کرینگی مزید پڑھ: BBC News اردو »

کشمورریپ کیس:اےایس آئی واقعہ سناتے ہوئے روپڑے

محمد بخش کےاعزاز میں سینٹرل پولیس آفس میں...;

1958 میں جب آپ کے ادارے کے سربراہ نے ملک پر مارشل لاء مسلط کیا اور محترمہ فاطمہ جناح مادر ملت کو غداری کا لقب دیا تو اس وقت تاریخ مسخ نہیں کی گئی تھی جب مکافات عمل کی وجہ سے آپ پر سوال اٹھا ہے تو تاریخ مسخ ہو گئی ہے آپکو بیان دینے کی ضرورت ہی نہیں تھی ہہہہہہ اپنی باپ امریکہ کی کہنی پر،،، چوٹے موٹے واقعات ہوتے رہتے ہیں ۔۔۔۔ آٸی جی kpk

چوڑیاں لاُ دو اسے جناب فواد کے بیان نیں بھارت میں دھوم مچا دی ہے اس پر بھی پریس ریلیز کریں سر سر سر Yeh sahib Pakistan ko puri dunya samajhte haiN. Akal waddi k Pakistani How can someone give amnesty to Invaders who came to destroy you and you send him back with respect and protocol فوج کو ایسے سیاستدانوں کے ساتھ ڈائریکٹ حوالداری دکھانا ہو گی 😛

جنگی قیدی ۔۔۔۔؟ جنگ کب شروع ہوئی تھی کب بند ہوئی یہ بھی بتا دیں فیصلےکوٹرمپ نےسراہا تھا،اورشاید فیصلہ ان ہی کےکہنےپرکیاتھا محمود قریشی کی ٹانگیں لانپ رہی تھیں اور ماتھے پر پسینہ تھا ایک بزدل اور ڈرپوک شخص کے ڈر کو ایاز صادق نے بے نقاب کیا ہے جو کہا ہے بالکل صحیح کہا ہے اسی وجہ سے مودی کو رافیل لینے پڑ گئے ٹینڈر کے ٹیک آف سے پہلے ہی انشاء اللہ رافیل زمین پر ہوگا

Why he is poking his nose in this matter? Selected Govt should respond اپنوں پر شیر دشمن کے سامنے گیدڑ لازمی بنتے ہیں کچھ یہی ان بکسہ چوروں اور ووٹ چوروں کے ساتھ ہوا Pak. Fooj. Zinda Bad مگر ہندوستان نے کبھی بھی امن کو ترجیح نہیں دیئے، ہمیشہ کوئی نہ کوئی شرارت کرتا رہتا ہے،پتہ نہیں اُنہیں پاکستان سے کیا دشمنی ہے؟

حکومت افواج پاکستان کا فیصلہ ابھینندن فوراً رہا ہو گیا حافظ سعید اور مسعود اظہر ابھی تک اندر ھیں، یہ بھارت کا اثرورسوخ ھے اتنی سبقت ھے تو کشمیر آزاد کرا لیتے۔ تمھاری خیر سگالی کلبھوشن اور ریمنڈ ڈیوس کے معاملے میں ہی کیوں ھے۔ سیدھا بولو اکتہر میں ہتھیار پھینکنے والوں کی نسل سے ہو۔ 1971 4 din mehman to bana letay. Ihsan ullah b to chala gya. Abhi b Chala jata

احسان اللہ احسان کو کیو؟ Tmhari bahadrui k saboot 1971 Mei mil gai hen hmen جنکی تاریخ بنگال میں ہتھیار ڈالنے کی ہو وہ تو حملے کا سن کر ہانپیں اور کانپیں گے نہیں تو کیام 😂😂😂😂 India🇮🇳should remember that this state is ours, this Govt is ours and this army is ours and all these units are one to destroy the enemy. LOC will be the graveyard of Indian army. Let India start counting the units of its destruction. No more India in Asia. PakistanZindabad ❤🇵🇰

جلدی میں بزدل کی طرح رہا کر دیا نہیں تو وہ بلوچ پٹھانوں اور اردو اسپیک مہاجروں کے ہاتھوں ان تمام فوجی جرنیلوں کو تیل میں تل لیتا جیسے اس جرنیل کے بچوں کو تلا تھا جس نے جناح پور کے نقشے دریافت کیے تھے اب میڈیا پر آکر شیخیاں مارتے اور پاکستان کو لوٹتے رہیں گے یہ انڈین ایجنٹ 😂 😂 کتا بھونک رہا ہے Pakistan recent problems are not these to remain in history To decide who was on the upper side at that time The bigger problem is Mahangai & no one want to discuss on it. It's the land of Ppls being foolish so long

سب کو پتہ ہے پنجابیو پاکستان اور پاکستانی فوج ایک دہشت گرد فوج ہیں اور طالبان اور القاعدہ اور جہادی تنظیموں کی سربراہی کررہا ہے 🇵🇰pak Army Zindabad 🇵🇰Pakistan Paindabad 💓💓 Lanat on Ayaz Sadiq who is compromising national interest for personal gains for his Chor leader ان کو ملک سے کیا لینا دینا، ملکی دفاع سے انہیں کوئی سروکار نہیں بس صرف اپنی معیشت کے فکر میں ہر وقت اپنی سیاست چمکاتے رہتے ہیں.

1971 main hathyar bhi issi liya dala thay kaa hum aik zimadar riyasat hai kargil sa bhi issi liya bhaga thay aur OBL bhi issi liyaa hamari manji ka thala saa pakra gaya thaa , koomi salamti wohi poorana choran تانگیں تو کانپ رہی تھیں ایاز صادق کی وضاحت ’ابھینندن کی تو بات ہی نہ کریں۔ مجھے یاد ہے شاہ محمود قریشی صاحب بھی اس میٹنگ میں تھے، جس میں وزیرِ اعظم نے آنے سے انکار کر دیا اور فوج کے سربراہ تشریف لائے۔ پیر کانپ رہے تھے، ماتھے پر پسینہ تھا، اور ہم سے شاہ محمود صاحب نے کہا کہ خدا کا واسطہ ہے، ----

ایک صوبے کی پولیس فورس کا سربراہ 22 ویں گریڈ کا افسر جس کے نیچے ہزاروں کی تعداد میں نفری کام کرتی ہے جس کے اغوا کا نوٹس لیتے ہوئے دس دن میں رپورٹ منظر عام اور اغواکاروں کو سخت سزا دینے کا وعدہ کیا گیا تھا آج گیارہواں دن بھی اپنے اختتام کو پہنچ گیا بس یہی اطلاع دینی تھی ابھی نندھن کی رھای پہ ایک کھانا رلیز کر وہ اور گلباشن کی وکالت کا کیا بنا ٹویٹر صاحب

ایاز صادق کے قومی اسمبلی میں دیئے گئے بیان پر وزیرِ خارجہ(شاہ محمود قریشی) کی طرف سے کوئی تردید نہیں آئی جبکہ ریاست کے دفاعی ادارے نے پریس کاننفرنس کر کے جواب دے دیا ایسے حالات میں یہ کہنا کہ “ہمارا سیاست سے کوئی تعلق نہیں” محض ایک لطیفہ ہے سر جنگ کب لگئ تھی ہمیں تو پتہ ای چلا۔۔۔۔ سنا تھا کہ وہ چوری چھپے حملہ کرنے آیا تھا

Good شرم مگر ان کو آتی نہیں ڈر پوک جرنیل جب انڈیا نے کشمیر کو ایک سال کے لیے جیل بنا دیا تھا یہ ساری زندگی کشمیر کے نا پہ عوام کو لوٹ کر کھا گے مگر انڈیا پہ حملہ نہیں کیا بس جمعے کے دن دوپ میں کھڑے ھو گے what imran khan had done was v important for going for peace with india but MODI is under influence of those nation who want to divide pakistan and indian interest .although modi know very well that both the countries problem are hunger and plaution .

The act of Mr Ayaz Saddiq is deplorable who by virtue of false statement has provided an opportunity to our enemy. تلخ حقیقت ۔ World had already seen how imran was shivering on TV! Duniya ko kosh kero bs Pakistani gay tail lene پوری دنیا میں پاکستان کی ناک کٹوا دی ابھینندن کو انڈیا کے حوالے کر کے اگر اس کو معزور کر کے انڈیا کے حوالے کیا ہوتا تو آج انڈیا کی دوبارہ ہمت نہ ہوتی دھمکیاں لگانے کی

Lakh de lanat hy tum per That's nice it's very much important from DG ISPR after some concerns we're just won the limited war against the Indian's on 27 Feb the whole world just seen the two burning aircraft's whole day & about abhi Nandan he's always a real big symbol of shame for the whole Indian's.

Toh phir Nawaz Sharif ko kyun kehte the k Kulboshan ko phansi do? Tab zimadsr riyasat or aman ki asha kahan mer gai thi? Tum log kerte ho siyasat bas! دنیا نے نہی پینٹاگون نے سراہا کون سا مہزب ملک ہے جو اپنے اوپر حملہ کرنے والے کو بغیر کسی معاہدے کے چھوڑ دے ابھی دوسرا اسرائیلی کدھر ہے یہ تاریخ درست بتانے والے چغد 72 سالوں سے پوری قوم کو مطالعہ پاکستان کی تاریخ سے بیوقوف بنائے ہوئے ہیں

Pakistan did the right thing and forgot about it. But the cunning India wants to present Pakistan's peace gesture as its weakness. Shame on Modi and his twists. All he had to do was say thanks ایک معمولی ایم این اے کی بات کا جواب دینے کی کوی ضرورت نہیں تھی Shame on iyaz sadiq and 'noon' league. Soon 'noon' will have dark deep Nightmare ahead.

یہ اصل میں قبضہ گروپ اور دہندے مارتے ھے چوکیدار سرحد پر ہوتا ہے پارلیمنٹ میں نہیں اپ کے پسینے اور ہاتھ پیر کانپتے بنگلہ دیش میں ساری دنیا نے دیکھے تھے ایاز صادق نے سچ کہا ہے جو اپ سننے کے لئے تیار نہیں اور اپنے جرم پر پردہ پوشی کر رہے ہیں اب اپ کو قوم سے ہر جرم کی معاف مانگنا ہو گی اس کے علاوہ اور کوئی چارہ کار نہیں اب بھی وقت ہے اپنی حدود کی رہیں

اس کو قتل کرنا چاہئےتھا - اپنی عوام کو مار رہےہیں اُس قاتل کو چھوڑ دیا کیوں India ajmal qasab ko hang kar deta ha hum raha .waha Kya bat ha.india ka or mind kharab kar dya hum na. آیاز صادق نے بلکل درست کہا کہ اگر ابی نندن حملہ کرنے آیا تھا تو اسے چائے پلا کر واپس کیوں انڈیا بھیجا. ڈر گئے تھے سلیکٹڈ حکمران

ایاز صادق ن لیگی وھ کتا ھے۔جو پاکستانی فوج کی کامیابی کو انڈیا کی کامیابی میں تبدیل کرنے کی کوشش کر رھا ھے ۔

ابھینندن کی رہائی سےمتعلق بیان پاکستان کی فتح متنازعہ بنانیکی کوشش،ترجمان پاک فوجراولپنڈی: (دنیا نیوز) پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے بھارتی ونگ کمانڈر ابھینندن کی رہائی سے متعلق بیان پر سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اسے معاملہ مسخ کرنے اور پاکستان کی فتح متنازعہ بنانے کی کوشش قرار دیدیا ہے۔ 13-yr-old Christian girl ArzooRaja is kidnapped in converted & married to a 44-yr-old Muslim man where is our mainstream media ARYNews DunyaNews GeoNews realDonaldTrump Pakistan ImranKhan Pontifex ForcedConversion kamrankhan JusticeForArzoo BBhuttoZardari Ye lain sir!! pakistan ko tabah krny waly politicians e hyn Pak army na hoti tu ya mulk e bech dety ...Sary politicians jhoty mufad parast hyn Awam ko bewakoof bnaya hoa hai..5 percent politicians Achy shayad houn..72 saal sy k ry hyn Hum gareeb bndoun ka naseeb badal dy gyn..

پاکستان میں بچے کی پیدائش پر والدکو ایک ماہ کی چھٹی کا بل منظورقومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف نے بچے کی پیدائش پر باپ کو چھٹی سے متعلق بل کثرت رائے سے منظور کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما شازیہ مری

ون ڈے سیریز، قومی ٹیم کے اہم کھلاڑی کی شرکت کے امکانات روشنون ڈے سیریز، قومی ٹیم کے اہم کھلاڑی کی شرکت کے امکانات روشن ARYNewsUrdu PAKvZIM

ایران کی پشاور کے مدرسے میں دھماکے کی مذمتپڑوسی ملک ایران کی جانب سے گزشتہ روز پشاور کے مدرسے میں ہونے والے دھماکے کی مذمت کی گئی ہے۔ Nawaz shareef falsely accused pakistan involvement in Bombay attacks which used in International courts by India against pakistan he should be charged for treason

فرانس: توہین آمیز خاکوں کی اشاعت کے خلاف فلسطینی پناہ گزینوں کے مظاہرےفرانس میں پیغمبر اسلام حضرت محمد صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی شان میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے خلاف لبنان کے فلسطینی پناہ گزین کیمپوں میں بڑے پیمانے پر مظاہرے

بھارتی سیاستدانوں کے بیانات بی جے پی کی توسیع پسندانہ ذہنیت کی عکاسی کرتے ہیں صدربھارتی سیاستدانوں کے بیانات بی جے پی کی توسیع پسندانہ ذہنیت کی عکاسی کرتے ہیں، صدر ArifAlvi IndianPoliticians Statements BJP MoIB_Official gop_info GovtofPakistan ArifAlvi PTIofficial